گجرات کی نئی حکومت میں انتشار؟ ہاردک پٹیل کا ’ناراض‘ نائب وزیر اعلی کو آفر

گجرات میں وزیر اعلیٰ وجے روپانی کی زیر قیادت نئی نویلی حکومت میں محکموں کے بٹوارے کو لے کر نائب وزیر اعلیٰ نتن پٹیل نے اپنی شدید ناراضگی ظاہر کی ہے۔

Dec 30, 2017 04:05 PM IST | Updated on: Dec 30, 2017 05:47 PM IST

بوٹاڈ(گجرات)۔ پاٹیدار آرکشن آندولن سمیتی (پاس) کے رہنما ہاردک پٹیل نے مبینہ طور پر محکموں کے الاٹمنٹ سے ناراض گجرات کے نائب وزیر اعلی اور سینئر پاٹیدار لیڈر نتن پٹیل کو حکمراں بی جے پی سے ناطہ توڑنے پر انہیں کانگریس میں باوقار عہدہ دلانے کی پیش کش کی ہے۔ اسمبلی الیکشن میں بی جے پی کی سرعام مخالفت کرچکے ہاردک نے آج بوٹاد میں انتخابی نتائج پر پاس کے چنتن شیور سے پہلے صحافیوں سے کہا کہ نتین بھائی بی جے پی میں بے عزتی کے بعد اگر ہمارے ساتھ آجاتے ہیں تو ان کے ساتھ مل کر گجرات میں گڈ گورننس کی لڑائی لڑی جائے گی۔ وہ دس ممبران اسمبلی کے ساتھ لے کر بی جے پی سے استعفی دے دیں تو کانگریس میں انہیں باوقار جگہ دلائیں گے۔

ہاردک پٹیل نے کہا کہ نتن بھائی نے گجرات میں بی جے پی کو مستحکم کرنے میں تیس سال سخت محنت کی ہے اور پارٹی صدر امت شاہ کی ’دادا گیری‘ کی وجہ سے ان کی توہین کی گئی ہے۔ اسی وجہ سے وڈودرا سے کسی بی جے پی لیڈر کو وزیر نہیں بنایا گیا ہے جب کہ سورت جس نے بی جے پی کی عزت بچائی کو بھی صرف ایک ہی وزیر مملکت ملا ہے۔ اگر نتن بھائی اس بات کے لئے رضامند ہوں کہ انہیں بی جے پی چھوڑنا ہے تو ہم ان کا پورا ساتھ دیں گے ۔میں انہیں کانگریس میں باوقا ر عہدہ دلانے کے لئے بات کروں گا۔ خیال رہے کہ بی جے پی کو اس مرتبہ صرف 99سیٹیں ملی ہیں جو اکثریت کے لئے ضروری 92 سے صرف سات ہی زیادہ ہے ۔ دو دن قبل محکموں کی تقسیم کے باوجود مسٹر پٹیل نے اب تک عہدہ نہیں سنبھالا ہے۔ وہ سرکاری گاڑی کا بھی استعمال نہیں کررہے ہیں۔ انہیں راضی کرنے کے لئے آر ایس ایس کے رہنما بھی کافی کوشش کررہے ہیں۔ مسٹر پٹیل سے خزانہ، شہری ترقی اور تعمیرات نیز پٹروکیمکلس جیسے اہم محکمے واپس لے لئے گئے ہیں۔

گجرات کی نئی حکومت میں انتشار؟ ہاردک پٹیل کا ’ناراض‘ نائب وزیر اعلی کو آفر

پاٹيدار ریزرویشن تحریک ( پاس ) کے لیڈر ہاردک پٹیل: فائل فوٹو۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ مسٹر پٹیل کی ناراضگی بی جے پی کے لئے مشکل کا سبب بن سکتی ہے۔ اس دورا ن پاٹیداروں کی تنظیم سردار پٹیل گروپ کے ترجمان پرون پٹیل سمیت کچھ دیگر لیڈروں نے آج مسٹرپٹیل سے آج احمد آباد میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور کہا کہ ایک پاٹیدار لیڈر کے طور پر وہ مسٹر پٹیل کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔ دریں اثنا مسٹر پٹیل کو منانے کے لئے ان کے کمرے کووزیر اعلی جیسا بڑا بنایا جارہا ہے۔ انہیں آئندہ کابینہ میں توسیع کے دوران کچھ مزید محکمے دئے جانے کی بھی مبینہ طور پر یقین دہانی کرائی گئی ہے ۔ تاہم مسٹر پٹیل اپنے موقف پر قائم ہیں۔ اس دوران آج احمدآباد میں ایک فلاور شو کا افتتاح کرنے آئے وزیر اعلی وجے روپانی نے مسٹر پٹیل کی ناراضگی کے بارے میں پوچھے جانے پر میڈیا کو کوئی جواب دینے سے پرہیز کیا ۔ یہ کہتے ہوئے کہ مجھ سے صرف فلاور شوکے بارے میں ہی پوچھئے وہ میڈیا سے دور چلے گئے۔

دریں اثنا گجرات کے سابق وزیر اور بی جے پی کے سینئر رہنما نروتم پٹیل نے آج نائب وزیر اعلی نتن پٹیل سے یہاں ملاقات کرنے کے بعد کہا کہ بی جے پی اعلی کمان کو ستیہ گرہ کر کے احتجاج کرنے والے مسٹر پٹیل کو جلد سے جلد راضی کرلینا چاہئے۔ مسٹرنروتم پٹیل نے آج یہاں صحافیوں سے کہا کہ مسٹر پٹیل نے بی جے پی کے لئے بہت کچھ کیا ہے اور وہ کوئی عام وزیر نہیں بلکہ نائب وزیر اعلی ہیں۔  مسٹر نروتم پٹیل نے کہا کہ ایک بڑا گروپ مسٹر پٹیل کا حامی ہے ۔ ان کے ناراض ہونے سے گجرات اور بی جے پی کو کافی نقصان ہوسکتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز