بی جے پی ممبر اسمبلی کے شوہر نے افسر کو تھپڑ مارا، پولیس نے رکن اسمبلی اور شوہر دونوں کی پٹائی کر دی

Feb 21, 2017 01:24 PM IST | Updated on: Feb 21, 2017 01:24 PM IST

جے پور۔ راجستھان کی رام گنج منڈی کی بی جے پی ممبر اسمبلی چندركانتا میگھوال اور ان کے شوہر نریندر میگھوال کو پولیس سے الجھنا اور ایک افسر کو طمانچہ مارنا پیر کو مہنگا پڑگیا۔ ممبر اسمبلی کے شوہر نے سی آئی کو طمانچہ مارا تو پولیس نے انہیں گھیر کر ان کی جم کر پٹائی کر ڈالی۔ شوہر کی پٹائی ہوتے دیکھ کرخاتون رکن اسمبلی نے بیچ بچاؤ کرتے ہوئے پولیس سے الجھ گئی۔ دینک بھاسکر کی رپورٹ کے مطابق، اس دھکا مکی کے دوران پولیس نے دونوں کو پیٹ دیا۔

معلومات کے مطابق، کوٹہ کے مہاویر نگر میں سگریٹ بیچنے کو لے کر دکاندار کے کاٹے گئے چالان کو لے کر ہنگامہ ہو گیا۔ یہ دکاندار بی جے پی کارکن ہے اور اسی کے مدنظر پیر کو پارٹی کے کئی کارکن معاملے میں احتجاج کرنے تھانے پہنچ گئے۔ یہاں ہنگامہ کرنے پر پولیس نے مظاہرین کو حراست میں لے لیا۔

بی جے پی ممبر اسمبلی کے شوہر نے افسر کو تھپڑ مارا، پولیس نے رکن اسمبلی اور شوہر دونوں کی پٹائی کر دی

کارکنوں کو چھڑانے پہنچی ممبر اسمبلی، شوہر نے افسر کو مارا تھپڑ

بی جے پی کارکنوں کو پولیس حراست میں لئے جانے کی اطلاع پر ممبر اسمبلی چندركانتا میگھوال شوہر نریندر کے ساتھ تھانے پہنچیں۔ یہاں کہا سنی جلد ہی دھکا مکی میں بدل گئی۔ گرم جوشی میں ممبر اسمبلی کے شوہر نے پولیس والوں پر ہاتھ اٹھا دیا۔ سی آئی شری رام کو تھپڑ لگائے جانے اور ڈی ایس پی چونارام جاٹ سے بھی دھکا مکی کی گئی۔ اس کے بعد وہاں موجود پولیس اہلکاروں نے ان کی جم کر پٹائی کر ڈالی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز