قرعہ اندازی میں ایم آئی ایم لیڈروں کو مدعو نہ کئے جانے پر حج کمیٹی انتظامیہ کےاسمبلی میں تحریک استحقاق پیش

Mar 25, 2017 09:39 PM IST | Updated on: Mar 25, 2017 09:39 PM IST

ممبئی:  مہاراشٹر اسمبلی میں مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم )کے ایم ایل اے ایڈوکیٹ وارث پٹھان نے حج کمیٹی کے دفتر کے خلاف تحریک استحقاق پیش کی اوراسپیکر ہری بھاؤ بگاڑے نے یقین دلایا کہ اس معاملہ میں اقدامات کیے جائیں گے جبکہ انہوں نے ریاستی وزیر برائے اقلیتی امور کواس معاملہ میں مکتوب روانہ کیا جس میں حج کمیٹی کے دفتر کے خلاف شکایت کی ہے۔

مہاراشٹر اسمبلی کے ممبروارث پٹھان نے کہاکہ آج ایوان میں مہاراشٹر اسٹیٹ حج کمیٹی چیئرمین ابراھیم شیخ،چیف ایکزیکٹیوافسر امتیاز قاضی اورٹسک افسر فاروق پٹھان کے خلاف تحریک استحقاق پیش کی اور ان کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔اسپیکر نے کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

قرعہ اندازی میں ایم آئی ایم لیڈروں کو مدعو نہ کئے جانے پر حج کمیٹی انتظامیہ کےاسمبلی میں تحریک استحقاق پیش

انہوں نے ایوان کو بتایاکہ منگل 21مارچ کو ریاستی حج کمٹی کے ممبئی کے حج 2017کے تحت عازمین حج کی قرعہ اندازی کے پروگرام منعقد کیا گیا اور ریاستی وزیر برائے اقلیتی امورونود تاوڑے ،ایم ایل اے راج پروہت سمیت سبھی کانگریسی ،این سی پی کے ایم ایل اے اور لیڈروں کو مدعوکیا گیا ،لیکن ایم آئی ایم کے وارٹ پٹھا ن اور امتیازجلیل کو دعوت نامہ نہیں روانہ کیا گیا ۔اس طرح ان ایم ایل ایز کی بے عزتی کی گئی ہے۔اور یہ ایک سیاسی سازش کانتیجہ ہے۔ان افرا دنے اقلیتی فرقے کے نمائندوں کو نظراندازکیا ہے۔

ایڈوکیٹ وارث پٹھان نے ایوان میں سوال اٹھایا کہ ریاستی حج کمیٹی آیا کانگریس اور این سی پی کی ملکیت ہے اور قرعہ اندازی میں کانگریس اور این سی پی کے ارکان اور لیڈرچھائے رہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اقلیتی فرقے کے کئی اہم لیڈروں کو مدعونہیں کیا گیا اور اے آئی ایم آئی ایم کے نمائندوں کو بھی مدعونہیں کیا جانا سازش کا نتیجہ ہے جس کی جانچ ہوناچاہئے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز