ہمارے مدرسے مسلم سماج کی شہ رگ کی حیثیت رکھتے ہیں: پروفیسراخترالواسع

مہمانِ خصوصی کے طور پر مولانا ڈاکٹر سعیدالرحمٰن اعظمی مہتمم دارالعلوم ندوۃ العلماء اور چانسلرانٹیگرل یونیورسٹی لکھنؤ نے کہا کہ دینی علوم کا حصول اور ان کا فروغ ہماری بنیادی ذمہ داری ہے۔

Oct 24, 2017 08:00 PM IST | Updated on: Oct 24, 2017 08:00 PM IST

جودھپور۔  اس شہر آفتاب کے قدیم ترین دینی مدارس میں سے ایک دارالعلوم العربیہ الاسلامیہ میں ایک تعلیمی بیداری کانفرنس کا اہتمام کیا گیا جس کی صدارت کرتے ہوئے مشہور ماہرِ اسلامیات اور مولانا آزاد یونیورسٹی جودھپور کے پریسیڈینٹ پدم شری پروفیسر اختر الواسع نے کہا کہ ہمارے مدر سے مسلم سماج کی شہ رگ کی حیثیت رکھتے ہیں۔ ہمارے دینی مدارس نے مسلمانوں خاص طور پر پس ماندہ اور غریب مسلمانوں میں خواندگی کوعام کرنے کا بڑا کام کیا۔ نیز دینی مدارس کا ایک بڑا کارنامہ یہ بھی ہے کہ شمال مغربی ہندوستان میں آج اردو انہیں کی وجہ سے زند ہ ہے اور اردو میں قاری انہیں کی عطا ہیں۔

مہمانِ خصوصی کے طور پر مولانا ڈاکٹر سعیدالرحمٰن اعظمی مہتمم دارالعلوم ندوۃ العلماء اور چانسلرانٹیگرل یونیورسٹی لکھنؤ نے کہا کہ دینی علوم کا حصول اور ان کا فروغ ہماری بنیادی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا دینی مدرسے اُمّت کی ایمان سے وابستگی کی پہچان ہیں۔ یہ مدارس ہماری مذہبی زندگی میں اہم رول انجام دینے والے علماء، مفتی، قاضی،مفسر، محدث، امام اور مؤذّن پیدا کرتے ہیں۔ انہوں نے جودھپور میں قائم اس مدر سے کو ایک اہم تاریخی ادارہ قرار دیا کیونکہ حکیم الامّت مولانا اشرف علی تھانوی کے خلیفۂ اجل حاجی عبدالغفورصاحب نہ صرف اس کے بانی تھے بلکہ تاحیات ان کی اس سے وابستگی رہی ہے۔

ہمارے مدرسے مسلم سماج کی شہ رگ کی حیثیت رکھتے ہیں: پروفیسراخترالواسع

 مہمانوں کا استقبال مدرسے کے مہتمم اور مارواڑ مسلم ایجوکیشنل اینڈ ویلفئر سوسائٹی جودھپورکے جنرل سیکریٹری محمد عتیق نے کیا۔ انہوں نےمدرسے کی تاریخ پر روشنی ڈالی اور یہ بتایا کہ یہ مدرسہ اس اعتبار سے ممتاز ہے کہ یہاں سے فارغ ہونے والے طالب علم عا لمیت کی سند کے ساتھ ساتھ اب راجستھان بورڈ کا بارہویں کا سرٹیفکیٹ لے کر بھی نکلیں گے۔ اس جلسے کی نظامت مولانا شاہد حسین ندوی نے کی اور اس کا اہتمام عبدالکریم ندوی،صدرمدرس دارالعلوم العربیہ الاسلامیہ نے کیا۔ اس کانفرنس میں کثیر تعداد میں جودھپور کے علماء، ائمہ کرام اور معززین شامل ہوئے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز