پنے جرمن بیکری بم دھماکہ 2010 کیس : قتیل صدیقی کے اہل خانہ کو پانچ لاکھ روپے کا معاوضہ

Jan 15, 2017 12:43 PM IST | Updated on: Jan 15, 2017 12:43 PM IST

پنے : جرمن بیکری بم دھماکہ معاملہ میں گرگتار کئے گئے قتیل صدیقی کے اہل خانہ کو بھلے ہی حکومت نے پانچ لاکھ کی رقم طور معاوضہ دئے جانے کا اعلان کیا ہو ، لیکن ان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ان کو اس وقت ہی قرار ملے گا، جب اس واردات کو انجام دینے والے اصل مجرموں کو ان کے کیے کی سزا ملے گی ۔

خیال رہے کہ قتیل صدیقی کوپنے کی یروڈا جیل میں دوران حراست قتل کردیا گیا تھا۔ شردموہول اور الوک بھالے راؤ نامی بدمعاشوں نے ہائی سیکورٹی انڈا سیل میں قتیل کا قتل کردیا تھا۔ نیشنل ہیومن رائٹس کمیشن کی ہدایت پر جیل نے قتیل صدیقی کے اہل خانہ کو پانچ لاکھ روپے کا معاوضہ دیا ہے۔

پنے جرمن بیکری بم دھماکہ 2010 کیس : قتیل صدیقی کے اہل خانہ کو پانچ لاکھ روپے کا معاوضہ

قتیل صدیقی کا تعلق بہار کے دربھنگہ ضلع سے تھا۔ قتیل صدیقی کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ قتیل کو انصاف اسی وقت ملے گا ، جب اس کے قاتلوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز