نہ کھاوں گا نہ کھانے دوں گا کی بات کرنے والے مودی جی نے لگتا ہے اب کھانا شروع کردیا: راہل

Oct 24, 2017 08:49 AM IST | Updated on: Oct 24, 2017 08:49 AM IST

گاندھی نگر۔ بی جے پی صدر امت شاہ کے بیٹے کی کمپنی کے معاملے پر کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی پرسخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ لگتا ہے انہوں نے’اب کھانا شروع کردیا ہے۔‘ مسٹر گاندھی نے یہاں رام کتھا میدان میں منعقد ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر مودی گجرات کے دوروں پر بڑی بڑی باتیں کرتے ہیں لیکن مسٹر شاہ کے بیٹے جے شاہ کی کمپنی کے بارے میں کچھ نہیں بولتے جس کا کاروبار چند ہی ماہ میں پچاس ہزار سے بڑھ کر سولہ ہزار گنا بڑھ کر اسی کروڑ روپے پہنچ گیا۔ انہوں نے کہا کہ ’نہ کھاوں گا نہ کھانے دوں گا کی بات کرنے والے مودی جی نے لگتا ہے اب کھانا شروع کردیا ہے۔‘ ان کا میک ان انڈیا اور اسٹارٹ اپ انڈیا فیل ہوگیا لیکن جے شاہ کی کمپنی آسمان میں راکٹ کی طرح اوپر چلی گئی۔

کانگریس لیڈر نے اپنے حالیہ گجرات دورہ کے دوران جلسوں میں لگائے گئے الزامات کو  ایک بار پھر دہرایا اور کہا کہ ریا ست کا نظام تعلیم چند صنعت کاروں کے ہاتھوں میں چلا گیا ہے۔ صحت کا نظام بھی صرف امیروں کی فکر کرنے والا ہے۔ مودی حکومت نے بڑے صنعت کاروں کا ایک لاکھ بیس ہزار کروڑ روپے کا قرض معاف کردیا ، گجرات میں نینو کے پلانٹ کے لئے ٹاٹا کو 35 ہزار کروڑ روپے دے دئے لیکن کسانوں کا قرض معاف نہیں کیا۔ پاٹی دار تحریک کے لیڈر نریندر پٹیل کی طرف سے بی جے پی پر ایک کروڑروپے دینے کا الزام لگائے جانے کا بالواسطہ ذکر کرتے ہوئے مسٹر گاندھی نے کہا کہ گجراتی آواز کو نہ تو دبایا جاسکتا ہے اور نہ ہی خریدا جاسکتا ہے۔ انہوں نے ہاردک پٹیل اور جگنیش کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھی خاموش نہیں ہوسکتے ان کے دل میں بھی ایک آواز ہے۔ وہ صرف نوجوانوں میں نہیں ہر گجراتی کے دل میں ہیں۔ یہ گجراتی آواز کوئی معمولی آواز نہیں ہے۔ اس آواز کو نہ دبایا جاسکتا ہے ، نہ خریداجاسکتا ہے۔

نہ کھاوں گا نہ کھانے دوں گا کی بات کرنے والے مودی جی نے لگتا ہے اب کھانا شروع کردیا: راہل

انہوں نے بی جے پی اور مسٹر مودی پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ جتنا بھی پیسہ لگائے ایک کروڑ، دس کروڑ، ہزار کروڑ ، ہندوستان کا پورا بجٹ لگا دو، دنیا کا پورا پیسہ لگادو ، لیکن گجرات کی آواز دبا نہیں سکوگے خرید نہیں سکوگے ۔ اب اتنا ڈر گئے ہو کہ گجرات کی آواز کو خریدنا چاہتے ہو۔ مودی جی اس کی کوئی قیمت نہیں اور آپ اس کو خرید نہیں سکتے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز