الور سانحہ : پہلو خان کی موت کے سلسلہ میں پولیس نے مزید دو افراد کو گرفتار کیا ، دیگر ملزموں کی تلاش جاری

Apr 08, 2017 09:00 PM IST | Updated on: Apr 08, 2017 09:00 PM IST

جے پور: راجستھان کے الور میں گئوركشكوں کی بھیڑ کے ذریعہ پہلو خان کے قتل کے سلسلہ میں پولیس نے مزید دو افراد کو گرفتار کیا ہے ۔ خیال رہے کہ کچھ دنوں قبل گئو رکشکوںنے مویشی لے کر جا رہے مسلم کمیونٹی کے 15 افراد پر حملہ کردیا تھا اور ان کی بری طرح پٹائی کی تھی ۔ اس وقعہ میں پہلو خان ​​کی موت ہو گئی تھی۔ پولیس نے اس معاملے میں قتل کا کیس درج کرکھا ہے۔

پہلوں خان ہریانہ کے رہنے والے تھے۔ حملے میں زخمی ان کے 4 دیگر ساتھی کو علاج کے بعد اسپتال میں چھٹی دیدی گئی تھی ۔ بتایا جاتا ہے کہ بھیڑ کی طرف سے گھیرے جانے کے بعد خان اور ان کے ساتھیوں نے پرچياں بھی دكھائیں کہ وہ ان جانوروں کو جے پور کے مویشی میلے سے خرید کر لائے ہیں، لیکن ان کی ایک نہیں سنی گئی۔ بھیڑ نے ان لوگوں کو ہائی وے پر ان کے پک اپ وین سے کھینچ لیا اور دوڑا دوڑا کر پٹائی کی۔

الور سانحہ : پہلو خان کی موت کے سلسلہ میں پولیس نے مزید دو افراد کو گرفتار کیا ، دیگر ملزموں کی تلاش جاری

تاہم اس معاملہ میں راجستھان پولیس کے رویہ پر بھی سوالات اٹھائے جارہے ہیں ۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ پولیس نے حملہ آوروں کے ساتھ ہی ساتھ 15 لوگوں کے اس گروپ کے خلاف بھی جانوروں کی اسمگلنگ کا کیس درج کر رکھا ہے، جبکہ ان کے پاس اس کی جائز رسیدیں پائی گئی ہیں۔ ان رسیدوں میں ان لوگوں کی طرف سے جے پور میونسپل اور دوسرے محکموں کو ادا کیے گئے پیسوں کی وصولی ہے جس کے تحت وہ قانونی طور پر گایوں کو لے جانے کا حق رکھتے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز