گجرات اسمبلی انتخابات : پہلی لسٹ جاری ہوتے ہی بی جے پی میں بغاوت ، شروع ہوا استعفوں کا دور

گجرات اسمبلی انتخابات کیلئے بی جے پی کی جانب سے امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کئے جانے کے فورا بعد سے ہی استعفوں کا دور شروع ہوگیا ہے ۔

Nov 17, 2017 08:11 PM IST | Updated on: Nov 17, 2017 08:11 PM IST

احمد آباد : گجرات اسمبلی انتخابات کیلئے بی جے پی کی جانب سے امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کئے جانے کے فورا بعد سے ہی استعفوں کا دور شروع ہوگیا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ پارٹی کے متعدد لیڈران اس فہرست سے ناراض ہیں اور کئی لیڈروں نے تو استعفی بھی دیدیا ہے ۔ جبکہ کچھ دیگر لیڈروں کے استعفی دینے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے ۔

فہرست جاری ہونے کے فورا بعد ہی گجرات کے انکلیشور اسمبلی سیٹ پر ٹکٹ پانے والے امیدوار کے بھائی نے ہی بغاوت کردی ہے۔ بھائی ایشور پٹیل کو ٹکٹ ملنے کے بعد بھروچ ضلع پنچایت کے رکن ولبھ پٹیل نے بی جے پی سے استعفی دیدیا ۔ ولبھ نے بھی پارٹی سے ٹکٹ کا مطالبہ کیا تھا، لیکن انہیں ٹکٹ نہیں دیا گیا ۔

گجرات اسمبلی انتخابات : پہلی لسٹ جاری ہوتے ہی بی جے پی میں بغاوت ، شروع ہوا استعفوں کا دور

علاوہ ازیں ڈانگ میں بی جے پی لیڈر دشرتھ پوار نے بھی استعفی دیدیا ہے۔ پارٹی کے ذریعہ وجے پٹیل کو امیدوار بنائے جانے کے بعد انہوں نے اپنی ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے یہ قدم اٹھایا ہے۔

خیال رہے کہ بی جے پی نے آج ہی اپنے 70 امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کی ہے ۔ فہرست میں 15 پاٹیدار ، دو چودھری ، آٹھ ٹھاکر ، پانچ کولی ، چھ چھتریہ ، دو براہمن اور دو جین برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو امیدوار بنایا گیا ہے۔ کانگریس چھوڑ کر بی جے پی کا ہاتھ تھامنے والے چاروں لیڈروں کو بھی ٹکٹ دیا گیا ہے ۔ خیال رہے کہ گجرات میں پہلے مرحلہ میں 89 سیٹوں پر انتخابات ہوں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز