مہاراشٹر اردواکیڈمی کی ازسرنوتشکیل کا فیصلہ ، تنازع پر وزیرکی تشویش

Apr 07, 2017 09:54 PM IST | Updated on: Apr 07, 2017 09:54 PM IST

ممبئی : مہاراشٹراسٹیٹ اردواکیڈمی جلد از جلدتشکیل نو کرنے کا ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے تاکہ اکیڈمی میں پائے جانے والے تنازع کو دورکیا جاسکے ۔اس سلسلے میں چند افراد نے ریاستی وزیر برائے تعلیم واقلیتی امور ونودتاوڑے سے ملاقات کی ۔لیکن انہوں نے ان افراد کو ہی نصحیت دے دی اور تنازع پر ناراضگی کا اظہارکیا۔

ونود تاوڑے اس بات پربھی افسوس کا اظہار کیا کہ اردواکیڈمی تشکیل کے ساتھ ہی تنازع کا شکار بن جاتی ہے ،حالانکہ گجراتی ،سندھی اور ہندی کے لیے تشکیل دی جانے والی اکیڈمیاں ان زبانوں کے فروغ کے لیے سرگرم ہیں اور اردووالے تنازع کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اردواکیڈمی کی ازسرنوتشکیل کی جائے گی اور اس میں فعال اور باصلاحیت افراد کو موقعہ دیا جائے گا۔

مہاراشٹر اردواکیڈمی کی ازسرنوتشکیل کا فیصلہ ، تنازع پر وزیرکی تشویش

ذرائع کے مطابق نئی اکیڈمی نے ممبران کی تعدادبھی بڑھائی جائے اور عملے کی بھرتی بھی ممکن ہے ۔بی جے پی سرکار سب کا ساتھ سب کا وکاس کے نعرے کے ساتھ یہ اہم کام کرنا چاہتی ہے۔حال میں حج کمیٹی کی قرعہ اندازی میں بھی ونودتاوڑے نے شرکت کی تھی۔واضح رہے کہ ایکزیکٹیو چیئرمین عبدالرؤف خان کے گزشتہ سال انتقال کے بعد عہدہ خالی ہے۔اور کئی ممبران من مانی کررہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز