شیوسینا کا مودی حکومت پر تیکھا حملہ ، آج ایئر انڈیا بیچ رہے ہیں ، تو کل کیا کشمیر بھی فروخت کردیں گے

Jun 30, 2017 12:34 PM IST | Updated on: Jun 30, 2017 12:34 PM IST

ممبئی : بی جے کی اتحادی پارٹی شیوسینا نے اپنے ترجمان اخبار سامنا میں ایئر انڈیا میں سرمایہ کشی کو لے کر بی جے پی پر تیکھا نشانہ سادھا ہے۔ اخبار سامنا میں لکھا ہے کہ آج اخراجات کی وجہ سے ایئر انڈیا کو فروخت کیا جا رہا ہے تو کیا کل کشمیر کو بھی سیکورٹی میں ہو رہے اخراجات کی وجہ سے فروخت کردیا جائے گا۔

سامنا میں لکھا ہے کہ آج ایئر انڈیا کے قرض کا بوجھ نہیں جھیلا جا رہا ہے ، اس لئے اسے فروخت کیا جا رہا ہے، کل اگر کشمیر کی سیکورٹی میں ہو رہے اخراجات برداشت نہیں ہوئے ، تو کیا کشمیر کی بھی نیلامی ہوگی؟

شیوسینا کا مودی حکومت پر تیکھا حملہ ، آج ایئر انڈیا بیچ رہے ہیں ، تو کل کیا کشمیر بھی فروخت کردیں گے

اخبار میں مزید لکھا گیا ہے کہ ملک کے فخر ایئر انڈیا کو اب فروخت کر رہے ہیں۔ اگر یہ فیصلہ کانگریس حکومت میں ہوا ہوتا ، تو بی جے پی اس کے سارے کپڑے اتار دیتی اور کہتی جو حکومت ایئر انڈیا نہیں چلا سکتی ، وہ ملک کیا چلائے گی۔

شیوسینا نے اپنا حملہ مزید تندوتیز کرتے ہوئے لکھا کہ 50 ہزار کروڑ کے خسارے میں چل رہی ایئر انڈیا کو بی جے پی حکومت نہیں ٹھیک کر پائي اور اس کو فروخت کرنے کا فیصلہ کر لیا، نوکرشاہوں اور ایئر انڈیا کے ملازمین نے ہندوستان کی شان کو فروخت کرکے کھایا ہے، ایک بڑا گھوٹالہ ہوا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ حکومت نے ایئر انڈیا میں سرمایہ کشی کی منظوری دے دی ہے۔ وہیں نیتی آیوگ نے قرض میں ڈوبی ایئر انڈیا کے مکمل طور پر نجکاری کا مشورہ دیا ہے۔ اس ایئر لائن پر 50000 کروڑ روپے کا قرض ہے۔ ایسی خبریں بھی آرہی ہیں کہ ایئر انڈیا کو ٹاٹا گروپ اور انڈیگو نے خریدنے میں دلچسپی ظاہر کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز