کالا ہرن شکار کیس :  سلمان خان کا بیان درج ، کورٹ نے پوچھے 65 سوالات، سیف نے کہا : مجھے پھنسایا گیا

Jan 27, 2017 01:12 PM IST | Updated on: Jan 27, 2017 03:22 PM IST

جے پور : کالا ہرن شکار کیس میں جے پور کورٹ میں سلمان خان کا بیان درج کرلیا گیا ہے۔ عدالت نے سلمان سے 65 سوالات پوچھے تھے۔ فی الحال سلمان بیان درج کرانے کے بعد کورٹ سے جا چکے ہیں۔کالا ہرن کیس میں سیف علی خان نے بھی اپنا بیان درج کرایا۔ سیف نے اپنے بیان میں کہا کہ وہ شکار پر نہیں گئے تھے ، گاؤں والوں اور محکمہ جنگلات نے انہیں جان بوجھ کر پھنسایا ہے۔

واضح رہے کہ سلمان پر کالا ہرن کے شکار کے دوکیس درج ہیں ، جبکہ سیف، تبو، سونالی اور نیلم پر شکار کے لئے اکسانے کا الزام ہے ۔ قصوروار پائے جانے پر سبھی کو 1 سے 6 سال تک کی سزا ہو سکتی ہے، وہیں چاروں کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 148 کے تحت بھی مقدمہ درج ہے اور قصوروار پائے جانے پر 3 سال تک کی سزا ہو سکتی ہے۔

کالا ہرن شکار کیس :  سلمان خان کا بیان درج ، کورٹ نے پوچھے 65 سوالات، سیف نے کہا : مجھے پھنسایا گیا

اس سے پہلے سیکورٹی وجوہات کا حوالہ دیتے ہوئے سلمان خان سمیت سبھی ملزمین نے 25 جنوری کی بجائے 27 جنوری کو پیش ہونے کی عرضی دی تھی، جسے عدالت نے منظور کر لیا تھا۔ سلمان خان ہرن شکار کے چار میں سے تین کیس میں بری ہو چکے ہیں اور اب یہ چوتھا اور آخری کیس ہے۔

واضح رہے کہ 1998 میں فلم ہم ساتھ ساتھ ہیں کی شوٹنگ کے دوران سلمان سمیت دیگر ستاروں پر جودھپور ضلع کے کنكاني گاؤں میں کالا ہرن کا شکار کرنے کا الزام ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز