شیوسینا نے سوچھ بھارت رینکنگ پر اٹھائے سوال ، ای وی ایم گھوٹالہ سے کیا موازنہ

May 06, 2017 09:42 AM IST | Updated on: May 06, 2017 09:42 AM IST

ممبئی : مرکزی حکومت کے سوچھ بھارت کی درجہ بندی پر شیوسینا نے سوال کھڑے کئے ہیں ۔  شیوسینا نے اپنے ترجمان سامنا کے ذریعہ حفظان صحت کی "درجہ بندی" کا ای وی ایم گھوٹالہ سے موازنہ کیا ہے ۔ اداریہ میں لکھا گیا ہے کہ درجہ بندی میں گڑبڑی نہیں ہوئی ہوگی ، اسے کس طرح مانیں؟ شیوسینا نے سوچھ بھارت مہم میں مہاراشٹر کی خراب صورتحال کے لئے مہا نگرپالیكا سمیت ریاستی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے ۔

شیوسینا نے مودی کے حلقہ وارانسی کے گزشتہ سال کے 418 ویں مقام سے اس سال 32 ویں مقام پر آنے پر بھی سوال کھڑا کیا ۔ پوچھا گیا ہے کہ آخر اچانک ایک سال میں اتنی بہتری کیسے آئی ، اس بارے میں لوگوں کو تعجب ہے۔

شیوسینا نے سوچھ بھارت رینکنگ پر اٹھائے سوال ، ای وی ایم گھوٹالہ سے کیا موازنہ

شیوسینا نے ممبئی کی سوچھ بھارت مہم میں 10 ویں مقام سے 29 ویں مقام پر آنے اور شہر میں بڑھتی ہوئی گندگی کے لئے "بیرونی" (غیر مراٹهی) لوگوں کو ذمہ دار بتایا ۔ گزشتہ دو سالوں میں مرکز اور ریاستی حکومت نے سوچھ بھارت مہم کے لئے سینکڑوں کروڑ روپے خرچ  کئے وہ سارے پیسے کوڑے دان میں گیا ہے؟ اس کا زیادہ تر پیسہ اشتہار بازی پر خرچ ہونے سے فضلے کے ڈھیر اسی طرح برقرار ہیں ۔ ممبئی ایک بین الاقوامی شہر ہے ایسے میں شہر میں گندگی پھیلانے والے زیادہ تر لوگ "بیرونی" (غیر مراٹهی) ہیں ۔ ممبئی میں بڑھنے والی بھیڑ اور ان کا کہیں بھی پاؤں پسارنا ، یہی ممبئی کی گندگی کی وجہ ہے ۔

سوچھ بھارت ابھیان کی درجہ بندی پر آپ کچھ بھی کہیں ، لیکن اس درجہ بندی میں ای وی ایم کی طرح گڑبڑی نہیں ہوئی ہوگی ، اسے کس طرح مانیں گے ؟ مہنگائی سے لے کر دہشت گردی تک ، کسانوں کی خود کشی سے لے کر بے روزگاری تک کچھ بھی کم نہیں ہوا ، پھر بھی ملک بھر میں ہر جگہ بی جے پی کی جیت ہو رہی ہے ، اسی طرح اس صفائی مہم کی درجہ بندی کے بارے میں بھی کہا جا سکتا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز