شیو سینا کا متنازع بیان : ہندوستان پہلے ہندوں کا بعد میں کسی اور کا ، مودی حکومت پر بھی سادھا نشانہ

Oct 30, 2017 01:16 PM IST | Updated on: Oct 30, 2017 01:45 PM IST

ممبئی : شیوسینا نے متنازع بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان پہلے ہندوں کا ہے ، بعد میں کسی اور مذہب کے ماننے والوں کا ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ شیو سینا نے مودی حکومت پر بھی نشانہ سادھتے ہوئے کہا ہے کہ مرکز میں ہندتوا حمایت یافتہ حکومت ہونے کے باوجود اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر اور کشمیری پنڈتوں کی گھر واپسی جیسے معاملے حل نہیں ہوسکے ہیں۔  خیال رہے کہ گزشتہ روز آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت نے اندور میں کہا تھا کہ ہندوستان ہندوں کا ملک ہے ، لیکن اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ یہ کسی اور کا ملک نہیں ہے ۔

پارٹی کے ترجمان سامنا کے اداریہ میں شیو سینا نے کہا کہ آر ایس ایس سربراہ کا کہنا ہے کہ ہندوں کو ہندوستان دوسروں کا بھی ہے ۔ ہندوستان پہلے ہندوں کا ہے ، بعد میں کسی اور کا کیونکہ مسلمانوں کے لئے پچاس سے زیادہ ممالک ہیں ، عیسائی کے پاس امریکہ اور یوروپی ممالک جیسے ممالک ہیں ، بودھوں کیلئے چین ، جاپان ، سری لنکا اور میانمار ہیں ، مگر ہندوں کے پاس ہندوستان کے علاوہ کوئی اور نہیں ہے ۔

شیو سینا کا متنازع بیان : ہندوستان پہلے ہندوں کا بعد میں کسی اور کا ، مودی حکومت پر بھی سادھا نشانہ

اداریہ میں شیو سینا نے مزید لکھا کہ ملک میں ہندتوا حمایت یافتہ حکومت ہے پھر بھی اجودھیا میں رام مندر بنانے کی خواہشمند نہیں اور اس نے اس کے مستقبل کو عدالت کے ہاتھوں میں چھوڑ دیا ہے ۔ علاوہ ازیں شیو سینا نے عوامی مقامات پر قومی ترانہ کو لے کر جاری تنازع میں کودتے ہوئے کہا کہ صدر جمہوریہ اور وزیر اعظم دونوں آر ایس ایس سے تعلق رکھتے ہیں ، اس کے باوجود وندے ماترم گانے کو لے کر اڑیل رویہ اپنایا جارہا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز