مسلم ریزرویشن کیلئے 6 جنوری کو خاموش جلوس نکالنے کا اعلان ، دو لاکھ افراد کی شرکت متوقع

Jan 04, 2017 11:18 PM IST | Updated on: Jan 04, 2017 11:18 PM IST

اورنگ آباد: مہاراشٹر کی بی جے پی حکومت مسلمانوں کے تعلق سے سرد مہری کا مظاہرہ کیوں کررہی ہے ، اس کا جواب وزیراعلی دیویندر فڑنویس کو دینا ہوگا ۔ اس طرح کا مطالبہ مسلم ریزرویشن ایکشن کمیٹی کے کنوینر شیخ مسعود نے کیا۔ وہ اورنگ آباد میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ پریس کانفرنس میں 6 جنوری کو اورنگ آباد میں نکلنے والے خاموش جلوس کی تفصیلات فراہم کی گئیں ۔

اورنگ آباد میں چھ جنوری کو نکلنے والے خاموش مسلم ریزرویشن جلوس کی تیاریاں تقریبامکمل کرلی گئی ہیں۔ کمیٹی کےذمہ داروں نے سچر کمیٹی اور رنگ ناتھ مشرا کمیٹی کی رپورٹوں کی روشنی میں ریاست کے مسلمانوں کو پسماندگی کی بنیاد پر15 فیصد ریزرویشن کا مطالبہ کیا ۔ کمیٹی کے کنوینر شیخ مسعود نے مراٹھا ریزرویشن کے لیے حکومت کی جانب سے دائر حلف نامہ بھی پر حکومت کی نیت کو لے کر سوال اٹھایا۔

مسلم ریزرویشن کیلئے 6 جنوری کو خاموش جلوس نکالنے کا اعلان ، دو لاکھ افراد کی شرکت متوقع

مسلم ریزرویشن ایکشن کمیٹی کا دعوی ہے کہ اس جلوس میں دو لاکھ سے زائد افراد کی شرکت متوقع ہے جبکہ چھ ہزار رضاکار وں کو ٹریننگ دی جارہی ہے ۔ جلوس میں نظم وضبط کا پورا خیال رکھا جائے گا۔ ایکشن کمیٹی کے مطابق مسلم ریزرویشن کو یقینی بنانےکے لیے کمیٹی نےقانونی راستہ بھی اپنا یا ہے اور عدالت سے اسے انصاف کی امید ہے ۔ تاہم اس خاموش جلوس کا مقصد مسلمانوں کے تعلق سے حکومت کی سرد مہری کو آشکارہ کرنا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز