ٹی وی اینکرز کے ہتک آمیزسوال کی وجہ پاک مقبوضہ کشمیر میں سرجیکل اسٹرائیک کیا گیا : منوہر پاریکر

Jul 01, 2017 01:51 PM IST | Updated on: Jul 01, 2017 01:52 PM IST

گوا : سابق وزیر دفاع منوہر پاریکر کا کہنا ہے کہ پاک مقبوضہ کشمیر میں ہندوستانی فوج کی طرف سے کئے گئے سرجیکل اسٹرائیک کا منصوبہ حملہ سے 15 ماہ پہلے ہی بن چکا تھا۔ انہوں نے اس حملے کی اہم وجہ بھی بتائی۔

انہوں نے کہا کہ 2015 میں فوج نے میانمار کی سرحد پر عسکریت پسند مخالف مہم چلائی تھی، اس کے بعد ایک ٹی وی اینکر نے راجیہ وردھن سنگھ راٹھور سے ایک اشتعال انگیز سوال پوچھا تھا۔ اس سوال نے ہی انہیں سرجیکل اسٹرائیک کی منصوبہ بندی کے لئے حوصلہ افزائی کی۔

ٹی وی اینکرز کے ہتک آمیزسوال کی وجہ پاک مقبوضہ کشمیر میں سرجیکل اسٹرائیک کیا گیا   : منوہر پاریکر

گوا کے وزیر اعلی نے صنعت کاروں کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاک مقبوضہ کشمیر میں دہشت گردوں پر سرجیکل اسٹرائیک کی منصوبہ بندی 15 ماہ پہلے ہی بنائی گئی تھی۔ چار جون 2015 کو شمال مشرقی کے دہشت گرد گروپ این ایس سی این کے نے منی پور کے چندیل ضلع میں ہندوستانی فوج کے ایک قافلہ پر حملہ کرکے 18 جوانوں کی جانیں لے لی تھیں۔ اس کے بعد آٹھ جون کو ہندوستان نے ہند-ميانمار کی سرحد پر سرجیکل اسٹرائیک کر کے تقریبا 70-80 عسکریت پسندوں کو مار گرایاتھا۔

پاریکر نے کہا کہ انہیں میڈیا کے ایک سوال کا بہت برا لگا تھا۔ مرکزی وزیر اور سابق فوجی راجیہ وردھن سنگھ راٹھور سے ایک ٹیلی ویژن اینکر نے پوچھا تھا کہ کیا آپ میں ملک کے مغربی محاذ پر بھی ایسا کرنے کی ہمت اور صلاحیت ہے۔ سابق وزیر دفاع نے کہا کہ انہوں نے اس وقت توجہ سے سوال سنا ، لیکن اس کا جواب صحیح وقت پر دینے کا فیصلہ کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز