تعزیہ کمیٹی کا موسم ندی کی صفائی اور حسینی ساگر نام سے تالاب بنانے کا مطالبہ

مالیگاؤں۔ مالیگاؤں شہر میں پچھلے دو سو سال سے محرم الحرام میں تعزیہ بنانے کی روایت جاری ہے۔

Sep 23, 2017 07:10 PM IST | Updated on: Sep 23, 2017 07:10 PM IST

مالیگاؤں۔ مالیگاؤں شہر میں پچھلے دو سو سال سے محرم الحرام میں تعزیہ بنانے کی روایت جاری ہے۔ شہر کے الگ الگ حصوں میں ڈیڑھ سو سے زیادہ تعزیے بنائے جاتے ہیں۔ 9؍ محرم الحرام کو یہ تعزیے کربلا کے میدان کی طرف روانہ ہوتے ہیں۔ مالیگاؤں شہر تعزیہ کمیٹی کی جانب سے اس سال یہ مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ تعزیے کے گذرنے والے راستوں کی مرمت کی جائے ۔ راستے میں آنے والی دشواریوں کو دور کیا جائے اور کربلا جس جگہ پر تعزیوں کا آخری پڑاؤ ہوتا ہے ، وہاں پر حسینی ساگر نام سے تالاب بنایا جائے۔

مالیگاؤں شہر جسے روایتی تہواروں کا شہر کہا جاتا ہے ۔ اس شہر میں پچھلے دو سو سالوں سے لوگ حضرت امام حسینؓ کی یاد میں تعزیے بناتے ہیں۔ ان تعزیوں کو 9؍ محرم کے دن شہر کے الگ الگ راستوں سے جلوس کی شکل میں کربلا کے میدان میں پہنچایا جاتا ہے۔ کربلا کا میدان جہاں پر شہر کی موسم ندی اور گرنا ندی کا سنگم ہے ۔ وہاں ان تعزیوں کو ٹھنڈا کیا جاتا ہے۔ اس سال تعزیہ کمیٹی نے کارپوریشن سے مطالبہ کیا کہ جس جگہ تعزیوں کو ٹھنڈا کیا جاتا ہے۔ اُس موسم ندی میں گٹروں کا پانی بھی موجود ہوتا ہے۔ اس لئے تعزیوں کی پاکیزگی برقرار رکھنے کے لئے اس ندی کی صفائی کی جائے اور وہاں پر حسینی ساگر کے نام سے تالاب بنایا جائے۔

تعزیہ کمیٹی کا موسم ندی کی صفائی اور حسینی ساگر نام سے تالاب بنانے کا مطالبہ

 محرم کی 09؍ تاریخ کی شام سے لے کر 10 ؍محرم کی عصر کی نماز تک شہر کے الگ الگ راستوں سے گذر کر جلوس کی شکل میں تعزیے کربلا پہنچتے ہیں۔ بارش کی وجہ سے راستے خراب ہوچکے ہیں۔ کہیں کہیں پر کیچڑ اتنا ہے کہ وہاں سے گذرنا مشکل ہے۔ اس لئے خاص طور سے مضافاتی علاقوں کے تعزیوں کے لئے اچھے راستوں کا انتظام کرنے کا مطالبہ تعزیہ کمیٹی کی جانب سے کیا جارہا ہے۔ تعزیے کے راستوں میں بجلی کے تار اور دوسرے تاروں کی وجہ سے آنے والی دشواریوں کو بھی ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز