صوفی سنت حضرت خواجہ معین الدین چشتی کی درگاہ سے نکلتا ہے سب سے بڑا تعزیہ

صوفی سنت حضرت خواجہ معین الدین چشتی کی درگاہ میں محرم کی تیاریاں تقریبا مکمل ہو چکی ہیں ۔

Sep 23, 2017 07:21 PM IST | Updated on: Sep 23, 2017 07:21 PM IST

جئے پور۔ محرم ماہ میں دنیا بھر میں لوگ اپنے اپنے طریقے سے غم کا اظہار کرتے ہیں ۔ صوفی سنت حضرت خواجہ معین الدین چشتی کی درگاہ میں محرم کی تیاریاں تقریبا مکمل ہو چکی ہیں ۔  یہاں درگاہ کی انجمن کمیٹی کی جانب سے سب سے بڑا تعزیہ بنایا جاتا ہے۔ اس  تعزیہ کے بنانے کا کام عیدالفطرکے بعد سے ہی شروع ہو جاتا ہے اور محرم سے پہلے مکمل کر لیا جاتا ہے ۔

محرم کو منی عرس بھی کہا جاتا ہے ۔ ضلع انتظامیہ کی جانب سے منی عرس پر آنے والے زائرين کوسہولیات دینے کے لئے تمام ڈپارٹمنٹس کی میٹنگ بلا کر درگاہ علاقے کے ہوٹل، مسافر خانوں کے علاوہ شہر کی نالی صفائی ، بجلی، سڑکوں کی صفائی اور مرمت کا جائزہ لیا گیا ۔  اس میٹنگ میں  درگاہ کمیٹی کے ممبر بھی موجود رہے۔ انہوں نے بتایا کہ جگہ جگہ بجلی کے تار کھلے پڑے ہیں۔  بتایا گیا کہ علاقے میں  تجاوزات سے کافی پریشانی ہو رہی ہے۔ درگاہ میں آنے والے زائرين کی حفاظت کے لئے پولیس محکمہ  اور درگاہ کمیٹی نے درگاہ کے اندر کیمرے لگا رکھے ہیں، جس پر ہر وقت درگاہ تھانے میں بنے كٹرول روم سے نظر رکھی جاتی ہے۔ انتظامیہ نے کنٹرول روم کا بھی جائزہ لیا ۔

صوفی سنت حضرت خواجہ معین الدین چشتی کی درگاہ سے نکلتا ہے سب سے بڑا تعزیہ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز