حوصلوں کی اڑان: ممبرا کے ان چار بچوں نے یوروپ میں کامیابی کے گاڑے جھنڈے

ممبرا۔ ممبرا کے غریب ومتوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے چار بچوں نے کراٹے ، باکسنگ اور ایم ایم اے میں یوروپ کے ملک آذر بائیجان میں اپنی جیت درج کرا کے شہر ، ملک و قوم کا نام روشن کرنے کا عظیم کارنامہ انجام دیا ہے ۔

Dec 13, 2017 01:36 PM IST | Updated on: Dec 13, 2017 01:36 PM IST

ممبرا۔ ممبرا کے غریب ومتوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے چار بچوں نے کراٹے ، باکسنگ اور ایم ایم اے میں یوروپ کے ملک آذر بائیجان میں اپنی جیت درج کرا کے شہر ، ملک و قوم کا نام روشن کرنے کا عظیم کارنامہ انجام دیا ہے ۔ بچوں کی اس کامیابی پر شہریوں نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے ان بچوں کے علاوہ انکے ٹریننگ ٹیچر یعقوب خان اور اسپانسر شبیر خان کو مبارکباد پیش کی ہے ۔

ممبئی سے متصل مسلم اکثریتی شہر ممبرا، جہاں ان دنوں ڈرگس مافیاؤں کی تلاش میں کرائم  برانچ و اینٹی نارکوٹیک محکمہ سرگرم ہے ۔ ایسے سراسیمگی کے ماحول میں یہاں کے غریب و متوسط طبقات سے تعلق رکھنے والے چار نوعمر  بچوں عادل خان، اویز خان، فیصل شیخ ، اورصدیق انس نے کراٹے، باکسنگ، مارشل آرٹ جیسے انٹرنیشنل کھیلوں میں بین الاقوامی سطح پر ہونے والے مقابلہ میں یوروپ میں نہ صرف اپنی کامیابی کے جھنڈے گاڑے بلکہ ان چاروں نے گولڈ میڈل اورڈھیر ساری ٹرافیاں وسرٹفیکیٹ حاصل کرکے یہ ثابت کردیا کہ اڑان پروں سے نہیں حوصلوں سے ہوتی ہے۔

حوصلوں کی اڑان: ممبرا کے ان چار بچوں نے یوروپ میں کامیابی کے گاڑے جھنڈے

غریب و متوسط طبقات سے تعلق رکھنے والے چار نوعمر بچوں عادل خان، اویز خان، فیصل شیخ ، اورصدیق انس

ممبرا کے غریب گھرانوں سے تعلق رکھنے والے ان ہونہار بچوں کے ناموں کا سلیکشن جب بین الاقوامی مقابلہ کی فہرست میں آیا تو ان کی خوشی کی انتہا نہ تھی لیکن وہاں تک جایا کیسے جائے، یہ سوچ کر انکی خوشی کافور ہوگئی ۔ ایسے میں شہر کے معروف معمار شبیر خان نے ان بچوں کو اذر بائیجان جانے کا خرچ دیا اور کہا کہ یہ قوم کا مستقبل ہیں ان کی کامیابی میں ہمارے شہر و سماج کی کامیابی ہے۔

جو لوگ وقت کا اور حالات کا رونا روتے ہیں، ان کے لئے ممبرا کے یہ چاروں بچے ایک مثال ہیں۔ ان میں سے کوئی اسکول میں پڑھتا ہے تو کوئی کالج جاتا ہے اور کوئی ملازمت کرتا ہے لیکن اپنی ان مصروفیات کے باوجود یہ بچے وقت نکال کر ٹریننگ و مقابلہ میں حصہ لیتے ہیں ۔ چاروں بچے یقیناً ان لوگوں کے لئے ایک مشعل راہ ہیں جو اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے وقت کی تنگی اور حالات کا رونا روتے رہتے ہیں ۔ ان چاروں بچوں نے نامساعد حالات میں بھی ہمت نہیں ہاری، کوشش کرتے رہے اور انکی اس کوششوں کو پروان چڑھانے کے لئے اللہ نے یعقوب خان اور شبیر خان جیسوں کو ذریعہ بنا کر بھیجا اور بچوں نے بھی اپنے معاونین و شہر کا نام روشن کر کے دکھا دیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز