جالندھر سے تین کشمیری طلبہ گرفتار ، اے کے 47 اور کثیر تعداد میں کارتوس برآمد ، جانچ جاری

پنجاب اور جموں و کشمیر پولیس نے مشترکہ مہم کے تحت بدھ کو جالندھر کے سی ٹی انسٹی ٹیوٹ سے تین کشمیری طالب علموں کو گرفتار کیا ہے۔

Oct 10, 2018 02:52 PM IST | Updated on: Oct 10, 2018 02:52 PM IST

پنجاب اور جموں و کشمیر پولیس نے مشترکہ مہم کے تحت بدھ کو جالندھر کے سی ٹی انسٹی ٹیوٹ سے تین کشمیری طالب علموں کو گرفتار کیا ہے۔ ان طلبہ کے پاس سے ایک اے اکے 47 ، 90 کارتوس ، ایک پستول اور دھماکہ کیلئے استعمال کئے جانےوالے مواد برآمد کئے گئے ہیں۔ برآمد مواد کو جانچ کیلئے لیب میں بھیج دیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق پنجاب اور جموں و کشمیر پولیس نے مشترکہ مہم کے تحت جالندھر کے سی ٹی انسٹی ٹیوٹ سے تین کشمیری طلبہ کو حراست میں لیا ۔ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ جالندھر کے ایک پولیس اسٹیشن میں ہوئے دھماکہ کو وہاں کے کچھ طلبہ نے انجام دیا تھا ۔ پولیس جانچ کے بعد پانچ طالب علموں کو حراست میں لیا گیا ۔ ان کے پاس سے ایک اے کے 47 ، 90 کارتوس ، ایک پستول اور دھماکہ خیز مواد برآمد کئے گئے ۔ فی الحال جانچ جاری ہے اور اس معاملہ میں کئی دیگر گرفتاریوں کا بھی امکان ہے۔

جالندھر سے تین کشمیری طلبہ گرفتار ، اے کے 47 اور کثیر تعداد میں کارتوس برآمد ، جانچ جاری

علامتی تصویر

غور طلب ہے کہ پنجاب کے کئی انجینئرنگ اور مینجمنٹ اداروں میں مرکز سے ملنے والی اسکالر شپ کی بنیاد پر کئی کشمیری طلبہ پڑھائی کرتے ہیں اور ہاسٹلوں میں رہتے ہیں ۔ پولیس نے طلبہ کے پاس سے دھماکہ خیز مواد آرڈی ایکس بھی برآمد کیا ہے ۔ ذرائع کے مانیں تو ان ہتھیاروں اور دھماکہ خیز مواد سے تہواروں کے موسم میں بڑے حملوں کو انجام دینے کی سازش تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز