گجرات اسمبلی میں جم کر ہوئی ہاتھا پائی، کانگریسی رکن اسمبلی کا پیر ٹوٹا

گجرات اسمبلی میں کسانوں کی خود کشی پر کانگریس ممبر اسمبلی پریش دھانانی کے سوال کو لے کر ہنگامہ اتنا بڑھا کہ ایک دوسرے سے ہاتھا پائی کی نوبت آ گئی۔

Feb 23, 2017 03:42 PM IST | Updated on: Feb 23, 2017 03:44 PM IST

احمد آباد۔ گجرات اسمبلی میں بجٹ سیشن کے چوتھے دن (جمعرات) زبردست ہنگامہ ہوا۔ کسانوں کی خود کشی پر کانگریس ممبر اسمبلی پریش دھانانی کے سوال کو لے کر ہنگامہ اتنا بڑھا کہ ایک دوسرے سے ہاتھا پائی کی نوبت آ گئی۔ دراصل، حکمراں بی جے پی حکومت کی جانب سے دئے گئے جواب سے مطمئن نہیں ہونے پر اپوزیشن ارکان ہنگامہ کرنے لگے۔ اسی درمیان کچھ کانگریسی رکن اسمبلی وزیر نرملا بین کی جانب بڑھے۔ دونوں طرف سے شور و غل ہونے کے درمیان نرملا بین کو ہاتھ میں چوٹ لگی تو کانگریس ممبر اسمبلی بلدیو جی کا پاؤں زخمی ہو گیا۔

اسمبلی میں ہنگامہ کو دیکھتے ہوئے اسمبلی اسپیکر رمن لال ووہرا نے ایوان کو ملتوی کر دیا۔ اسمبلی میں ہوئے ہنگامے کو تاریخ کا سیاہ دن کہتے ہوئے نائب وزیر اعلی نتن پٹیل نے کہا کہ آج جو کانگریس نے کیا ہے، وہ گجرات کی تاریخ میں سیاہ دن ہے۔

گجرات اسمبلی میں جم کر ہوئی ہاتھا پائی، کانگریسی رکن اسمبلی کا پیر ٹوٹا

Loading...

انہوں نے کہا کہ کانگریس ممبر اسمبلی پریش دھانانی کے سوال پر وزیر چمن بھائی جواب دے رہے تھے، تبھی پریش دھانانی اور بلدیو جی ٹھاكور وزیر کی طرف بڑھے۔ کانگریسی ارکان نے وزیر کے ہاتھ سے کاغذ جھپٹ كر خوب ہنگامہ کیا۔ یہ واقعہ سی سی ٹی وی کیمرے میں بھی قید ہے۔ ایسے ممبران اسمبلی کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز