بیف پر بحث کے درمیان وینکیا نائیڈو نے کہا : میں خود گوشت خور ہوں ، لوگوں کو جبرا شاکاہاری بنانے کی باتیں غلط

Jun 07, 2017 09:39 AM IST | Updated on: Jun 07, 2017 09:50 AM IST

ممبئی  : ملک میں بیف پر پابندی کو لے کر جاری بحث کے درمیان مرکزی وزیر اور بی جے پی کے سینئر لیڈر ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ وہ خود بھی گوشت خور ہیں اور کھانا ہر شخص کی اپنی پسند کا موضوع ہے ۔

انہوں نے اس سے صاف انکار کیا کہ بی جے پی سب کو شاکاہاری بنانا چاہتی ہے ۔ ممبئی میں ایک پریس کانفرنس سے پہلے نائیڈو نے کہا کہ کچھ پاگل لوگ ایسی باتیں کرتے رہتے ہیں کہ بی جے پی سب کو شاکاہاری بنانا چاہتی ہے ، یہ لوگوں کی پسند ہے کہ وہ کیا کھانا چاہتے ہیں اور کیا نہیں ۔

بیف پر بحث کے درمیان وینکیا نائیڈو نے کہا : میں خود گوشت خور ہوں ، لوگوں کو جبرا شاکاہاری بنانے کی باتیں غلط

انہوں نے کہا کہ معاملہ پر سیاست کی جارہی ہے ۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ ایک سیاسی پارٹی نے تبصرہ کیا تھا کہ بی جے پی سب کو شاکاہاری بنانا چاہتی ہے اور اس پر ٹی وی ڈبیٹ بھی ہوا ۔ میں نے اپنے صحافی دوستوں کو بتایا کہ میں حیدرآباد میں تھا ریاستی صدر تھا اور گوشت خور بھی ہوں، پھر بھی میں پارٹی صدر بنا ۔

خیال رہے کہ گزشتہ تین سالوں میں ملک کے مختلف حصوں سے گئوركشكوں کی طرف سے پرتشدد واقعات کی خبریں آئی ہیں ۔ مرکزی حکومت نے حال ہی میں ایک حکم جاری کر کے مویشی مارکیٹ میں ذبح کے لئے جانوروں کی خریداری و فروخت پر روک لگا دی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز