جے پور: پولیس کے ذریعہ مسلم نوجوان کی پٹائی کرنے پر بھڑکا تشدد، ایک کی موت، 20 زخمی

Sep 09, 2017 01:37 PM IST | Updated on: Sep 09, 2017 01:37 PM IST

جے پور۔ راجستھان کی راجدھانی جے پور کے رام گنج تھانہ علاقے میں گزشتہ رات تھانے پر مشتعل لوگوں کے حملے کے بعد لوگوں کی بھیڑ کو منتشر کرنے کے لئے کی گئی پولس فائرنگ میں ایک نوجوان کی موت ہوگئی اور تین پولیس اہلکاروں سمیت 20 افراد زخمی ہوگئے۔ پولس ذرائع نے آج بتایا کہ رات صادق نامی ایک نوجوان اپنے خاندان کے ساتھ موٹر سائيكل پر جا رہا تھا اور اسی دوران وہاں تعینات ٹریفک پولس اہلکاروں نے اسے چیک کرنے کے لئے رکنے کا اشارہ کیا۔ لیکن جب اس نے اسے نظر انداز کیا تو ایک پولس اہلکار نے اپنی لاٹھی سے موٹر سائیکل کو  روکنے کی کوشش کی، جس سے وہ لوگ نیچے گر گئے۔

اس کے بعد صادق نے پولس اہلکاروں کے ساتھ کچھ جھگڑا کیا اور بعد میں دوسرے لوگوں کے ساتھ تھانہ پہنچ کر ہنگامہ شروع کردیا۔ مشتعل افراد نے تھانے میں موجود پولس اہلکاروں کے ساتھ دھکا مکی بھی کی اور وہاں دو موٹر سائیکلوں ،ایمبولینسوں اور ٹرانسفارمر کو آگ لگا دی۔ پولیس نے انہیں منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کے گولے چھوڑے لیکن بھیڑ بدستور ڈٹی رہی، بعد میں پولیس نے  فائرنگ کی جس میں ایک نوجوان کی موت ہو گئی اور تین پولس اہلکاروں سمیت 20 سے زائد لوگ زخمی ہو گئے۔ اس کے بعد، انتظامیہ نے رات ایک بجے رام گنج علاقے میں کرفیو نافذ کردیا۔

جے پور: پولیس کے ذریعہ مسلم نوجوان کی پٹائی کرنے پر بھڑکا تشدد، ایک کی موت، 20 زخمی

جے پور پولس کمشنر سنجے اگروال نے بتایا کہ علاقے میں کشیدگی کو دیکھتے ہوئے رام گنج ، مانك چوك، گلت گیٹ اور سبھاش چوک میں کرفیو لگا دیا گیا ہے۔

جے پور پولس کمشنر سنجے اگروال نے بتایا کہ علاقے میں کشیدگی کو دیکھتے ہوئے رام گنج ، مانك چوك، گلت گیٹ اور سبھاش چوک میں کرفیو لگا دیا گیا ہے۔ فی الحال علاقے میں حالات کشیدہ لیکن کنٹرول میں ہیں۔ صبح میں، ایس ٹی ایف، ریپڈ ایکشن فورس اور مقامی پولی نے اس علاقے میں فلیگ مارچ کیا۔ تمام زخمیوں کو سوائی ما ن سنگھ اسپتال میں داخل کرا دیا گیا ہے اور مرنے والے نوجوان کی لاش مردہ خانہ میں رکھی گئی ہے۔ پوسٹ مارٹم ان کے رشتہ داروں کے آنے کے بعد کیا جائے گا۔ ابھی پورے اسپتال کے علاقے میں سخت سکیورٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔ اگر ضرورت ہوئی تو دفعہ 144 بھی اسپتال میں لاگو کیا جائے گا۔ ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل اجیت سنگھ شیخاوت نے کہا ہے کہ قصورواروں کو قطعی نہیں بخشا جائے گا اور ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز