چیمپئنز ٹرافی : ہندوستان - پاکستان مہا مقابلہ کی تیاری پر وراٹ کوہلی نے کہی یہ بات

May 24, 2017 07:58 PM IST | Updated on: May 24, 2017 07:58 PM IST

ممبئی: آئی پی ایل -10 کے بعد اب چیمپئنز ٹرافی کے لئے ٹیم انڈیا کے روانہ ہونے سے پہلے وراٹ کوہلی نے میڈیا سے بات چیت کی۔ اس دوران انہوں نے جہاں پاکستان سے ہونے والے مقابلہ کے بارے میں کھل کر جواب دیا، وہیں مہندر سنگھ دھونی اور یوراج کو ٹیم انڈیا کی سب سے مضبوط دیوار قرار دیا ہے۔ یہی نہیں انہوں نے اپنے فارم پر اٹھ رہے سوالوں کے بھی جواب دیئے۔ خیال رہے کہ چیمپئنز ٹرافی یکم جون سے شروع ہو رہی ہے اور بھارت کو پاکستان سے پہلا مقابلہ کھیلنا ہے۔

وراٹ نے کہا جو چیز ہمارے قابو میں نہیں ہے، ہم اس کے بارے میں نہیں سوچتے ہیں۔ شائقین اور ہر کسی کے لئے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کا مقابلہ بالکل ایک الگ مقابلہ ہوتا ہے، لیکن ہمارے لئے یہ صرف ایک کرکٹ میچ ہوتا ہے، ہر مرتبہ یہی سوال ہوتا ہے، جب آپ انڈیا کے لئے کھیلتے ہیں تو آپ کے لئے ہر میچ معنی رکھتا ہے ، اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کہ ہم کہاں کھیل رہے ہیں، میرے لئے ایسا نہیں ہے کہ کوئی بدلہ لینا ہے ، خواہ یہاں جیتے یا پھر باہر ، جیت معنی رکھتی ہے۔

چیمپئنز ٹرافی : ہندوستان - پاکستان مہا مقابلہ کی تیاری پر وراٹ کوہلی نے کہی یہ بات

ہندوستان کے لئے کتنا ہے چیلنج؟

ٹیم انڈیا کے کپتان نے کہا کہ پہلا چیلنج یہ ہے کہ ہمیں یہ نہیں سوچنا ہے کہ ہمیں ٹرافی ڈفینڈ کرنی ہے۔ پچھلی مرتبہ ہم نے لطف اٹھایا تھا، ٹیسٹ کرکٹ میں ہم نے اپنی جیت کی بھوک کی وجہ سے نمبر ایک کا مقام حاصل کیا اور ہم اسی مائنڈ سیٹ کے ساتھ جانا چاہتے ہیں۔

ورلڈ کپ سے کس طرح الگ ہے چیمپئنز ٹرافی؟

انگلینڈ روانہ ہونے سے پہلے پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا چیمپئنز ٹرافي میں آپ کو پہلے میچ سے ہی تیار رہنا پڑتا ہے۔ ورلڈ کپ میں کئی مرتبہ آپ کو پیچھے سے بھی واپسی کا موقع ملتا ہے ، لیکن یہاں نہیں۔

دھونی اور یوراج کا تجربہ کتنا اہم؟

وہ دونوں (دھونی اور یوراج) اس طرح کے کھلاڑی ہیں کہ مجھے کچھ کہنے کی ضرورت نہیں ہے۔ گزشتہ سیریز میں وہ کھل کر کھیل رہے تھے، لطف اندوز ہو رہے تھے، ٹیم میں خوداعتمادی بڑھ جاتی ہے جب ایسے کھلاڑی کھل کر کھیلتے ہیں ، وہ ٹیم کی دو سب سے مضبوط دیوار ہیں۔

اہم فیکٹر کون؟

وراٹ نے کہا کہ گزشتہ مرتبہ ٹرافی میں ہماری سلامی جوڑی بہت اچھی رہی تھی، روہت اور شیکھر کی جوڑی کی عمدہ کارکردگی ہماری جیت کی سب سے بڑی وجہ تھی، اشون اور جڈیجہ کا فارم بھی شاندار رہا تھا۔ اس مرتبہ بھی یہ اہم فیکٹر ہوں گے۔

انگلینڈ میں کھیلنا الگ چیلنج؟

انہوں نے کہا کہ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کہ ہم کہاں کھیل رہے ہیں؟ میرے لئے ایسا نہیں ہے کہ کوئی بدلہ لینا ہے ، خواہ یہاں جیتے یا پھر باہر ، جیت معنی رکھتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز