عورت خواہ کتنی ہی بوڑھی کیوں نہ ہوجائے ، سفر حج کے لیے محرم لازمی شرط : مفتی حرم وصی اللہ عباس

حرم مکی کے مفتی پروفیسر ڈاکٹر وصی اللہ عباس نے محرم کے بغیر خاتون کے سفر حج کو ناجائز قرار دیا ہے۔

Oct 25, 2017 07:05 PM IST | Updated on: Oct 25, 2017 07:06 PM IST

اورنگ آباد: حرم مکی کے مفتی پروفیسر ڈاکٹر وصی اللہ عباس نے محرم کے بغیر خاتون کے سفر حج کو ناجائز قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ عورت خواہ کتنی ہی بوڑھی کیوں نہ ہوجائے ، سفر حج کے لیے محرم لازمی شرط ہے ۔ سعودی حکومت نے محرم کے بغیرسفر حج کی اجازت نہیں دی ہے ۔قابل ذکر ہے کہ مفتی حرم جمعیت العربیہ الہند کی دعوت پراورنگ آباد کے دورے پر ہیں۔ اس میڈیا سے بات چیت میں انھوں نے یہ وضاحت کی اور صاف کہا کہ سعودی حکومت نے محرم کے بغیر سفر حج کی اجازت نہیں دی ہے ۔

خیال رہے کہ ہندوستانی حکومت کے اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سےگزشتہ دنوں حج پالیسی میں تبدیلی کرتے ہوئےاعلان کیا گیا تھا 45 سال سے زیادہ عمرکی خواتین چار کے گروپ میں کسی مرد محرم کے بغیر سفر حج پرجا سکتی ہیں ۔ اس معاملہ میں مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہا تھا کہ دیگر ممالک کی خواتین بھی اس طرح حج کر رہی ہیں اور سعودی عرب حکومت نے خود اس کی پہل کی ہے ۔

عورت خواہ کتنی ہی بوڑھی کیوں نہ ہوجائے ، سفر حج کے لیے محرم لازمی شرط : مفتی حرم وصی اللہ عباس

حرم مکی کے مفتی پروفیسر ڈاکٹر وصی اللہ عباس

جب ہندوستان کے علما نے اس کو غیر شرعی قرار دیا ، تو کہا گیا کہ وہ خواتین کی آزادی اورترقی کے خلاف ہیں، لیکن اب مفتی حرم کے بیان سے یہ معاملہ الجھ گیا ہے کہ کون صحیح کہہ رہا ہے ۔ اب یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ بی جے پی حکومت مفتی حرم کے اس بیان پر اپنا کیا رد عمل ظاہر کرتی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز