تین طلاق بل کے خلاف نانڈیر میں احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ ، خواتین اتریں گی سڑکوں پر

Jan 11, 2018 11:16 PM IST | Updated on: Jan 11, 2018 11:17 PM IST

ناندیڑ: طلاق ثلاثہ پر پابندی کے ذریعہ حکومت کی جانب سے شریعت میں مداخلت کے خلاف ناندیڑ کے دانشوروں اور علما کرام نے بھی فکر مندی کا ظہار کیا ہے۔ ملک میں ان دنوں شریعت کو لے کر بحث و مباحثوں کا دور چل رہا ہے۔ مسلم پرسنل لاء بورڈ کی رہنمائی میں شہروں اور قصبوں میں جلسے اور جلوسوں کے ذریعہ بیداری پیدا کرنے کی کوششیں بھی ہورہی ہیں۔

طلاق ثلاثہ کےمسئلہ پرحکومت کی جانب سے بنائےگئےقانون کےخلاف عوامی بیداری لانے کے لئے مسلم متحدہ محاذ کی جانب سےناندیڑ میں بڑے پیمانے پر احتجاج کے منصوبہ کے لئے آج ایک مشاورتی میٹنگ کا اہتمام کیا گیا۔ یہ میٹنگ شہر کے فاطمہ گرلس ہائی اسکول میں رکھی گئی ۔ میٹنگ میں مختلف ملی و سماجی تنظیموں کے ذمہ داران نے شرکت کی ۔

تین طلاق بل کے خلاف نانڈیر میں احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ ، خواتین اتریں گی سڑکوں پر

مسلم متحدہ محاذ کی جانب سےناندیڑ میں بڑے پیمانے پر احتجاج کے منصوبہ کے لئے ایک مشاورتی میٹنگ کا اہتمام کیا گیا۔

میٹنگ میں ریزرویشن ریلی کی طرز پر خواتین کی ایک بڑی ریلی نکالنے کا منصوبہ بھی بنایا گیا ۔ فروری میں خواتین کا یہ مورچہ نکالا جائے گا ۔ تاکہ حکومت کی جانب سے مسلم خواتین کے تحفظ کے نام پر شریعت میں کی جا رہی مداخلت کو اجاگر کیا جا سکے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز