Live Results Assembly Elections 2018

نیشنل رائفل شوٹنگ مقابلوں کیلئے اورنگ آباد کی علیمہ صدیقی کا انتخاب ، اہل خانہ میں خوشی کی لہر

Dec 21, 2017 11:17 PM IST
1 of 8
  • مولانا آزاد کالج کی ہونہار طالبہ علیمہ صدیقی نے اپنی محنت اور لگن سے رائفل شوٹنگ کے قومی مقابلوں میں جگہ بنائی ہے ۔ یہ مقابلے جنوری میں کیرالہ میں ہوںگے ۔علیمہ صدیقی کا تعلق ایک متوسط گھرانے سے ہے ۔ متوسط طبقہ کے افراد بھی رائفل شوٹنگ میں اپنی کامیابی کے جوہردکھا سکتے ہیں، نیشنل مقابلوں میں جگہ بناکرعلیمہ نے یہ ثابت کردیا ہے ۔

    مولانا آزاد کالج کی ہونہار طالبہ علیمہ صدیقی نے اپنی محنت اور لگن سے رائفل شوٹنگ کے قومی مقابلوں میں جگہ بنائی ہے ۔ یہ مقابلے جنوری میں کیرالہ میں ہوںگے ۔علیمہ صدیقی کا تعلق ایک متوسط گھرانے سے ہے ۔ متوسط طبقہ کے افراد بھی رائفل شوٹنگ میں اپنی کامیابی کے جوہردکھا سکتے ہیں، نیشنل مقابلوں میں جگہ بناکرعلیمہ نے یہ ثابت کردیا ہے ۔

  •  خاندانی پس منظر، گھریلو ماحول  صالح اقدار اور  کردار سازی میں اہم رول ادا کرتے ہیں۔ ایسا ہی کچھ آزاد کالج کی ہونہار طالبہ علیمہ صدیقی کے ساتھ ہے ۔ بچپن میں دادا کے فوج میں بہادری کے قصےاور واقعات معصوم ذہن پر نقش ہوتے رہے۔

    خاندانی پس منظر، گھریلو ماحول صالح اقدار اور کردار سازی میں اہم رول ادا کرتے ہیں۔ ایسا ہی کچھ آزاد کالج کی ہونہار طالبہ علیمہ صدیقی کے ساتھ ہے ۔ بچپن میں دادا کے فوج میں بہادری کے قصےاور واقعات معصوم ذہن پر نقش ہوتے رہے۔

  • ہوش سنبھالا تو دادا محمد وقارالدین ہی آئیڈل قرار پائے۔ نتیجہ چھٹی جماعت میں ہی علیمہ نے رائفل سنبھال لی۔ والدین کی حوصلہ افزائی اور خوشگوار ماحول علیمہ کے لیے معاون ثابت ہوا ۔

    ہوش سنبھالا تو دادا محمد وقارالدین ہی آئیڈل قرار پائے۔ نتیجہ چھٹی جماعت میں ہی علیمہ نے رائفل سنبھال لی۔ والدین کی حوصلہ افزائی اور خوشگوار ماحول علیمہ کے لیے معاون ثابت ہوا ۔

  •  پروفیشنل ٹریننگ کے دوران کچھ دشواریاں بھی آئیں ، لیکن علیمہ کےعزم نے ان دشواریوں کو مات دی اور اسکولی مقابلوں سے لے کر قومی سطح کے مقابلوں کا سفر طے کیا ۔

    پروفیشنل ٹریننگ کے دوران کچھ دشواریاں بھی آئیں ، لیکن علیمہ کےعزم نے ان دشواریوں کو مات دی اور اسکولی مقابلوں سے لے کر قومی سطح کے مقابلوں کا سفر طے کیا ۔

  •  رائفل شوٹنگ ہی علیمہ صدیقی کا پیشن ہے۔ علیمہ نےاب تک پانچ مرتبہ اسٹیٹ لیول اورچارمرتبہ نیشنل لیول مقابلوں میں حصہ لیا ۔ اس مرتبہ پھرانہیں مہاراشٹر کی نمائندگی کا موقع ملا ہے۔

    رائفل شوٹنگ ہی علیمہ صدیقی کا پیشن ہے۔ علیمہ نےاب تک پانچ مرتبہ اسٹیٹ لیول اورچارمرتبہ نیشنل لیول مقابلوں میں حصہ لیا ۔ اس مرتبہ پھرانہیں مہاراشٹر کی نمائندگی کا موقع ملا ہے۔

  •  کیرالہ میں ہونے والے نیشنل رائفل شوٹنگ مقابلوں کے لیے مہاراشٹر سے دس کھلاڑیوں کا انتخابات ہوا ہے ، جن میں علیمہ بھی شامل ہیں۔ علیمہ کے والد پروفیسر رفیق اعجاز صدیقی ایک بہترین فٹ بالر ہیں۔ علیمہ کو کھیل کے تئیں جذبہ ایک طرح سے ورثہ میں ملا ہے ۔

    کیرالہ میں ہونے والے نیشنل رائفل شوٹنگ مقابلوں کے لیے مہاراشٹر سے دس کھلاڑیوں کا انتخابات ہوا ہے ، جن میں علیمہ بھی شامل ہیں۔ علیمہ کے والد پروفیسر رفیق اعجاز صدیقی ایک بہترین فٹ بالر ہیں۔ علیمہ کو کھیل کے تئیں جذبہ ایک طرح سے ورثہ میں ملا ہے ۔

  • علمیہ کا بھی کہنا ہے کہ والدین ہی اس کی کامیابی کا پہلا زینہ ہیں ۔ نیشنل رائفلز ایسوسی ایشن آف انڈیا کی جانب سے کیرالہ میں جنوری کے پہلے ہفتہ میں قومی مقابلے ہونگے۔

    علمیہ کا بھی کہنا ہے کہ والدین ہی اس کی کامیابی کا پہلا زینہ ہیں ۔ نیشنل رائفلز ایسوسی ایشن آف انڈیا کی جانب سے کیرالہ میں جنوری کے پہلے ہفتہ میں قومی مقابلے ہونگے۔

  •  علیمہ صدیقی کودس میٹر رائفل شوٹنگ مقابلہ میں اپنے جوہردکھانے ہیں۔ علیمہ صدیقی اپنےہدف کولے کرپرعزم ہے۔ اولمپک میں شرکت اور ملک کے لئے گولڈ میڈل لانا علیمہ کا خواب ہے ۔ علیمہ صدیقی کے کوچ سنگرام دیشمکھ بھی علیمہ کے پرفارمنس کو لے کر  کافی پرامید ہیں۔

    علیمہ صدیقی کودس میٹر رائفل شوٹنگ مقابلہ میں اپنے جوہردکھانے ہیں۔ علیمہ صدیقی اپنےہدف کولے کرپرعزم ہے۔ اولمپک میں شرکت اور ملک کے لئے گولڈ میڈل لانا علیمہ کا خواب ہے ۔ علیمہ صدیقی کے کوچ سنگرام دیشمکھ بھی علیمہ کے پرفارمنس کو لے کر کافی پرامید ہیں۔

  •  خاندانی پس منظر، گھریلو ماحول  صالح اقدار اور  کردار سازی میں اہم رول ادا کرتے ہیں۔ ایسا ہی کچھ آزاد کالج کی ہونہار طالبہ علیمہ صدیقی کے ساتھ ہے ۔ بچپن میں دادا کے فوج میں بہادری کے قصےاور واقعات معصوم ذہن پر نقش ہوتے رہے۔
  • ہوش سنبھالا تو دادا محمد وقارالدین ہی آئیڈل قرار پائے۔ نتیجہ چھٹی جماعت میں ہی علیمہ نے رائفل سنبھال لی۔ والدین کی حوصلہ افزائی اور خوشگوار ماحول علیمہ کے لیے معاون ثابت ہوا ۔
  •  پروفیشنل ٹریننگ کے دوران کچھ دشواریاں بھی آئیں ، لیکن علیمہ کےعزم نے ان دشواریوں کو مات دی اور اسکولی مقابلوں سے لے کر قومی سطح کے مقابلوں کا سفر طے کیا ۔
  •  رائفل شوٹنگ ہی علیمہ صدیقی کا پیشن ہے۔ علیمہ نےاب تک پانچ مرتبہ اسٹیٹ لیول اورچارمرتبہ نیشنل لیول مقابلوں میں حصہ لیا ۔ اس مرتبہ پھرانہیں مہاراشٹر کی نمائندگی کا موقع ملا ہے۔
  •  کیرالہ میں ہونے والے نیشنل رائفل شوٹنگ مقابلوں کے لیے مہاراشٹر سے دس کھلاڑیوں کا انتخابات ہوا ہے ، جن میں علیمہ بھی شامل ہیں۔ علیمہ کے والد پروفیسر رفیق اعجاز صدیقی ایک بہترین فٹ بالر ہیں۔ علیمہ کو کھیل کے تئیں جذبہ ایک طرح سے ورثہ میں ملا ہے ۔
  • علمیہ کا بھی کہنا ہے کہ والدین ہی اس کی کامیابی کا پہلا زینہ ہیں ۔ نیشنل رائفلز ایسوسی ایشن آف انڈیا کی جانب سے کیرالہ میں جنوری کے پہلے ہفتہ میں قومی مقابلے ہونگے۔
  •  علیمہ صدیقی کودس میٹر رائفل شوٹنگ مقابلہ میں اپنے جوہردکھانے ہیں۔ علیمہ صدیقی اپنےہدف کولے کرپرعزم ہے۔ اولمپک میں شرکت اور ملک کے لئے گولڈ میڈل لانا علیمہ کا خواب ہے ۔ علیمہ صدیقی کے کوچ سنگرام دیشمکھ بھی علیمہ کے پرفارمنس کو لے کر  کافی پرامید ہیں۔

تازہ ترین تصاویر