بنگلورو میں روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو، دیکھنے کیلئے امنڈ رہی ہے لوگوں کی بھیڑ

May 08, 2017 10:22 PM IST
1 of 19
  • سلیکان سٹی بنگلورو میں بچوں کی سیر و تفریح کے لیے ایک نیا زو تیار کیا گیا ہے۔ ـ یہاں روبوٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے تیار کیے گئے جانور اصلی جانوروں کی طرح دکھائی دیتے ہیں ۔ـ جانوروں کو تحفظ فراہم کرنے سے متعلق عوام میں بیداری لانے کے لیے بنگلورو میں تیار یہ ’ انیمل کنگڈم ‘ نامی زو قابل ستائش ہے ، جس دیکھ کو بچے لطف اندوز ہورہے ہیں ـ

    سلیکان سٹی بنگلورو میں بچوں کی سیر و تفریح کے لیے ایک نیا زو تیار کیا گیا ہے۔ ـ یہاں روبوٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے تیار کیے گئے جانور اصلی جانوروں کی طرح دکھائی دیتے ہیں ۔ـ جانوروں کو تحفظ فراہم کرنے سے متعلق عوام میں بیداری لانے کے لیے بنگلورو میں تیار یہ ’ انیمل کنگڈم ‘ نامی زو قابل ستائش ہے ، جس دیکھ کو بچے لطف اندوز ہورہے ہیں ـ

  • بنگلورو کے سینٹ جانس ہائی اسکول گراؤنڈ میں انیمل کنگڈم نامی نیشنل کنزیومر فیئر کا انعقاد کیا گیا ۔

    بنگلورو کے سینٹ جانس ہائی اسکول گراؤنڈ میں انیمل کنگڈم نامی نیشنل کنزیومر فیئر کا انعقاد کیا گیا ۔

  •   معروف آرٹسٹ گوتم کی قیادت والی ٹیم نے ہاتھی، شیر، زیبرا، گوریلا، سانپ، ریچھ، مچھلیاں سمیت تقریباً 20 جانوروں کو تیار کیا ہے۔

    معروف آرٹسٹ گوتم کی قیادت والی ٹیم نے ہاتھی، شیر، زیبرا، گوریلا، سانپ، ریچھ، مچھلیاں سمیت تقریباً 20 جانوروں کو تیار کیا ہے۔

  •  روبوٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے تیار کیے گئے یہ جانوراصلی جانوروں کی طرح ہی دکھائی دیتے ہیں ۔

    روبوٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے تیار کیے گئے یہ جانوراصلی جانوروں کی طرح ہی دکھائی دیتے ہیں ۔

  • ـ جانوروں کے پیچھے اسپیکر نصب کیے گئے، جس کے سبب جانوروں کی آوازیں بھی سنائی دیتی ہیں ۔

    ـ جانوروں کے پیچھے اسپیکر نصب کیے گئے، جس کے سبب جانوروں کی آوازیں بھی سنائی دیتی ہیں ۔

  • ـ ان جانوروں کو دیکھ کر بچے خوب لطف اندوز ہورہے ہیں۔

    ـ ان جانوروں کو دیکھ کر بچے خوب لطف اندوز ہورہے ہیں۔

  •  پروگرام کے آرگنائزر گوتم کے مطابق کافی محنت کے بعد ان جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ، ـ جسے انیمل کنگڈم کا نام دیا گیا ہے۔

    پروگرام کے آرگنائزر گوتم کے مطابق کافی محنت کے بعد ان جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ، ـ جسے انیمل کنگڈم کا نام دیا گیا ہے۔

  •   اسپنج اورسلیکان پیسٹ کے استعمال سے جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ۔

    اسپنج اورسلیکان پیسٹ کے استعمال سے جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ۔

  • ـ ان جانوروں کو تیار کرنے کیلئے کم از کم 6 ماہ کا عرصہ لگا اور اس کے لیے تقریباً ایک کروڑ روپئے خرچ کیے گئے ہیں۔

    ـ ان جانوروں کو تیار کرنے کیلئے کم از کم 6 ماہ کا عرصہ لگا اور اس کے لیے تقریباً ایک کروڑ روپئے خرچ کیے گئے ہیں۔

  • سیاحوں خصوصاً بچوں نے بھی جانوروں کو دیکھ کر خوشی کا اظہار کیا ہے ۔

    سیاحوں خصوصاً بچوں نے بھی جانوروں کو دیکھ کر خوشی کا اظہار کیا ہے ۔

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

    روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

  • بنگلورو کے سینٹ جانس ہائی اسکول گراؤنڈ میں انیمل کنگڈم نامی نیشنل کنزیومر فیئر کا انعقاد کیا گیا ۔
  •   معروف آرٹسٹ گوتم کی قیادت والی ٹیم نے ہاتھی، شیر، زیبرا، گوریلا، سانپ، ریچھ، مچھلیاں سمیت تقریباً 20 جانوروں کو تیار کیا ہے۔
  •  روبوٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے تیار کیے گئے یہ جانوراصلی جانوروں کی طرح ہی دکھائی دیتے ہیں ۔
  • ـ جانوروں کے پیچھے اسپیکر نصب کیے گئے، جس کے سبب جانوروں کی آوازیں بھی سنائی دیتی ہیں ۔
  • ـ ان جانوروں کو دیکھ کر بچے خوب لطف اندوز ہورہے ہیں۔
  •  پروگرام کے آرگنائزر گوتم کے مطابق کافی محنت کے بعد ان جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ، ـ جسے انیمل کنگڈم کا نام دیا گیا ہے۔
  •   اسپنج اورسلیکان پیسٹ کے استعمال سے جانوروں کو تیار کیا گیا ہے ۔
  • ـ ان جانوروں کو تیار کرنے کیلئے کم از کم 6 ماہ کا عرصہ لگا اور اس کے لیے تقریباً ایک کروڑ روپئے خرچ کیے گئے ہیں۔
  • سیاحوں خصوصاً بچوں نے بھی جانوروں کو دیکھ کر خوشی کا اظہار کیا ہے ۔
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو
  • روبوٹ ٹیکنالوجی سے آراستہ انوکھا انیمل کنگڈم زو

تازہ ترین تصاویر