انتہائی جوش و خروش کے ساتھ مناتے ہیں شیواجی وید اپنے آنگن کے پودے کا یوم پیدائش

Jul 26, 2016 12:31 PM IST
1 of 6
  •  آپ نے انسانوں کا یوم پیدائش بڑے جوش و خروش کے ساتھ مناتے ہوئے ضرور دیکھا ہوگا لیکن کیا آپ نے کبھی کسی پودے کا یوم پیدائش مناتے ہوئے دیکھا یا سنا ہے۔ لیکن، ہاں ایک شخص ایسا بھی ہے جو ہر سال اپنے آنگن میں لگے نیم کے پودے کا یوم پیدائش اسی طرح مناتا ہے جس طرح کوئی ماں باپ اپنے بچوں کی سالگرہ مناتے ہیں۔

    آپ نے انسانوں کا یوم پیدائش بڑے جوش و خروش کے ساتھ مناتے ہوئے ضرور دیکھا ہوگا لیکن کیا آپ نے کبھی کسی پودے کا یوم پیدائش مناتے ہوئے دیکھا یا سنا ہے۔ لیکن، ہاں ایک شخص ایسا بھی ہے جو ہر سال اپنے آنگن میں لگے نیم کے پودے کا یوم پیدائش اسی طرح مناتا ہے جس طرح کوئی ماں باپ اپنے بچوں کی سالگرہ مناتے ہیں۔

  •  ودربھ میں قحط اور خشک سالی جیسی صورت حال  گزشتہ تین سالوں سے مسلسل جاری ہے۔ اس کی وجہ سے درخت سوکھ رہے ہیں اور ان کی تعداد میں کمی آ رہی ہے۔

    ودربھ میں قحط اور خشک سالی جیسی صورت حال گزشتہ تین سالوں سے مسلسل جاری ہے۔ اس کی وجہ سے درخت سوکھ رہے ہیں اور ان کی تعداد میں کمی آ رہی ہے۔

  •  شیواجی عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں اور اولاد کی طرح ان کی پرورش کریں تاکہ سوکھا اور پانی کی قلت جیسے حالات پیدا نہ ہوں۔

    شیواجی عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں اور اولاد کی طرح ان کی پرورش کریں تاکہ سوکھا اور پانی کی قلت جیسے حالات پیدا نہ ہوں۔

  • واشم ضلع کے جولکا گاؤں کے رہاشی شیواجی وید کے گھر جنم دن کی تیاریاں چل رہی ہیں لیکن یہ جنم دن کسی انسان کا نہیں بلکہ شیواجی کے گھر کے  آنگن میں لگے اس نیم کے پودے کا ہے ۔

    واشم ضلع کے جولکا گاؤں کے رہاشی شیواجی وید کے گھر جنم دن کی تیاریاں چل رہی ہیں لیکن یہ جنم دن کسی انسان کا نہیں بلکہ شیواجی کے گھر کے آنگن میں لگے اس نیم کے پودے کا ہے ۔

  •  آج یہ نیم کا پودا چار برس کا ہوچکا ہے اور ہر سال کی طرح اس سال بھی شیواجی کے گھر بڑے جوش و خروش کے ساتھ پودے کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے۔

    آج یہ نیم کا پودا چار برس کا ہوچکا ہے اور ہر سال کی طرح اس سال بھی شیواجی کے گھر بڑے جوش و خروش کے ساتھ پودے کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے۔

  •  پودے کے اس یوم پیدائش کے موقع پر روایت کے مطابق مہمانوں کو مدعو کیا گیا ہے اور کیک کاٹ کر اس پرمسرت موقع کو بڑے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا۔ شیواجی کہتے ہیں کہ درخت بھی اولاد کی طرح ہیں اور ان سے بھی اولاد کی طرح ہی محبت کی جانی چاہیے۔ اس لئے وہ ہر سال اس پودے کا یوم پیدائش مناتے ہیں۔ شیواجی وید کے درختوں کے تئیں اس پیار کی مختلف حلقوں سے خوب ستائش کی جارہی ہے۔ آج حکومت جہاں  سبز انقلاب اسکیم پر کروڑوں روپئے خرچ کررہی ہے باوجود اس کے عوام میں اس کو لیکر کوئی سنجیدگی یا بیداری نظر نہیں آتی۔  لیکن اگر انسان درختوں سے اس طرح کا رویہ اپنائیں  تو ملک میں واقعی سبز انقلاب برپا کیا جا سکتا ہے۔

    پودے کے اس یوم پیدائش کے موقع پر روایت کے مطابق مہمانوں کو مدعو کیا گیا ہے اور کیک کاٹ کر اس پرمسرت موقع کو بڑے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا۔ شیواجی کہتے ہیں کہ درخت بھی اولاد کی طرح ہیں اور ان سے بھی اولاد کی طرح ہی محبت کی جانی چاہیے۔ اس لئے وہ ہر سال اس پودے کا یوم پیدائش مناتے ہیں۔ شیواجی وید کے درختوں کے تئیں اس پیار کی مختلف حلقوں سے خوب ستائش کی جارہی ہے۔ آج حکومت جہاں سبز انقلاب اسکیم پر کروڑوں روپئے خرچ کررہی ہے باوجود اس کے عوام میں اس کو لیکر کوئی سنجیدگی یا بیداری نظر نہیں آتی۔ لیکن اگر انسان درختوں سے اس طرح کا رویہ اپنائیں تو ملک میں واقعی سبز انقلاب برپا کیا جا سکتا ہے۔

  •  ودربھ میں قحط اور خشک سالی جیسی صورت حال  گزشتہ تین سالوں سے مسلسل جاری ہے۔ اس کی وجہ سے درخت سوکھ رہے ہیں اور ان کی تعداد میں کمی آ رہی ہے۔
  •  شیواجی عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں اور اولاد کی طرح ان کی پرورش کریں تاکہ سوکھا اور پانی کی قلت جیسے حالات پیدا نہ ہوں۔
  • واشم ضلع کے جولکا گاؤں کے رہاشی شیواجی وید کے گھر جنم دن کی تیاریاں چل رہی ہیں لیکن یہ جنم دن کسی انسان کا نہیں بلکہ شیواجی کے گھر کے  آنگن میں لگے اس نیم کے پودے کا ہے ۔
  •  آج یہ نیم کا پودا چار برس کا ہوچکا ہے اور ہر سال کی طرح اس سال بھی شیواجی کے گھر بڑے جوش و خروش کے ساتھ پودے کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے۔
  •  پودے کے اس یوم پیدائش کے موقع پر روایت کے مطابق مہمانوں کو مدعو کیا گیا ہے اور کیک کاٹ کر اس پرمسرت موقع کو بڑے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا۔ شیواجی کہتے ہیں کہ درخت بھی اولاد کی طرح ہیں اور ان سے بھی اولاد کی طرح ہی محبت کی جانی چاہیے۔ اس لئے وہ ہر سال اس پودے کا یوم پیدائش مناتے ہیں۔ شیواجی وید کے درختوں کے تئیں اس پیار کی مختلف حلقوں سے خوب ستائش کی جارہی ہے۔ آج حکومت جہاں  سبز انقلاب اسکیم پر کروڑوں روپئے خرچ کررہی ہے باوجود اس کے عوام میں اس کو لیکر کوئی سنجیدگی یا بیداری نظر نہیں آتی۔  لیکن اگر انسان درختوں سے اس طرح کا رویہ اپنائیں  تو ملک میں واقعی سبز انقلاب برپا کیا جا سکتا ہے۔

تازہ ترین تصاویر