زوردار دھماکے کے ساتھ 155 فٹ دھنس گئی زمین ، ببلو خان اپنے 10 سالہ بیٹے کے ساتھ ہوگئے زمیں دوز

May 25, 2017 11:16 PM IST
1 of 9
  • جھارکھنڈ میں ایک دردناک حادثہ پیش آیا ہے ۔ حادثہ میں ایک شخص اپنے بیٹے کے ساتھ اچانک زمین دوز ہوگیا ۔ حادثہ کے بعد بچائو کی تمام کوششیں ناکام ہو گئیں ۔ متاثرہ خاندان کا رو رو کر برا حال ہے۔ وزیر اعلی رگھوور داس نے حادثہ پر گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے مہلوکین کے اہل خانہ کو چار لاکھ روپے کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

    جھارکھنڈ میں ایک دردناک حادثہ پیش آیا ہے ۔ حادثہ میں ایک شخص اپنے بیٹے کے ساتھ اچانک زمین دوز ہوگیا ۔ حادثہ کے بعد بچائو کی تمام کوششیں ناکام ہو گئیں ۔ متاثرہ خاندان کا رو رو کر برا حال ہے۔ وزیر اعلی رگھوور داس نے حادثہ پر گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے مہلوکین کے اہل خانہ کو چار لاکھ روپے کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

  • حکومت کے ساتھ ساتھ بی سی سی ایل کے ذریعہ بھی ایک لاکھ روپے کی امداد دی گئی ہے۔ جبکہ حادثہ سے مشتعل علاقہ کے لوگ دوبارہ ایسے حادثات سے تحفظ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

    حکومت کے ساتھ ساتھ بی سی سی ایل کے ذریعہ بھی ایک لاکھ روپے کی امداد دی گئی ہے۔ جبکہ حادثہ سے مشتعل علاقہ کے لوگ دوبارہ ایسے حادثات سے تحفظ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

  • دھنباد کے جھریا نامی مقام میں 40 سالہ ببلو خان اپنے دس سالہ بیٹے رحیم کے ساتھ معمول کے مطابق صبح سات بجے چائے پینے بازار پہنچا، لیکن انہیں نہیں معلوم تھا کہ موت ان کے قدموں کے نیچے انتظار کر رہی ہے۔

    دھنباد کے جھریا نامی مقام میں 40 سالہ ببلو خان اپنے دس سالہ بیٹے رحیم کے ساتھ معمول کے مطابق صبح سات بجے چائے پینے بازار پہنچا، لیکن انہیں نہیں معلوم تھا کہ موت ان کے قدموں کے نیچے انتظار کر رہی ہے۔

  • ببلو خان کو اچانک اپنے بیٹے کی چیخ کی آواز سنائی دی ۔انہوں نے مڑ کر دیکھا کہ رحیم قدموں کے نیچے ایک دھماکہ سے بنے گڑھے میں گرتا جا رہا ہے ۔  باپ بھی اپنے لخت جگر کی لپکا اور اس کو بچانے کی کوشش کی ، لیکن وہ خود بھی اس گڑھے میں سما گیا ۔

    ببلو خان کو اچانک اپنے بیٹے کی چیخ کی آواز سنائی دی ۔انہوں نے مڑ کر دیکھا کہ رحیم قدموں کے نیچے ایک دھماکہ سے بنے گڑھے میں گرتا جا رہا ہے ۔ باپ بھی اپنے لخت جگر کی لپکا اور اس کو بچانے کی کوشش کی ، لیکن وہ خود بھی اس گڑھے میں سما گیا ۔

  •  پھر کیا تھا پورے علاقے میں کہرام مچ گیا ۔ موقع واردات پر لوگوں کا ہجوم امنڈ پڑا ۔ گھنٹوں تاخیر سے راحت بچائو کا کام شروع ہوا ، لیکن تمام کوششیں ناکام ہو گئیں ۔ شام ہوتے ہی ریسکیو آپریشن بند کردیا گیا ۔

    پھر کیا تھا پورے علاقے میں کہرام مچ گیا ۔ موقع واردات پر لوگوں کا ہجوم امنڈ پڑا ۔ گھنٹوں تاخیر سے راحت بچائو کا کام شروع ہوا ، لیکن تمام کوششیں ناکام ہو گئیں ۔ شام ہوتے ہی ریسکیو آپریشن بند کردیا گیا ۔

  • دوسرے دن رانچی سے این ڈی آر ایف کی ٹیم کو لگایا گیا ، لیکن تقریبا 82  ڈگری درجہ حرارت ہونے کی وجہ کر امدادی کارکنوں نے ہاتھ کھڑے کر دیئے ۔

    دوسرے دن رانچی سے این ڈی آر ایف کی ٹیم کو لگایا گیا ، لیکن تقریبا 82 ڈگری درجہ حرارت ہونے کی وجہ کر امدادی کارکنوں نے ہاتھ کھڑے کر دیئے ۔

  • واضح رہے کہ جھریا کا علاقہ کوئلہ پر مشتمل ہے ۔ یہاں بی سی سی ایل کے کوئلہ کان ہیں ۔ یہاں زمین کے اندر کئی دہائیوں سے آگ جل رہی ہے ۔ زمین کا دھنسنا اور آگ کا نکلنا یہاں عام بات ہے ، جس کی وجہ سے اس علاقہ کو ڈینجر زون قرار دیا گیا ہے ۔

    واضح رہے کہ جھریا کا علاقہ کوئلہ پر مشتمل ہے ۔ یہاں بی سی سی ایل کے کوئلہ کان ہیں ۔ یہاں زمین کے اندر کئی دہائیوں سے آگ جل رہی ہے ۔ زمین کا دھنسنا اور آگ کا نکلنا یہاں عام بات ہے ، جس کی وجہ سے اس علاقہ کو ڈینجر زون قرار دیا گیا ہے ۔

  • تاہم بچائو ٹیم کے مطابق تقریباً 155 فٹ نیچے تک زمین دھنس گئی ہے ۔ ایسے میں دونوں لاشوں کے وجود کا بھی امکان نہیں ہے۔

    تاہم بچائو ٹیم کے مطابق تقریباً 155 فٹ نیچے تک زمین دھنس گئی ہے ۔ ایسے میں دونوں لاشوں کے وجود کا بھی امکان نہیں ہے۔

  • تاہم مہلوکین کے رشتہ دار مہلوک ببلو خان کی اہلیہ کو سرکاری ملازمت کے ساتھ ساتھ مناسب معاوضہ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔(رپورٹ : نوشاد عالم )۔

    تاہم مہلوکین کے رشتہ دار مہلوک ببلو خان کی اہلیہ کو سرکاری ملازمت کے ساتھ ساتھ مناسب معاوضہ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔(رپورٹ : نوشاد عالم )۔

  • حکومت کے ساتھ ساتھ بی سی سی ایل کے ذریعہ بھی ایک لاکھ روپے کی امداد دی گئی ہے۔ جبکہ حادثہ سے مشتعل علاقہ کے لوگ دوبارہ ایسے حادثات سے تحفظ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔
  • دھنباد کے جھریا نامی مقام میں 40 سالہ ببلو خان اپنے دس سالہ بیٹے رحیم کے ساتھ معمول کے مطابق صبح سات بجے چائے پینے بازار پہنچا، لیکن انہیں نہیں معلوم تھا کہ موت ان کے قدموں کے نیچے انتظار کر رہی ہے۔
  • ببلو خان کو اچانک اپنے بیٹے کی چیخ کی آواز سنائی دی ۔انہوں نے مڑ کر دیکھا کہ رحیم قدموں کے نیچے ایک دھماکہ سے بنے گڑھے میں گرتا جا رہا ہے ۔  باپ بھی اپنے لخت جگر کی لپکا اور اس کو بچانے کی کوشش کی ، لیکن وہ خود بھی اس گڑھے میں سما گیا ۔
  •  پھر کیا تھا پورے علاقے میں کہرام مچ گیا ۔ موقع واردات پر لوگوں کا ہجوم امنڈ پڑا ۔ گھنٹوں تاخیر سے راحت بچائو کا کام شروع ہوا ، لیکن تمام کوششیں ناکام ہو گئیں ۔ شام ہوتے ہی ریسکیو آپریشن بند کردیا گیا ۔
  • دوسرے دن رانچی سے این ڈی آر ایف کی ٹیم کو لگایا گیا ، لیکن تقریبا 82  ڈگری درجہ حرارت ہونے کی وجہ کر امدادی کارکنوں نے ہاتھ کھڑے کر دیئے ۔
  • واضح رہے کہ جھریا کا علاقہ کوئلہ پر مشتمل ہے ۔ یہاں بی سی سی ایل کے کوئلہ کان ہیں ۔ یہاں زمین کے اندر کئی دہائیوں سے آگ جل رہی ہے ۔ زمین کا دھنسنا اور آگ کا نکلنا یہاں عام بات ہے ، جس کی وجہ سے اس علاقہ کو ڈینجر زون قرار دیا گیا ہے ۔
  • تاہم بچائو ٹیم کے مطابق تقریباً 155 فٹ نیچے تک زمین دھنس گئی ہے ۔ ایسے میں دونوں لاشوں کے وجود کا بھی امکان نہیں ہے۔
  • تاہم مہلوکین کے رشتہ دار مہلوک ببلو خان کی اہلیہ کو سرکاری ملازمت کے ساتھ ساتھ مناسب معاوضہ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔(رپورٹ : نوشاد عالم )۔

تازہ ترین تصاویر