کشمیر میں سردی کی گرفت مزید سخت، سری نگر میں سرد ترین رات ریکارڈ، معمولات زندگی درہم برہم

Jan 14, 2017 06:38 PM IST
1 of 6
  • وادی کشمیر میں سردی کی گرفت مزید سخت ہوگئی ہے جس کے باعث معمولات زندگی بری طرح سے متاثر ہورہے ہیں۔ گرمائی دارالحکومت سری نگر میں جمعہ اور ہفتہ کی درمیان شب رواں موسم میں اب تک کی سرد ترین رات ثابت ہوئی جس دوران کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ دوسری جانب خطہ لداخ کے لیہہ اور کرگل میں بھی سردی کا قہر بدستور جاری ہے جہاں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 17 ڈگری اور منفی 15 اعشاریہ 6 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

    وادی کشمیر میں سردی کی گرفت مزید سخت ہوگئی ہے جس کے باعث معمولات زندگی بری طرح سے متاثر ہورہے ہیں۔ گرمائی دارالحکومت سری نگر میں جمعہ اور ہفتہ کی درمیان شب رواں موسم میں اب تک کی سرد ترین رات ثابت ہوئی جس دوران کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ دوسری جانب خطہ لداخ کے لیہہ اور کرگل میں بھی سردی کا قہر بدستور جاری ہے جہاں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 17 ڈگری اور منفی 15 اعشاریہ 6 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

  • محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا کہ ’بحیرہ عرب سے اٹھنے والی ہوائیں براستہ افغانستان و پاکستان خطہ میں داخل ہوچکی ہیں۔ یہ ہوائیں وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بارش یا برف باری کا سبب بن سکتی ہیں‘۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے بعد آنے والے 48 گھنٹوں کے دوران بھی وادی میں بارش یا برف باری کا سلسلہ جاری رہ سکتا ہے۔

    محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا کہ ’بحیرہ عرب سے اٹھنے والی ہوائیں براستہ افغانستان و پاکستان خطہ میں داخل ہوچکی ہیں۔ یہ ہوائیں وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بارش یا برف باری کا سبب بن سکتی ہیں‘۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے بعد آنے والے 48 گھنٹوں کے دوران بھی وادی میں بارش یا برف باری کا سلسلہ جاری رہ سکتا ہے۔

  • وادی میں ہفتہ کو بیشتر آبی ذخائر، پینے کے پانی کی لائنیں اور کھلی ڈرینیں منجمد پائی گئیں۔ پانی کی لائنیں منجمد ہوجانے کے باعث بیشتر علاقوں میں پانی کی سپلائی متاثر ہوگئی ہے جبکہ ہفتہ کی صبح ایک بار پھر لوگوں کو پانی کے نلوں کے سامنے آگ جلاکر جما ہوا پانی پگھلانے کی کوشش کرتے ہوئے دیکھا گیا۔

    وادی میں ہفتہ کو بیشتر آبی ذخائر، پینے کے پانی کی لائنیں اور کھلی ڈرینیں منجمد پائی گئیں۔ پانی کی لائنیں منجمد ہوجانے کے باعث بیشتر علاقوں میں پانی کی سپلائی متاثر ہوگئی ہے جبکہ ہفتہ کی صبح ایک بار پھر لوگوں کو پانی کے نلوں کے سامنے آگ جلاکر جما ہوا پانی پگھلانے کی کوشش کرتے ہوئے دیکھا گیا۔

  • سری نگر میں واقع شہرہ آفاق ڈل جھیل کو ایک بار پھر جزوی طور پر منجمد پایا گیا۔ سری نگر میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ سری نگر میں اس سے قبل سرد ترین رات 21 دسمبر کو ریکارڈ کی گئی تھی جب یہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 5 ڈگری ریکارڈ کیا گیا تھا۔

    سری نگر میں واقع شہرہ آفاق ڈل جھیل کو ایک بار پھر جزوی طور پر منجمد پایا گیا۔ سری نگر میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ سری نگر میں اس سے قبل سرد ترین رات 21 دسمبر کو ریکارڈ کی گئی تھی جب یہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 5 ڈگری ریکارڈ کیا گیا تھا۔

  •  شمالی کشمیر میں واقع شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارڈ کی گئی جب وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 14 اعشاریہ 4 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

    شمالی کشمیر میں واقع شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارڈ کی گئی جب وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 14 اعشاریہ 4 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

  • جنوبی کشمیر میں واقع مشہور سیاحتی مقامات پہل گام اور ککر ناگ میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 12 ڈگری اور منفی 8 اعشاریہ 3 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ شمالی کشمیر کے کپواڑہ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارد کی گئی جس دوران وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 7 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

    جنوبی کشمیر میں واقع مشہور سیاحتی مقامات پہل گام اور ککر ناگ میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 12 ڈگری اور منفی 8 اعشاریہ 3 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ شمالی کشمیر کے کپواڑہ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارد کی گئی جس دوران وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 7 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

  • محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا کہ ’بحیرہ عرب سے اٹھنے والی ہوائیں براستہ افغانستان و پاکستان خطہ میں داخل ہوچکی ہیں۔ یہ ہوائیں وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بارش یا برف باری کا سبب بن سکتی ہیں‘۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے بعد آنے والے 48 گھنٹوں کے دوران بھی وادی میں بارش یا برف باری کا سلسلہ جاری رہ سکتا ہے۔
  • وادی میں ہفتہ کو بیشتر آبی ذخائر، پینے کے پانی کی لائنیں اور کھلی ڈرینیں منجمد پائی گئیں۔ پانی کی لائنیں منجمد ہوجانے کے باعث بیشتر علاقوں میں پانی کی سپلائی متاثر ہوگئی ہے جبکہ ہفتہ کی صبح ایک بار پھر لوگوں کو پانی کے نلوں کے سامنے آگ جلاکر جما ہوا پانی پگھلانے کی کوشش کرتے ہوئے دیکھا گیا۔
  • سری نگر میں واقع شہرہ آفاق ڈل جھیل کو ایک بار پھر جزوی طور پر منجمد پایا گیا۔ سری نگر میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ سری نگر میں اس سے قبل سرد ترین رات 21 دسمبر کو ریکارڈ کی گئی تھی جب یہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 6 اعشاریہ 5 ڈگری ریکارڈ کیا گیا تھا۔
  •  شمالی کشمیر میں واقع شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارڈ کی گئی جب وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 14 اعشاریہ 4 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔
  • جنوبی کشمیر میں واقع مشہور سیاحتی مقامات پہل گام اور ککر ناگ میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 12 ڈگری اور منفی 8 اعشاریہ 3 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ شمالی کشمیر کے کپواڑہ میں بھی گذشتہ رات رواں موسم کی سرد ترین رات ریکارد کی گئی جس دوران وہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 7 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

تازہ ترین تصاویر