سہارنپور میں تشدد کی خلاف میں جنتر منتر پر ہزاروں دلتوں کا احتجاج ، یوگی حکومت کے خلاف نعری بازی

May 21, 2017 06:32 PM IST
1 of 8
  • سہارنپور کے تشدد میں دلتوں کو نشانہ بنائے جانے کی مخالفت میں آج یہاں جنتر منتر پر دلت تنظیم بھیم سینا کے ہزاروں کارکنوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے اترپردیش کی یوگی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔

    سہارنپور کے تشدد میں دلتوں کو نشانہ بنائے جانے کی مخالفت میں آج یہاں جنتر منتر پر دلت تنظیم بھیم سینا کے ہزاروں کارکنوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے اترپردیش کی یوگی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔

  • اس مظاہرے میں دلت برادری کے ملک بھر سے آئے پانچ ہزار سے زیادہ لوگ شامل ہوئے۔ کئی دیگر تنظیمیں بھی بھیم سینا کی حمایت میں مظاہرہ میں شامل ہوئیں۔ صبح سے ہی ہزاروں کی تعداد میں ملک بھر سے لوگ جنتر منتر پر جمع ہونے لگے تھے۔

    اس مظاہرے میں دلت برادری کے ملک بھر سے آئے پانچ ہزار سے زیادہ لوگ شامل ہوئے۔ کئی دیگر تنظیمیں بھی بھیم سینا کی حمایت میں مظاہرہ میں شامل ہوئیں۔ صبح سے ہی ہزاروں کی تعداد میں ملک بھر سے لوگ جنتر منتر پر جمع ہونے لگے تھے۔

  • سہارنپور تشدد کے بعد بھیم آرمی کے سربراہ چندر شیکھر آزاد پر پولیس نے مقدمہ درج کردیا تھا۔ مظاہرین نے آزاد پر سے مقدمہ ہٹانے اور دلتوں کو انصاف دلانے کا مطالبہ کرتے ہوئے جم کر نعرے بازی کی۔

    سہارنپور تشدد کے بعد بھیم آرمی کے سربراہ چندر شیکھر آزاد پر پولیس نے مقدمہ درج کردیا تھا۔ مظاہرین نے آزاد پر سے مقدمہ ہٹانے اور دلتوں کو انصاف دلانے کا مطالبہ کرتے ہوئے جم کر نعرے بازی کی۔

  • چندر شیکھر آزاد نے اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سہارنپور میں دلتوں پر مظالم کئے گئے، ان کے گھر جلائے گئے۔ لوٹ پاٹ کی گئی لیکن پولیس خاموش تماشائی بنی رہی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پولیس اور انتظامیہ دونوں ملے ہوئے ہیں۔

    چندر شیکھر آزاد نے اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سہارنپور میں دلتوں پر مظالم کئے گئے، ان کے گھر جلائے گئے۔ لوٹ پاٹ کی گئی لیکن پولیس خاموش تماشائی بنی رہی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پولیس اور انتظامیہ دونوں ملے ہوئے ہیں۔

  • یہ پوچھے جانے پر کہ سہارنپور تشدد کے معاملے میں بھیم سینا کے کارکنوں اور خود ان کے خلاف معاملہ درج کیا گیا ہے، تو چندر شیکھر نے کہاکہ سارا معاملہ جھوٹا ہے۔ایک خاص برادری کے لوگوں کو بچانے کیلئے یہ سب کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر بھیم سینا قصوروار ہے تو اس کے خلاف پولیس ثبوت لاکر دکھائے ۔

    یہ پوچھے جانے پر کہ سہارنپور تشدد کے معاملے میں بھیم سینا کے کارکنوں اور خود ان کے خلاف معاملہ درج کیا گیا ہے، تو چندر شیکھر نے کہاکہ سارا معاملہ جھوٹا ہے۔ایک خاص برادری کے لوگوں کو بچانے کیلئے یہ سب کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر بھیم سینا قصوروار ہے تو اس کے خلاف پولیس ثبوت لاکر دکھائے ۔

  • بھیم سینا کے ایک کارکن نے کہا ’یوگی اور مودی حکومت دونوں میں سے کسی کو بھی دلتوں کا خیال نہیں ہے۔ یہ لوگ دلتوں کی ترقی پر تقریر کرتے گھومتے رہتے ہیں لیکن انکا اصلی چہرہ اب سامنے آ رہا ہے۔ لیکن ہم لوگ بھی خاموش بیٹھنے والے نہیں ہیں۔ اپنے حق کی لڑائی پوری طاقت سے لڑیں گے۔

    بھیم سینا کے ایک کارکن نے کہا ’یوگی اور مودی حکومت دونوں میں سے کسی کو بھی دلتوں کا خیال نہیں ہے۔ یہ لوگ دلتوں کی ترقی پر تقریر کرتے گھومتے رہتے ہیں لیکن انکا اصلی چہرہ اب سامنے آ رہا ہے۔ لیکن ہم لوگ بھی خاموش بیٹھنے والے نہیں ہیں۔ اپنے حق کی لڑائی پوری طاقت سے لڑیں گے۔

  • بھیم آرمی نے جنتر۔منتر پر مظاہرہ میں شامل ہونے کی اپیل سوشل میڈیا کے ذریعہ کیا تھا۔ مظاہرہ کے مقام تک پہنچنے کی معلومات بھی سوشل میڈیا پر فراہم کرائی گئی تھی۔

    بھیم آرمی نے جنتر۔منتر پر مظاہرہ میں شامل ہونے کی اپیل سوشل میڈیا کے ذریعہ کیا تھا۔ مظاہرہ کے مقام تک پہنچنے کی معلومات بھی سوشل میڈیا پر فراہم کرائی گئی تھی۔

  • اس کے ساتھ ہی چندر شیکھر نے ایک ویڈیو پیغام جاری کرکے تمام وکلاء اور بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کے نظریات میں یقین رکھنے والوں کو اس ریلی میں شامل ہونے کی دعوت دی تھی۔ مظاہرین کی بڑی تعداد کے پیش نظر جنتر منتر اور آس پاس کے علاقوں میں سیکورٹی کے وسیع بندوبست کئے گئے تھے۔

    اس کے ساتھ ہی چندر شیکھر نے ایک ویڈیو پیغام جاری کرکے تمام وکلاء اور بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کے نظریات میں یقین رکھنے والوں کو اس ریلی میں شامل ہونے کی دعوت دی تھی۔ مظاہرین کی بڑی تعداد کے پیش نظر جنتر منتر اور آس پاس کے علاقوں میں سیکورٹی کے وسیع بندوبست کئے گئے تھے۔

  • اس مظاہرے میں دلت برادری کے ملک بھر سے آئے پانچ ہزار سے زیادہ لوگ شامل ہوئے۔ کئی دیگر تنظیمیں بھی بھیم سینا کی حمایت میں مظاہرہ میں شامل ہوئیں۔ صبح سے ہی ہزاروں کی تعداد میں ملک بھر سے لوگ جنتر منتر پر جمع ہونے لگے تھے۔
  • سہارنپور تشدد کے بعد بھیم آرمی کے سربراہ چندر شیکھر آزاد پر پولیس نے مقدمہ درج کردیا تھا۔ مظاہرین نے آزاد پر سے مقدمہ ہٹانے اور دلتوں کو انصاف دلانے کا مطالبہ کرتے ہوئے جم کر نعرے بازی کی۔
  • چندر شیکھر آزاد نے اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سہارنپور میں دلتوں پر مظالم کئے گئے، ان کے گھر جلائے گئے۔ لوٹ پاٹ کی گئی لیکن پولیس خاموش تماشائی بنی رہی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پولیس اور انتظامیہ دونوں ملے ہوئے ہیں۔
  • یہ پوچھے جانے پر کہ سہارنپور تشدد کے معاملے میں بھیم سینا کے کارکنوں اور خود ان کے خلاف معاملہ درج کیا گیا ہے، تو چندر شیکھر نے کہاکہ سارا معاملہ جھوٹا ہے۔ایک خاص برادری کے لوگوں کو بچانے کیلئے یہ سب کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر بھیم سینا قصوروار ہے تو اس کے خلاف پولیس ثبوت لاکر دکھائے ۔
  • بھیم سینا کے ایک کارکن نے کہا ’یوگی اور مودی حکومت دونوں میں سے کسی کو بھی دلتوں کا خیال نہیں ہے۔ یہ لوگ دلتوں کی ترقی پر تقریر کرتے گھومتے رہتے ہیں لیکن انکا اصلی چہرہ اب سامنے آ رہا ہے۔ لیکن ہم لوگ بھی خاموش بیٹھنے والے نہیں ہیں۔ اپنے حق کی لڑائی پوری طاقت سے لڑیں گے۔
  • بھیم آرمی نے جنتر۔منتر پر مظاہرہ میں شامل ہونے کی اپیل سوشل میڈیا کے ذریعہ کیا تھا۔ مظاہرہ کے مقام تک پہنچنے کی معلومات بھی سوشل میڈیا پر فراہم کرائی گئی تھی۔
  • اس کے ساتھ ہی چندر شیکھر نے ایک ویڈیو پیغام جاری کرکے تمام وکلاء اور بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کے نظریات میں یقین رکھنے والوں کو اس ریلی میں شامل ہونے کی دعوت دی تھی۔ مظاہرین کی بڑی تعداد کے پیش نظر جنتر منتر اور آس پاس کے علاقوں میں سیکورٹی کے وسیع بندوبست کئے گئے تھے۔

تازہ ترین تصاویر