مہاتما گاندھی کو آخری وداعی دینےامنڈ پڑا تھا پورا ملک، آخری وقت تک ہاتھ جوڑے کھڑے تھے بچے

Jan 30, 2019 06:42 PM IST
1 of 9
  • مشہورفرانسیسی فوٹوگرافرآنری کارتیے بریسوں 30 جنوری 1948 کو دہلی میں ہی تھے، جب آزادی کے محض پانچ ماہ بعد ہی مہاتما گاندھی کا گولی مارکرقتل کردیا گیا تھا۔ تاریخ کا وہ سیاہ باب آنری کارتیے بریسوں کے کیمرے میں قید ہوگیا۔ حالانکہ اس کے پہلے انہوں نے مہاتما گاندھی کی بھی کئی ساری تاریخی تصویریں لی تھیں۔چرخا چلاتے گاندھی، اخبارپڑھتے گاندھی، عوام کوخطاب کرتے گاندھی اورلاٹھی لے کرچلتے گاندھی، لیکن آج گاندھی کی برسی پردیکھئے بریسوں کی وہ تصویریں جو انہوں نے مہا تما گاندھی کے قتل کے بعد کھینچی تھیں۔ گاندھی جی کی لاش سے لے کرآخری وداعی، آخری درشن (دیدار) اورتدفین تک کی تصویریں ہیں۔گاندھی جی کو آخری وداعی دینے کے لئے جیسے پورا ملک امنڈ پڑا تھا اورسیلاب کی مانند نظرآرہا تھا۔

    مشہورفرانسیسی فوٹوگرافرآنری کارتیے بریسوں 30 جنوری 1948 کو دہلی میں ہی تھے، جب آزادی کے محض پانچ ماہ بعد ہی مہاتما گاندھی کا گولی مارکرقتل کردیا گیا تھا۔ تاریخ کا وہ سیاہ باب آنری کارتیے بریسوں کے کیمرے میں قید ہوگیا۔ حالانکہ اس کے پہلے انہوں نے مہاتما گاندھی کی بھی کئی ساری تاریخی تصویریں لی تھیں۔چرخا چلاتے گاندھی، اخبارپڑھتے گاندھی، عوام کوخطاب کرتے گاندھی اورلاٹھی لے کرچلتے گاندھی، لیکن آج گاندھی کی برسی پردیکھئے بریسوں کی وہ تصویریں جو انہوں نے مہا تما گاندھی کے قتل کے بعد کھینچی تھیں۔ گاندھی جی کی لاش سے لے کرآخری وداعی، آخری درشن (دیدار) اورتدفین تک کی تصویریں ہیں۔گاندھی جی کو آخری وداعی دینے کے لئے جیسے پورا ملک امنڈ پڑا تھا اورسیلاب کی مانند نظرآرہا تھا۔

  • پنچتتو میں ولین مہاتما، جن کے بارے میں کبھی آئنسٹن نے کہا تھا کہ آنے والی نسلیں حیرانی ظاہرکریں گی کہ ہڈی اورگوشت کا ایسا کوئی شخص کبھی اس زمین پرچلا تھا۔

    پنچتتو میں ولین مہاتما، جن کے بارے میں کبھی آئنسٹن نے کہا تھا کہ آنے والی نسلیں حیرانی ظاہرکریں گی کہ ہڈی اورگوشت کا ایسا کوئی شخص کبھی اس زمین پرچلا تھا۔

  • نم آنکھوں سے گاندھی جی کوآخری وداعی۔ ایسا لگ رہاتھا جیسے لاکھوں آنکھیں کہہ رہی تھیں کہ یہ کیسی آزادی آئی۔ ملک توآزاد ہوگیا، لیکن باپوکو ہم سے دورکردیا۔

    نم آنکھوں سے گاندھی جی کوآخری وداعی۔ ایسا لگ رہاتھا جیسے لاکھوں آنکھیں کہہ رہی تھیں کہ یہ کیسی آزادی آئی۔ ملک توآزاد ہوگیا، لیکن باپوکو ہم سے دورکردیا۔

  • مہاتما گاندھی کی آخری وداعی میں عوامی سیلاب امنڈ آیا۔

    مہاتما گاندھی کی آخری وداعی میں عوامی سیلاب امنڈ آیا۔

  • زمین سے منسلک ایسا لیڈراس ملک نے نہ پہلےنہ بعد میں کبھی دیکھا۔ اس دن جیسے پورا ملک ہی گہری اداسی میں ڈوب گیا تھا، جس دن باپوکو گولی لگی تھی۔

    زمین سے منسلک ایسا لیڈراس ملک نے نہ پہلےنہ بعد میں کبھی دیکھا۔ اس دن جیسے پورا ملک ہی گہری اداسی میں ڈوب گیا تھا، جس دن باپوکو گولی لگی تھی۔

  • الوداع باپو۔ انہیں یوں ہی نہیں کہتے تھے بابائے قوم۔ اس دن پورا ملک ایسے رویا، جیسے یقیناً سرسے والد کا سایہ اٹھ گیا ہو۔

    الوداع باپو۔ انہیں یوں ہی نہیں کہتے تھے بابائے قوم۔ اس دن پورا ملک ایسے رویا، جیسے یقیناً سرسے والد کا سایہ اٹھ گیا ہو۔

  • زمین پرپاوں رکھنے کی جگہ نہیں رہی تولوگ پیڑوں پرچڑھ گئے۔

    زمین پرپاوں رکھنے کی جگہ نہیں رہی تولوگ پیڑوں پرچڑھ گئے۔

  • نم آنکھوں سے مہاتما گاندھی کو آخری الوداع کہتے ملک کے پہلے وزیراعظم پنڈت جواہرلال نہرو۔

    نم آنکھوں سے مہاتما گاندھی کو آخری الوداع کہتے ملک کے پہلے وزیراعظم پنڈت جواہرلال نہرو۔

  • خواجہ قطب الدین بختیارکاکی درگاہ، مہرولی، دہلی میں گاندھی جی۔ ہندو مسلم فسادات کے بعد یہ گاندھی جی کا آخری عوامی پروگرام تھا۔

    خواجہ قطب الدین بختیارکاکی درگاہ، مہرولی، دہلی میں گاندھی جی۔ ہندو مسلم فسادات کے بعد یہ گاندھی جی کا آخری عوامی پروگرام تھا۔

  • پنچتتو میں ولین مہاتما، جن کے بارے میں کبھی آئنسٹن نے کہا تھا کہ آنے والی نسلیں حیرانی ظاہرکریں گی کہ ہڈی اورگوشت کا ایسا کوئی شخص کبھی اس زمین پرچلا تھا۔
  • نم آنکھوں سے گاندھی جی کوآخری وداعی۔ ایسا لگ رہاتھا جیسے لاکھوں آنکھیں کہہ رہی تھیں کہ یہ کیسی آزادی آئی۔ ملک توآزاد ہوگیا، لیکن باپوکو ہم سے دورکردیا۔
  • مہاتما گاندھی کی آخری وداعی میں عوامی سیلاب امنڈ آیا۔
  • زمین سے منسلک ایسا لیڈراس ملک نے نہ پہلےنہ بعد میں کبھی دیکھا۔ اس دن جیسے پورا ملک ہی گہری اداسی میں ڈوب گیا تھا، جس دن باپوکو گولی لگی تھی۔
  • الوداع باپو۔ انہیں یوں ہی نہیں کہتے تھے بابائے قوم۔ اس دن پورا ملک ایسے رویا، جیسے یقیناً سرسے والد کا سایہ اٹھ گیا ہو۔
  • زمین پرپاوں رکھنے کی جگہ نہیں رہی تولوگ پیڑوں پرچڑھ گئے۔
  • نم آنکھوں سے مہاتما گاندھی کو آخری الوداع کہتے ملک کے پہلے وزیراعظم پنڈت جواہرلال نہرو۔
  • خواجہ قطب الدین بختیارکاکی درگاہ، مہرولی، دہلی میں گاندھی جی۔ ہندو مسلم فسادات کے بعد یہ گاندھی جی کا آخری عوامی پروگرام تھا۔

تازہ ترین تصاویر