نوٹ بندی کا اثر ، کئی مدارس ومکاتب بند ہونے کی کگار پر، یتیم خانے بھی بری طرح متاثر

Jan 12, 2017 07:20 PM IST
1 of 6
  • نوٹ بندی کے اثرات یوں تو ملک کے تمام طبقوں کے لوگوں اور زندگی کے ہرشعبے پرمرتب ہوئے ہیں ، لیکن اس سے  ان مدارس کے وجود پر ہی سوالیہ نشان لگ گیا ہے ، جو زکوٰۃ وخیرات اور عوامی چندےسے چلتے ہیں ۔

    نوٹ بندی کے اثرات یوں تو ملک کے تمام طبقوں کے لوگوں اور زندگی کے ہرشعبے پرمرتب ہوئے ہیں ، لیکن اس سے ان مدارس کے وجود پر ہی سوالیہ نشان لگ گیا ہے ، جو زکوٰۃ وخیرات اور عوامی چندےسے چلتے ہیں ۔

  • معروف تنظیم اتحادالمدارس کے سروےپر اگر یقین کیاجائے تو لکھنؤمیں تین اورشہر کے متصل علاقوں میں ابھی تک بارہ مدارس ایسے ہیں ، جو نوٹ بندی کےعمل سے متاثر ہوکر تقریباً بند ہونے کی حالت میں ہیں ۔

    معروف تنظیم اتحادالمدارس کے سروےپر اگر یقین کیاجائے تو لکھنؤمیں تین اورشہر کے متصل علاقوں میں ابھی تک بارہ مدارس ایسے ہیں ، جو نوٹ بندی کےعمل سے متاثر ہوکر تقریباً بند ہونے کی حالت میں ہیں ۔

  • حالانکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بینکوں کی قطاریں بھی کم ہوئی ہیں اور زندگی بھی رفتہ رفتہ معمول پر آتی نظر آرہی ہے۔

    حالانکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بینکوں کی قطاریں بھی کم ہوئی ہیں اور زندگی بھی رفتہ رفتہ معمول پر آتی نظر آرہی ہے۔

  •  لیکن بہت سارے مدارس ومکاتب اب بھی اپنے وجود اور بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

    لیکن بہت سارے مدارس ومکاتب اب بھی اپنے وجود اور بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

  • مدارس اسلامیہ سے وابستہ افراد اس صورتحال پر غمزدہ بھی ہیں اور افسوس کا اظہار بھی کررہے ہیں۔ کچھ لوگوں کے حوصلے جواب دے چکے ہیں جبکہ کچھ لوگ جدوجہد کرکے ان مکتبوں اوراسکولوں کو بچانے کی کوشش بھی کررہےہیں۔

    مدارس اسلامیہ سے وابستہ افراد اس صورتحال پر غمزدہ بھی ہیں اور افسوس کا اظہار بھی کررہے ہیں۔ کچھ لوگوں کے حوصلے جواب دے چکے ہیں جبکہ کچھ لوگ جدوجہد کرکے ان مکتبوں اوراسکولوں کو بچانے کی کوشش بھی کررہےہیں۔

  • تنظیم اتحادالمدارس کے صدر اور اتحاد ماڈل اسکول کے منیجر نے نوٹ بندی کے عمل و اقدام پر ہی سوال کھڑا کرتے ہوئے اسے ایک منظم سازش کا شاخسانہ قرار دیا ہے۔(رپورٹ : ڈاکٹر طارق قمر) ۔

    تنظیم اتحادالمدارس کے صدر اور اتحاد ماڈل اسکول کے منیجر نے نوٹ بندی کے عمل و اقدام پر ہی سوال کھڑا کرتے ہوئے اسے ایک منظم سازش کا شاخسانہ قرار دیا ہے۔(رپورٹ : ڈاکٹر طارق قمر) ۔

  • معروف تنظیم اتحادالمدارس کے سروےپر اگر یقین کیاجائے تو لکھنؤمیں تین اورشہر کے متصل علاقوں میں ابھی تک بارہ مدارس ایسے ہیں ، جو نوٹ بندی کےعمل سے متاثر ہوکر تقریباً بند ہونے کی حالت میں ہیں ۔
  • حالانکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بینکوں کی قطاریں بھی کم ہوئی ہیں اور زندگی بھی رفتہ رفتہ معمول پر آتی نظر آرہی ہے۔
  •  لیکن بہت سارے مدارس ومکاتب اب بھی اپنے وجود اور بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں۔
  • مدارس اسلامیہ سے وابستہ افراد اس صورتحال پر غمزدہ بھی ہیں اور افسوس کا اظہار بھی کررہے ہیں۔ کچھ لوگوں کے حوصلے جواب دے چکے ہیں جبکہ کچھ لوگ جدوجہد کرکے ان مکتبوں اوراسکولوں کو بچانے کی کوشش بھی کررہےہیں۔
  • تنظیم اتحادالمدارس کے صدر اور اتحاد ماڈل اسکول کے منیجر نے نوٹ بندی کے عمل و اقدام پر ہی سوال کھڑا کرتے ہوئے اسے ایک منظم سازش کا شاخسانہ قرار دیا ہے۔(رپورٹ : ڈاکٹر طارق قمر) ۔

تازہ ترین تصاویر