کانپور کی گیتا شرما ہیں ایک انوکھی مثال ، عقیدت و احترام کے ساتھ رکھتی ہیں روزہ اور اہتمام کے ساتھ ادا کرتی ہیں نماز

Jun 12, 2017 11:11 PM IST
1 of 9
  •  میں ہندو ہوں ، مگر ایمان رکھتا ہوں محمد پر، کوئی انداز تو دیکھے میری کافر ادائی کا،  یہ شعر کانپور کی رہنے والے گیتا شرما پر پوری طرح صادق آ رہا ہے ۔ گیتا شرما ایک ہندو خاتون ہیں ، مگر پورے اہتمام اور عقیدت و احترام کے ساتھ رمضان المبارک کے روزے رکھ رہی ہیں۔

    میں ہندو ہوں ، مگر ایمان رکھتا ہوں محمد پر، کوئی انداز تو دیکھے میری کافر ادائی کا، یہ شعر کانپور کی رہنے والے گیتا شرما پر پوری طرح صادق آ رہا ہے ۔ گیتا شرما ایک ہندو خاتون ہیں ، مگر پورے اہتمام اور عقیدت و احترام کے ساتھ رمضان المبارک کے روزے رکھ رہی ہیں۔

  • گیتا شرما نے اس کیلئے نماز پڑھنی بھی سیکھی ہے ۔ ان کے جذبہ کو لوگ ہندو مسلم اتحاد اور قومی یکجہتی کی مثال قرار دے رہے ہیں۔

    گیتا شرما نے اس کیلئے نماز پڑھنی بھی سیکھی ہے ۔ ان کے جذبہ کو لوگ ہندو مسلم اتحاد اور قومی یکجہتی کی مثال قرار دے رہے ہیں۔

  • کانپور شہر کے شيام نگر علاقہ میں رہنے والی گیتا شرما ، جو ایک ہندو خاندان میں پیدا ہوئیں اوراب ایک شادی شدہ زندگی گزار رہی ہیں ،  ان کے شوہر پرمود شرما کے کئی مسلم خاندانوں سے بہتر تعلقات ہیں ،  جن  سے متاثر ہوکر گیتا شرما سال رواں رمضان ماہ روازہ رکھ رہی ہیں ۔

    کانپور شہر کے شيام نگر علاقہ میں رہنے والی گیتا شرما ، جو ایک ہندو خاندان میں پیدا ہوئیں اوراب ایک شادی شدہ زندگی گزار رہی ہیں ، ان کے شوہر پرمود شرما کے کئی مسلم خاندانوں سے بہتر تعلقات ہیں ، جن سے متاثر ہوکر گیتا شرما سال رواں رمضان ماہ روازہ رکھ رہی ہیں ۔

  • گیتا شرما نے ماہ رمضان کے اب تک کے سارے روزے رکھے ہیں اور وہ اس کیلئے سہری ، افطار اور نماز کا ویسے ہی باضابطہ اہتمام کرتی ہیں ، جیسے عام مسلمان کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ ماہ رمضان کے سبھی روزے ركھیں گی ۔

    گیتا شرما نے ماہ رمضان کے اب تک کے سارے روزے رکھے ہیں اور وہ اس کیلئے سہری ، افطار اور نماز کا ویسے ہی باضابطہ اہتمام کرتی ہیں ، جیسے عام مسلمان کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ ماہ رمضان کے سبھی روزے ركھیں گی ۔

  • انہوں نے اپنے گھر پر کام کیلئے والی مسلم لڑکیوں سے باقاعدہ نماز پڑھنی سیکھی ہے اور وہ وقت کی پابندی کے ساتھ نماز ادا کرتی ہیں اور افطار کرتی ہیں ۔

    انہوں نے اپنے گھر پر کام کیلئے والی مسلم لڑکیوں سے باقاعدہ نماز پڑھنی سیکھی ہے اور وہ وقت کی پابندی کے ساتھ نماز ادا کرتی ہیں اور افطار کرتی ہیں ۔

  • ان کے شوہر کا کہنا ہے کہ عبادت کرنے میں کوئی گریز نہیں ہونا چاہئے خواہ وہ کسی بھی شکل میں ہو۔ آج معاشرے میں کچھ لوگ ایسے ہیں جو لوگوں کو باٹنے کا کام کرتے ہیں ، لیکن ہم سب ایک ہی مالک کے بندے ہیں ۔

    ان کے شوہر کا کہنا ہے کہ عبادت کرنے میں کوئی گریز نہیں ہونا چاہئے خواہ وہ کسی بھی شکل میں ہو۔ آج معاشرے میں کچھ لوگ ایسے ہیں جو لوگوں کو باٹنے کا کام کرتے ہیں ، لیکن ہم سب ایک ہی مالک کے بندے ہیں ۔

  • ادھر گیتا شرما کا بھی کہنا ہے وہ روز بھگوان کی پوجا بھی کرتی ہیں اوراللہ کی عبادت بھی ۔

    ادھر گیتا شرما کا بھی کہنا ہے وہ روز بھگوان کی پوجا بھی کرتی ہیں اوراللہ کی عبادت بھی ۔

  • پرمود شرما کے 45 سالہ قدیم مسلم دوست اسد کمال عراقی کا کہنا ہے اس طرح گیتا شرما انسانیت اورمذہبی اتحاد کی ایک مثال پیش کر رہی ہیں کہ ملک میں بسنے والے ہر مذہب کا انسان دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہوئے مل جل اور رہنا چاہتا ہے ، لیکن کچھ سیاسی طاقتیں انہیں تقسیم کرنے کی كوشش میں لگی رہتی ہیں

    پرمود شرما کے 45 سالہ قدیم مسلم دوست اسد کمال عراقی کا کہنا ہے اس طرح گیتا شرما انسانیت اورمذہبی اتحاد کی ایک مثال پیش کر رہی ہیں کہ ملک میں بسنے والے ہر مذہب کا انسان دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہوئے مل جل اور رہنا چاہتا ہے ، لیکن کچھ سیاسی طاقتیں انہیں تقسیم کرنے کی كوشش میں لگی رہتی ہیں

  • مولانا عبدالقدوس کا کہنا ہے کہ ایسی مثال نفرت کا زہر پھیلانے والے سياستدانوں کے لیے ایک جواب ہے  اور اس ملک کی مذہبی یکجہتی کی حقیقی تصویر پیش کرتی ہیں۔(رپورٹ : سندیپ سویتا ) ۔

    مولانا عبدالقدوس کا کہنا ہے کہ ایسی مثال نفرت کا زہر پھیلانے والے سياستدانوں کے لیے ایک جواب ہے اور اس ملک کی مذہبی یکجہتی کی حقیقی تصویر پیش کرتی ہیں۔(رپورٹ : سندیپ سویتا ) ۔

  • گیتا شرما نے اس کیلئے نماز پڑھنی بھی سیکھی ہے ۔ ان کے جذبہ کو لوگ ہندو مسلم اتحاد اور قومی یکجہتی کی مثال قرار دے رہے ہیں۔
  • کانپور شہر کے شيام نگر علاقہ میں رہنے والی گیتا شرما ، جو ایک ہندو خاندان میں پیدا ہوئیں اوراب ایک شادی شدہ زندگی گزار رہی ہیں ،  ان کے شوہر پرمود شرما کے کئی مسلم خاندانوں سے بہتر تعلقات ہیں ،  جن  سے متاثر ہوکر گیتا شرما سال رواں رمضان ماہ روازہ رکھ رہی ہیں ۔
  • گیتا شرما نے ماہ رمضان کے اب تک کے سارے روزے رکھے ہیں اور وہ اس کیلئے سہری ، افطار اور نماز کا ویسے ہی باضابطہ اہتمام کرتی ہیں ، جیسے عام مسلمان کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ ماہ رمضان کے سبھی روزے ركھیں گی ۔
  • انہوں نے اپنے گھر پر کام کیلئے والی مسلم لڑکیوں سے باقاعدہ نماز پڑھنی سیکھی ہے اور وہ وقت کی پابندی کے ساتھ نماز ادا کرتی ہیں اور افطار کرتی ہیں ۔
  • ان کے شوہر کا کہنا ہے کہ عبادت کرنے میں کوئی گریز نہیں ہونا چاہئے خواہ وہ کسی بھی شکل میں ہو۔ آج معاشرے میں کچھ لوگ ایسے ہیں جو لوگوں کو باٹنے کا کام کرتے ہیں ، لیکن ہم سب ایک ہی مالک کے بندے ہیں ۔
  • ادھر گیتا شرما کا بھی کہنا ہے وہ روز بھگوان کی پوجا بھی کرتی ہیں اوراللہ کی عبادت بھی ۔
  • پرمود شرما کے 45 سالہ قدیم مسلم دوست اسد کمال عراقی کا کہنا ہے اس طرح گیتا شرما انسانیت اورمذہبی اتحاد کی ایک مثال پیش کر رہی ہیں کہ ملک میں بسنے والے ہر مذہب کا انسان دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہوئے مل جل اور رہنا چاہتا ہے ، لیکن کچھ سیاسی طاقتیں انہیں تقسیم کرنے کی كوشش میں لگی رہتی ہیں
  • مولانا عبدالقدوس کا کہنا ہے کہ ایسی مثال نفرت کا زہر پھیلانے والے سياستدانوں کے لیے ایک جواب ہے  اور اس ملک کی مذہبی یکجہتی کی حقیقی تصویر پیش کرتی ہیں۔(رپورٹ : سندیپ سویتا ) ۔

تازہ ترین تصاویر