اتراين تہوار کے موقع پر پتنگ کے تاجر سلیم نے پیش کی قومی اتحاد کی انوكھی مثال

Jan 05, 2017 11:38 PM IST
1 of 9
  • اتراين کے موقع پر گجرات میں پتنگ اڑانے کا رواج ہے ۔ اس دن سن رسیدہ سے لے کر نوجوان تک ، سب اپنے اپنے گھروں کی چھتوں پر رنگ برنگے پتنگ اڑا کر پورے آسمان کو رنگین بنا دیتے ہیں ۔ اس تہوار کو لے کر جہاں ہندو برادری کے لوگوں میں خوشی کا ماحول دیکھنے کو ملتا ہے وہیں اس تہوار کے آمد پر مسلم برادری کے لوگوں کے کام کاج میں بھی رونق آ جاتی ہے ۔

    اتراين کے موقع پر گجرات میں پتنگ اڑانے کا رواج ہے ۔ اس دن سن رسیدہ سے لے کر نوجوان تک ، سب اپنے اپنے گھروں کی چھتوں پر رنگ برنگے پتنگ اڑا کر پورے آسمان کو رنگین بنا دیتے ہیں ۔ اس تہوار کو لے کر جہاں ہندو برادری کے لوگوں میں خوشی کا ماحول دیکھنے کو ملتا ہے وہیں اس تہوار کے آمد پر مسلم برادری کے لوگوں کے کام کاج میں بھی رونق آ جاتی ہے ۔

  •  احمد آباد کے كالوپورعلاقہ میں رہنے والے سلیم نے ہندوؤں کے اس تہوار پر منفرد قومی اتحاد کی سوغات دی ہے۔

    احمد آباد کے كالوپورعلاقہ میں رہنے والے سلیم نے ہندوؤں کے اس تہوار پر منفرد قومی اتحاد کی سوغات دی ہے۔

  • چودہ جنوری کو اتراين کے تہوار کو لے کر بازار سج گئے ہیں اور گجرات کے لوگ جم کر پتنگ اور ڈوريوں کی خریداری میں مشغول نظر آ رہے ہیں ۔

    چودہ جنوری کو اتراين کے تہوار کو لے کر بازار سج گئے ہیں اور گجرات کے لوگ جم کر پتنگ اور ڈوريوں کی خریداری میں مشغول نظر آ رہے ہیں ۔

  • وہیں كالوپور علاقہ میں گزشتہ کئی سالوں سے پھرکی (پتنگ کی ڈوری لپیٹنے والا آلہ ) کی تجارت سے وابستہ سلیم بھائی نے پورے احمد آباد کی سب سے بڑی پھرکی بنا کر لوگوں کو چونکا دیا ہے۔

    وہیں كالوپور علاقہ میں گزشتہ کئی سالوں سے پھرکی (پتنگ کی ڈوری لپیٹنے والا آلہ ) کی تجارت سے وابستہ سلیم بھائی نے پورے احمد آباد کی سب سے بڑی پھرکی بنا کر لوگوں کو چونکا دیا ہے۔

  • اس پھرکی کا وزن پورے پچاس کلو ہے ۔ وہیں سلیم بھائی نے اسٹیل کی قومی اتحاد والی پھرکی بھی بنائی ہے ۔

    اس پھرکی کا وزن پورے پچاس کلو ہے ۔ وہیں سلیم بھائی نے اسٹیل کی قومی اتحاد والی پھرکی بھی بنائی ہے ۔

  • اس سلسلے میں سلیم کا کہنا ہے کہ گجرات میں اس تہوار کو ہندواور مسلم برادری کے لوگ ایک ساتھ مناتے ہیں ۔ اسلئے قومی اتحاد کا پیغام دینے والی پھر کی بنائی ہے۔

    اس سلسلے میں سلیم کا کہنا ہے کہ گجرات میں اس تہوار کو ہندواور مسلم برادری کے لوگ ایک ساتھ مناتے ہیں ۔ اسلئے قومی اتحاد کا پیغام دینے والی پھر کی بنائی ہے۔

  • سلیم کی پھرکی پورے گجرات میں مشہور ہے ۔ ان کے یہاں گجرات کے کونے کونے سے لوگ پھرکی لینے آتے ہیں ۔

    سلیم کی پھرکی پورے گجرات میں مشہور ہے ۔ ان کے یہاں گجرات کے کونے کونے سے لوگ پھرکی لینے آتے ہیں ۔

  • لیکن وہ بڑی افسوس کے ساتھ کہتے ہیں کہ لوگ اب چائنیز ڈوری خریدنے لگے ہیں ، جو کافی نقصان دہ ہے اور اسی چائنیز ڈوریوں کی وجہ سے لوگوں کو تہوار کے ان دنوں میں اپنی جان گنوانی پڑتی ہے ۔

    لیکن وہ بڑی افسوس کے ساتھ کہتے ہیں کہ لوگ اب چائنیز ڈوری خریدنے لگے ہیں ، جو کافی نقصان دہ ہے اور اسی چائنیز ڈوریوں کی وجہ سے لوگوں کو تہوار کے ان دنوں میں اپنی جان گنوانی پڑتی ہے ۔

  • سلیم خود تو اپنی دکان پر چائنیز ڈوری نہیں رکھتے ہیں ۔ ساتھ ہی ساتھ خریداروں سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ چائنیز ڈوریاں نہ خریدیں۔ (رپورٹ :عارف عالم)۔

    سلیم خود تو اپنی دکان پر چائنیز ڈوری نہیں رکھتے ہیں ۔ ساتھ ہی ساتھ خریداروں سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ چائنیز ڈوریاں نہ خریدیں۔ (رپورٹ :عارف عالم)۔

  •  احمد آباد کے كالوپورعلاقہ میں رہنے والے سلیم نے ہندوؤں کے اس تہوار پر منفرد قومی اتحاد کی سوغات دی ہے۔
  • چودہ جنوری کو اتراين کے تہوار کو لے کر بازار سج گئے ہیں اور گجرات کے لوگ جم کر پتنگ اور ڈوريوں کی خریداری میں مشغول نظر آ رہے ہیں ۔
  • وہیں كالوپور علاقہ میں گزشتہ کئی سالوں سے پھرکی (پتنگ کی ڈوری لپیٹنے والا آلہ ) کی تجارت سے وابستہ سلیم بھائی نے پورے احمد آباد کی سب سے بڑی پھرکی بنا کر لوگوں کو چونکا دیا ہے۔
  • اس پھرکی کا وزن پورے پچاس کلو ہے ۔ وہیں سلیم بھائی نے اسٹیل کی قومی اتحاد والی پھرکی بھی بنائی ہے ۔
  • اس سلسلے میں سلیم کا کہنا ہے کہ گجرات میں اس تہوار کو ہندواور مسلم برادری کے لوگ ایک ساتھ مناتے ہیں ۔ اسلئے قومی اتحاد کا پیغام دینے والی پھر کی بنائی ہے۔
  • سلیم کی پھرکی پورے گجرات میں مشہور ہے ۔ ان کے یہاں گجرات کے کونے کونے سے لوگ پھرکی لینے آتے ہیں ۔
  • لیکن وہ بڑی افسوس کے ساتھ کہتے ہیں کہ لوگ اب چائنیز ڈوری خریدنے لگے ہیں ، جو کافی نقصان دہ ہے اور اسی چائنیز ڈوریوں کی وجہ سے لوگوں کو تہوار کے ان دنوں میں اپنی جان گنوانی پڑتی ہے ۔
  • سلیم خود تو اپنی دکان پر چائنیز ڈوری نہیں رکھتے ہیں ۔ ساتھ ہی ساتھ خریداروں سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ چائنیز ڈوریاں نہ خریدیں۔ (رپورٹ :عارف عالم)۔

تازہ ترین تصاویر