اس " خاص کلب " میں شامل ہونے والے دنیا کے نویں بلے باز بنے وراٹ کوہلی

Aug 07, 2018 09:47 AM IST
1 of 10
  • وراٹ کوہلی کی ایجبسٹن ٹیسٹ میں 149 رنوں کی اننگز کھیلنے کے باوجود ٹیم انڈیا کو بھلے ہی شکست کا سامنا کرنا پڑا ، لیکن اس دوران وہ ایک ایسے خاص کلب میں شامل ہوگئے ہیں ، جس میں بڑے بڑے کھلاڑی ہی جگہ بناپاتے ہیں ۔ وہ ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ساتھ آئی سی سی رینکنگ میں نمبر ون بننے والے ہندوستان کے دوسرے اور دنیا کے نویں کھلاڑی ہیں ۔

    وراٹ کوہلی کی ایجبسٹن ٹیسٹ میں 149 رنوں کی اننگز کھیلنے کے باوجود ٹیم انڈیا کو بھلے ہی شکست کا سامنا کرنا پڑا ، لیکن اس دوران وہ ایک ایسے خاص کلب میں شامل ہوگئے ہیں ، جس میں بڑے بڑے کھلاڑی ہی جگہ بناپاتے ہیں ۔ وہ ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ساتھ آئی سی سی رینکنگ میں نمبر ون بننے والے ہندوستان کے دوسرے اور دنیا کے نویں کھلاڑی ہیں ۔

  • کوہلی نے حال ہی میں ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ساتھ نمبر ون کا مقام حاصل کیا ہے ۔ وہ ایسے کرنے والے سچن تیندولکر کے بعد دوسرے ہندوستانی بلے باز ہیں ۔

    کوہلی نے حال ہی میں ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ساتھ نمبر ون کا مقام حاصل کیا ہے ۔ وہ ایسے کرنے والے سچن تیندولکر کے بعد دوسرے ہندوستانی بلے باز ہیں ۔

  • ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ہی وقت میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف سب سے پہلے آسٹریلیا کے کیتھ اسٹیک پال نے 1972 میں حاصل کیا تھا ۔

    ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ہی وقت میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف سب سے پہلے آسٹریلیا کے کیتھ اسٹیک پال نے 1972 میں حاصل کیا تھا ۔

  • ویسٹ انڈیز کے ویوین ریچرڈس نے 1982 میں پہلی مرتبہ ایسا کیا تھا جبکہ اس کے بعد 1985 اور 1988 تک ان کا دبدبہ قائم رہا ۔

    ویسٹ انڈیز کے ویوین ریچرڈس نے 1982 میں پہلی مرتبہ ایسا کیا تھا جبکہ اس کے بعد 1985 اور 1988 تک ان کا دبدبہ قائم رہا ۔

  • پاکستان کے جاوید میانداد نے بھی 1989 میں یہ مقام حاصل کیا تھا ۔

    پاکستان کے جاوید میانداد نے بھی 1989 میں یہ مقام حاصل کیا تھا ۔

  • ویسٹ انڈیز کے برائن چارلس لارا 1994 سے 1996 تک آئی سی سی کی ونڈے اور ٹیسٹ رینکنگ میں نمبر ایک پوزیشن پر رہے ۔

    ویسٹ انڈیز کے برائن چارلس لارا 1994 سے 1996 تک آئی سی سی کی ونڈے اور ٹیسٹ رینکنگ میں نمبر ایک پوزیشن پر رہے ۔

  • ٹیم انڈیا کے ماسٹر بلاسٹر سچن تیندولکر نے 1998 کے علاوہ 2001-02 میں بھی ایک ساتھ ٹیسٹ اور ونڈے میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف حاصل کیا ۔

    ٹیم انڈیا کے ماسٹر بلاسٹر سچن تیندولکر نے 1998 کے علاوہ 2001-02 میں بھی ایک ساتھ ٹیسٹ اور ونڈے میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف حاصل کیا ۔

  • جنوبی افریقہ کے جیک کیلس نے 2005 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔

    جنوبی افریقہ کے جیک کیلس نے 2005 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔

  • آسٹریلیا کے رکی پونٹنگ 2005 سے 2007 تک ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں نمبر ایک بلے باز تھے ۔

    آسٹریلیا کے رکی پونٹنگ 2005 سے 2007 تک ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں نمبر ایک بلے باز تھے ۔

  • جنوبی افریقہ کے ہاشم آملہ نے بھی اس خاص کلب میں اپنی جگہ بنائی ۔ انہوں نے 2013 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔

    جنوبی افریقہ کے ہاشم آملہ نے بھی اس خاص کلب میں اپنی جگہ بنائی ۔ انہوں نے 2013 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔

  • کوہلی نے حال ہی میں ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ساتھ نمبر ون کا مقام حاصل کیا ہے ۔ وہ ایسے کرنے والے سچن تیندولکر کے بعد دوسرے ہندوستانی بلے باز ہیں ۔
  • ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں ایک ہی وقت میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف سب سے پہلے آسٹریلیا کے کیتھ اسٹیک پال نے 1972 میں حاصل کیا تھا ۔
  • ویسٹ انڈیز کے ویوین ریچرڈس نے 1982 میں پہلی مرتبہ ایسا کیا تھا جبکہ اس کے بعد 1985 اور 1988 تک ان کا دبدبہ قائم رہا ۔
  • پاکستان کے جاوید میانداد نے بھی 1989 میں یہ مقام حاصل کیا تھا ۔
  • ویسٹ انڈیز کے برائن چارلس لارا 1994 سے 1996 تک آئی سی سی کی ونڈے اور ٹیسٹ رینکنگ میں نمبر ایک پوزیشن پر رہے ۔
  • ٹیم انڈیا کے ماسٹر بلاسٹر سچن تیندولکر نے 1998 کے علاوہ 2001-02 میں بھی ایک ساتھ ٹیسٹ اور ونڈے میں نمبر ایک بلے باز بننے کا شرف حاصل کیا ۔
  • جنوبی افریقہ کے جیک کیلس نے 2005 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔
  • آسٹریلیا کے رکی پونٹنگ 2005 سے 2007 تک ٹیسٹ اور یک روزہ کرکٹ میں نمبر ایک بلے باز تھے ۔
  • جنوبی افریقہ کے ہاشم آملہ نے بھی اس خاص کلب میں اپنی جگہ بنائی ۔ انہوں نے 2013 میں یہ کامیابی حاصل کی ۔

تازہ ترین تصاویر