یوم یوگا: نوابوں کے شہر لکھنئو نے برستے پانی کے درمیان دنیا کو سکھایا یوگا کا سبق

Jun 21, 2017 12:08 PM IST
1 of 12
  • وزیراعظم نریندر مودی کی موجودگی میں اترپردیش کی راجدھانی لکھنو کے 50 ہزار سے زیادہ باشندگان نے ایک ساتھ یوگا کرکے بیماریوں سے پاک اور صحت مند زندگی کے لئے یوگا کو اختیار کرنے کا منتر پوری دنیا کو دیکر تاریخ رقم کی۔ صبح تین بجے سے رم جھم بارش کے باوجود رمابائی امبیڈکر میدان پر منعقدہ یوگا کیمپ پانچ بجے تک یوگا کرنے والوں سے بھر چکا تھا۔ اس کے باوجود یوگا کیمپ میں حصہ لینے والوں کے جوش میں کوئی کمی نہیں آرہی تھی۔سکیورٹی کے سخت انتظام کے درمیان منعقدہ اس پروگرام میں مسٹر مودی نے کھلے آسمان کے نیچے برستے پانی میں اسکولی طلبا کے ساتھ یوگ آسن کئے۔

    وزیراعظم نریندر مودی کی موجودگی میں اترپردیش کی راجدھانی لکھنو کے 50 ہزار سے زیادہ باشندگان نے ایک ساتھ یوگا کرکے بیماریوں سے پاک اور صحت مند زندگی کے لئے یوگا کو اختیار کرنے کا منتر پوری دنیا کو دیکر تاریخ رقم کی۔ صبح تین بجے سے رم جھم بارش کے باوجود رمابائی امبیڈکر میدان پر منعقدہ یوگا کیمپ پانچ بجے تک یوگا کرنے والوں سے بھر چکا تھا۔ اس کے باوجود یوگا کیمپ میں حصہ لینے والوں کے جوش میں کوئی کمی نہیں آرہی تھی۔سکیورٹی کے سخت انتظام کے درمیان منعقدہ اس پروگرام میں مسٹر مودی نے کھلے آسمان کے نیچے برستے پانی میں اسکولی طلبا کے ساتھ یوگ آسن کئے۔

  • مسٹر مودی کے ہمراہ اتر پردیش کے گورنر رام نائك ، وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ، نائب وزیراعلی دنیش شرما سمیت دیگر معزز شخصیات نے بھی یوگا کے گر سیکھے۔ بارش کے امکان کے پیش نظر ضلع انتظامیہ نے معزز شخصیات کے لئے واٹر پروف پنڈال میں یوگا کرنے کا انتظام کیا تھا مگر مسٹر مودی نے بچوں کے ساتھ یوگا کرنی کا ذہن بنایا جس کی پیروی دیگر معزز شخصیات نے بھی کی۔

    مسٹر مودی کے ہمراہ اتر پردیش کے گورنر رام نائك ، وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ، نائب وزیراعلی دنیش شرما سمیت دیگر معزز شخصیات نے بھی یوگا کے گر سیکھے۔ بارش کے امکان کے پیش نظر ضلع انتظامیہ نے معزز شخصیات کے لئے واٹر پروف پنڈال میں یوگا کرنے کا انتظام کیا تھا مگر مسٹر مودی نے بچوں کے ساتھ یوگا کرنی کا ذہن بنایا جس کی پیروی دیگر معزز شخصیات نے بھی کی۔

  • یوگا پروگرام میں حصہ لینے کے لئے یوگا کو پسند کرنے والے دیر رات سے ہی میدان کے باہر جمع ہونا شروع ہوگئے تھے جنہیں سخت حفاظتی جانچ کے بعد صبح دو بجے میدان میں داخلہ دیا گیا۔ میدان اور اس کے آس پاس کے علاقے میں حفاظت کے پیش نظر 400 سی سی ٹی وی کیمرے لگائے گئے تھے۔ راجدھانی لکھنو کے 11 اہم پارکوں میں ایل ای ڈی ٹی وی لگائے گئے تھے جہاں لوگوں نے رما بھائی امبیڈکر میدان پر منعقدہ یوگا کے آسنوں کی پیروی کی۔

    یوگا پروگرام میں حصہ لینے کے لئے یوگا کو پسند کرنے والے دیر رات سے ہی میدان کے باہر جمع ہونا شروع ہوگئے تھے جنہیں سخت حفاظتی جانچ کے بعد صبح دو بجے میدان میں داخلہ دیا گیا۔ میدان اور اس کے آس پاس کے علاقے میں حفاظت کے پیش نظر 400 سی سی ٹی وی کیمرے لگائے گئے تھے۔ راجدھانی لکھنو کے 11 اہم پارکوں میں ایل ای ڈی ٹی وی لگائے گئے تھے جہاں لوگوں نے رما بھائی امبیڈکر میدان پر منعقدہ یوگا کے آسنوں کی پیروی کی۔

  • گورنر رام نائک اور وزیراعلی یوگا آدتیہ ناتھ کے ساتھ مسٹر مودی سفید رنگ اور نیلے کالر کی خاص ٹی شرٹ میں تقریباً چھ بج کر 40 منٹ پر پروگرام کے مقام پر پہنچے۔ اپنے سر وں کو یوگا میٹ اور پلاسٹک کی چادروں سے ڈھکے یوگا لوگوں نے کھڑے ہوکر وزیراعظم کا تہہ دل سے استقبال کیا۔ پروگرام میں لوگوں کی اچھی تعداد دیکھ کر کافی مسرور مسٹر مودی نے ان کا شکریہ ادا کیا اور مسکراتے ہوئے چٹکی لی کہ یوگ کے بارے میں دنیا کو ایک پیغام اور ملا ہے کہ بارش میں یوگا میٹ کا استعمال کس طرح کیا جائے۔

    گورنر رام نائک اور وزیراعلی یوگا آدتیہ ناتھ کے ساتھ مسٹر مودی سفید رنگ اور نیلے کالر کی خاص ٹی شرٹ میں تقریباً چھ بج کر 40 منٹ پر پروگرام کے مقام پر پہنچے۔ اپنے سر وں کو یوگا میٹ اور پلاسٹک کی چادروں سے ڈھکے یوگا لوگوں نے کھڑے ہوکر وزیراعظم کا تہہ دل سے استقبال کیا۔ پروگرام میں لوگوں کی اچھی تعداد دیکھ کر کافی مسرور مسٹر مودی نے ان کا شکریہ ادا کیا اور مسکراتے ہوئے چٹکی لی کہ یوگ کے بارے میں دنیا کو ایک پیغام اور ملا ہے کہ بارش میں یوگا میٹ کا استعمال کس طرح کیا جائے۔

  • مسٹر مودی نے کہا کہ یوگا ساری دنیا کو جوڑنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ یوگا نے ہندوستان کو دنیا میں مخصوص شناخت دلائی ہے۔ صحت مند جسم اور ذہن کا منتر دینے والے ہندوستان کے رشی منیوں کے اس قدیم طریقے سے دنیا کے کثیر آبادی والے ملک واقف ہو چکے ہیں اور اس کی پیروی کر رہے ہیں۔ صدیوں پہلے یوگا ہمالیہ کی گپھاؤں میں رشيوں، منيوں کی سادھنا ہوا کرتا تھا مگر زمانہ بدلنے کے ساتھ آج یوگا ہر انسان کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔

    مسٹر مودی نے کہا کہ یوگا ساری دنیا کو جوڑنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ یوگا نے ہندوستان کو دنیا میں مخصوص شناخت دلائی ہے۔ صحت مند جسم اور ذہن کا منتر دینے والے ہندوستان کے رشی منیوں کے اس قدیم طریقے سے دنیا کے کثیر آبادی والے ملک واقف ہو چکے ہیں اور اس کی پیروی کر رہے ہیں۔ صدیوں پہلے یوگا ہمالیہ کی گپھاؤں میں رشيوں، منيوں کی سادھنا ہوا کرتا تھا مگر زمانہ بدلنے کے ساتھ آج یوگا ہر انسان کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔

  • انہوں نے کہا کہ یوگا جسم کو صحت مند راور ذہن کو فعال رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ دنیا کے کئی ممالک میں یوگا ٹرینروں کی مانگ میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ یوگا کے نئے نئے ادارے فروغ پا رہے ہیں۔ ان اداروں میں یوگا کو پیشہ ورانہ طور پر تیار کرنے کی دوڑ لگی ہوئی ہے۔ پوری دنیا میں ملک کے یوگا ٹرینر وں کو تیزی سے ترجیح دی جارہی ہے۔ یوگا کی باقاعدہ كلاسز منعقد کی جا رہی ہیں۔

    انہوں نے کہا کہ یوگا جسم کو صحت مند راور ذہن کو فعال رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ دنیا کے کئی ممالک میں یوگا ٹرینروں کی مانگ میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ یوگا کے نئے نئے ادارے فروغ پا رہے ہیں۔ ان اداروں میں یوگا کو پیشہ ورانہ طور پر تیار کرنے کی دوڑ لگی ہوئی ہے۔ پوری دنیا میں ملک کے یوگا ٹرینر وں کو تیزی سے ترجیح دی جارہی ہے۔ یوگا کی باقاعدہ كلاسز منعقد کی جا رہی ہیں۔

  • سائنسی طریقے سے یوگا کے عمل کو ضم کیا جا رہا ہے۔ یونیسکو نے ہندوستان کے یوگا کو انسانی ثقافت کے لافانی ورثے کے طور پر تسلیم کیا ہے۔ دنیا کے بہت سے ممالک ہماری زبان، ثقافت اور روایت سے ناواقف تھے لیکن یوگا کے ذریعے ساری دنیا ہندوستان کو ترجیح دے رہی ہے۔ یوگا جسم اور ذہن کو جوڑتا ہے۔ ملک میں یوگا کے بارے میں شعور دن بہ دن بڑھتاجا رہا ہے۔ کئی ریاستیں ایسی ہیں جنہوں نے یوگا کو تعلیمی نصاب میں شامل کرلیا ہے۔

    سائنسی طریقے سے یوگا کے عمل کو ضم کیا جا رہا ہے۔ یونیسکو نے ہندوستان کے یوگا کو انسانی ثقافت کے لافانی ورثے کے طور پر تسلیم کیا ہے۔ دنیا کے بہت سے ممالک ہماری زبان، ثقافت اور روایت سے ناواقف تھے لیکن یوگا کے ذریعے ساری دنیا ہندوستان کو ترجیح دے رہی ہے۔ یوگا جسم اور ذہن کو جوڑتا ہے۔ ملک میں یوگا کے بارے میں شعور دن بہ دن بڑھتاجا رہا ہے۔ کئی ریاستیں ایسی ہیں جنہوں نے یوگا کو تعلیمی نصاب میں شامل کرلیا ہے۔

  • مسٹر مودی نے کہا ’’فٹنس اور صحت مند ہونے سے زیادہ ضروری ویلنیس کی اہمیت ہوتی ہے۔ یوگا اس کا سب سے بڑا ذریعہ بن کر ابھرا ہے۔ یوگا کو لے کر وقت کے ساتھ تبدیلیاں ہوتی رہتی ہیں۔ یوگا میں آہستہ آہستہ ترقی ہوتی رہی ہے۔ آج کے دور میں یوگا لوگوں کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔ آپ یوگا کے ماسٹر بھلے ہی نہ بنے مگر یوگا کے تئیں متلاشی ضرور بننا چاہیے۔ جسم کےجو اہم عضو سست پڑجاتے ہیں، يوگاآسن کرنے سے وہ اعضاء فعال ہونے لگتے ہیں ‘‘۔

    مسٹر مودی نے کہا ’’فٹنس اور صحت مند ہونے سے زیادہ ضروری ویلنیس کی اہمیت ہوتی ہے۔ یوگا اس کا سب سے بڑا ذریعہ بن کر ابھرا ہے۔ یوگا کو لے کر وقت کے ساتھ تبدیلیاں ہوتی رہتی ہیں۔ یوگا میں آہستہ آہستہ ترقی ہوتی رہی ہے۔ آج کے دور میں یوگا لوگوں کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔ آپ یوگا کے ماسٹر بھلے ہی نہ بنے مگر یوگا کے تئیں متلاشی ضرور بننا چاہیے۔ جسم کےجو اہم عضو سست پڑجاتے ہیں، يوگاآسن کرنے سے وہ اعضاء فعال ہونے لگتے ہیں ‘‘۔

  • وزیراعظم نے زندگی میں یوگا کا موازنہ نمک سے کرتے ہوئے کہا کہ نمک سب سے سستا ہوتا ہے مگر اگر کھانے میں نمک نہ ہو تو کھانا بد مزہ لگتا ہے اور جسم کا توازن بھی بگڑجاتا ہے۔ نمک کی ضرورت کی کوئی نفی نہیں کر سکتا۔زندگی میں یوگا کا مقام نمک کی طرح بنانا چاہیے۔ سارے دن کی بجائے صرف 50 سے 60 منٹ یوگا کرکے زندگی کو صحت مند اوربیماریوں سے پاک بنایا جا سکتا ہے۔

    وزیراعظم نے زندگی میں یوگا کا موازنہ نمک سے کرتے ہوئے کہا کہ نمک سب سے سستا ہوتا ہے مگر اگر کھانے میں نمک نہ ہو تو کھانا بد مزہ لگتا ہے اور جسم کا توازن بھی بگڑجاتا ہے۔ نمک کی ضرورت کی کوئی نفی نہیں کر سکتا۔زندگی میں یوگا کا مقام نمک کی طرح بنانا چاہیے۔ سارے دن کی بجائے صرف 50 سے 60 منٹ یوگا کرکے زندگی کو صحت مند اوربیماریوں سے پاک بنایا جا سکتا ہے۔

  • یوگا کیمپ میں حصہ لینے کے بعد مسٹر مودی صبح قریب 745 پر اموسی ہوائی اڈے کے لیے روانہ ہو گئے جہاں سے وہ فضائیہ کے خصوصی طیارے سے دہلی لوٹ گئے۔ وزیر اعظم اور معزز شخصیات کے جاتے ہی پروگرام کے پنڈال میں کچھ وقت کے لئے بھاگ دوڑ کا ماحول پیدا ہو گیا۔ بارش سے بچنے کے لئے لوگ میدان پر پڑی چٹائی کو لے کر باہر نکلتے نظر آئے۔ میدان سے ایک ساتھ نکلنے والے ہجوم کے سبب سڑکوں پر جام سا لگ گیا۔ حالانکہ صبح کا وقت ہونے کی وجہ سے گاڑیوں کی تعداد نہ کے برابر تھی۔

    یوگا کیمپ میں حصہ لینے کے بعد مسٹر مودی صبح قریب 745 پر اموسی ہوائی اڈے کے لیے روانہ ہو گئے جہاں سے وہ فضائیہ کے خصوصی طیارے سے دہلی لوٹ گئے۔ وزیر اعظم اور معزز شخصیات کے جاتے ہی پروگرام کے پنڈال میں کچھ وقت کے لئے بھاگ دوڑ کا ماحول پیدا ہو گیا۔ بارش سے بچنے کے لئے لوگ میدان پر پڑی چٹائی کو لے کر باہر نکلتے نظر آئے۔ میدان سے ایک ساتھ نکلنے والے ہجوم کے سبب سڑکوں پر جام سا لگ گیا۔ حالانکہ صبح کا وقت ہونے کی وجہ سے گاڑیوں کی تعداد نہ کے برابر تھی۔

  • چنڈي گڑھ اور دہلی کے بعد لکھنؤ میں یہ تیسرا بین الاقوامی یوم یوگا کی تقریب تھی۔ سال 2015 میں دہلی کے راج پتھ پر پہلی بار یوگا کا بین الاقوامی دن منایا گیا تھا۔ اس پروگرام کے ذریعے آرگنائزر آيوش کی وزارت نے دو گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ قائم کئے تھے۔ دو ریکارڈوں میں سے ایک یوگا کیمپ میں 35 ہزار 985 لوگوں نے حصہ لیا تھا جو دنیا کے 84 ممالک میں منعقد یوم یوگا میں حصہ لینے والے شرکاء کے مقابلے میں سب سے زیادہ تعدا دتھی۔ چنڈي گڑھ میں منعقدہ دوسرے بین الاقوامی یوگا ڈے پر وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ 30 ہزار افراد نے ایک ساتھ بیٹھ کر يوگاآسن کئے تھے۔

    چنڈي گڑھ اور دہلی کے بعد لکھنؤ میں یہ تیسرا بین الاقوامی یوم یوگا کی تقریب تھی۔ سال 2015 میں دہلی کے راج پتھ پر پہلی بار یوگا کا بین الاقوامی دن منایا گیا تھا۔ اس پروگرام کے ذریعے آرگنائزر آيوش کی وزارت نے دو گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ قائم کئے تھے۔ دو ریکارڈوں میں سے ایک یوگا کیمپ میں 35 ہزار 985 لوگوں نے حصہ لیا تھا جو دنیا کے 84 ممالک میں منعقد یوم یوگا میں حصہ لینے والے شرکاء کے مقابلے میں سب سے زیادہ تعدا دتھی۔ چنڈي گڑھ میں منعقدہ دوسرے بین الاقوامی یوگا ڈے پر وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ 30 ہزار افراد نے ایک ساتھ بیٹھ کر يوگاآسن کئے تھے۔

  • وزیر اعظم کی سیکورٹی اور یوگا پروگرام خوش اسلوبی سے منعقد کرانے کیلئے سینٹر فورس کی 10 کمپنیاں اور پی اے سی کی 25 کمپنیوں کے علاوہ دہشت گرد مخالف اسکواڈ کے کمانڈو تعینات کئے گئے تھے۔ اس کے ساتھ ہی پولیس سپرنٹنڈنٹ سطح کے 26 افسران، 51 پولیس سب انسپکٹر، 137 علاقائی افسران ، 224 انسپکٹر، 992 سب انسپکٹر، 162 خاتون پولیس سب انسپکٹر، 3700 كانسٹبل، 480 خاتون كانسٹبل اور 300 ٹریفک پولیس اہلکار موجود تھے۔ رمابائی امبیڈکر میدان کے ارد گرد شر پسند عناصر پر نگاہ رکھنے اور بھیڑ کو کنٹرول کرنے کے لیے 400 سی سی ٹی وی لگائے گئے تھے۔

    وزیر اعظم کی سیکورٹی اور یوگا پروگرام خوش اسلوبی سے منعقد کرانے کیلئے سینٹر فورس کی 10 کمپنیاں اور پی اے سی کی 25 کمپنیوں کے علاوہ دہشت گرد مخالف اسکواڈ کے کمانڈو تعینات کئے گئے تھے۔ اس کے ساتھ ہی پولیس سپرنٹنڈنٹ سطح کے 26 افسران، 51 پولیس سب انسپکٹر، 137 علاقائی افسران ، 224 انسپکٹر، 992 سب انسپکٹر، 162 خاتون پولیس سب انسپکٹر، 3700 كانسٹبل، 480 خاتون كانسٹبل اور 300 ٹریفک پولیس اہلکار موجود تھے۔ رمابائی امبیڈکر میدان کے ارد گرد شر پسند عناصر پر نگاہ رکھنے اور بھیڑ کو کنٹرول کرنے کے لیے 400 سی سی ٹی وی لگائے گئے تھے۔

  • مسٹر مودی کے ہمراہ اتر پردیش کے گورنر رام نائك ، وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ، نائب وزیراعلی دنیش شرما سمیت دیگر معزز شخصیات نے بھی یوگا کے گر سیکھے۔ بارش کے امکان کے پیش نظر ضلع انتظامیہ نے معزز شخصیات کے لئے واٹر پروف پنڈال میں یوگا کرنے کا انتظام کیا تھا مگر مسٹر مودی نے بچوں کے ساتھ یوگا کرنی کا ذہن بنایا جس کی پیروی دیگر معزز شخصیات نے بھی کی۔
  • یوگا پروگرام میں حصہ لینے کے لئے یوگا کو پسند کرنے والے دیر رات سے ہی میدان کے باہر جمع ہونا شروع ہوگئے تھے جنہیں سخت حفاظتی جانچ کے بعد صبح دو بجے میدان میں داخلہ دیا گیا۔ میدان اور اس کے آس پاس کے علاقے میں حفاظت کے پیش نظر 400 سی سی ٹی وی کیمرے لگائے گئے تھے۔ راجدھانی لکھنو کے 11 اہم پارکوں میں ایل ای ڈی ٹی وی لگائے گئے تھے جہاں لوگوں نے رما بھائی امبیڈکر میدان پر منعقدہ یوگا کے آسنوں کی پیروی کی۔
  • گورنر رام نائک اور وزیراعلی یوگا آدتیہ ناتھ کے ساتھ مسٹر مودی سفید رنگ اور نیلے کالر کی خاص ٹی شرٹ میں تقریباً چھ بج کر 40 منٹ پر پروگرام کے مقام پر پہنچے۔ اپنے سر وں کو یوگا میٹ اور پلاسٹک کی چادروں سے ڈھکے یوگا لوگوں نے کھڑے ہوکر وزیراعظم کا تہہ دل سے استقبال کیا۔ پروگرام میں لوگوں کی اچھی تعداد دیکھ کر کافی مسرور مسٹر مودی نے ان کا شکریہ ادا کیا اور مسکراتے ہوئے چٹکی لی کہ یوگ کے بارے میں دنیا کو ایک پیغام اور ملا ہے کہ بارش میں یوگا میٹ کا استعمال کس طرح کیا جائے۔
  • مسٹر مودی نے کہا کہ یوگا ساری دنیا کو جوڑنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ یوگا نے ہندوستان کو دنیا میں مخصوص شناخت دلائی ہے۔ صحت مند جسم اور ذہن کا منتر دینے والے ہندوستان کے رشی منیوں کے اس قدیم طریقے سے دنیا کے کثیر آبادی والے ملک واقف ہو چکے ہیں اور اس کی پیروی کر رہے ہیں۔ صدیوں پہلے یوگا ہمالیہ کی گپھاؤں میں رشيوں، منيوں کی سادھنا ہوا کرتا تھا مگر زمانہ بدلنے کے ساتھ آج یوگا ہر انسان کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔
  • انہوں نے کہا کہ یوگا جسم کو صحت مند راور ذہن کو فعال رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ دنیا کے کئی ممالک میں یوگا ٹرینروں کی مانگ میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ یوگا کے نئے نئے ادارے فروغ پا رہے ہیں۔ ان اداروں میں یوگا کو پیشہ ورانہ طور پر تیار کرنے کی دوڑ لگی ہوئی ہے۔ پوری دنیا میں ملک کے یوگا ٹرینر وں کو تیزی سے ترجیح دی جارہی ہے۔ یوگا کی باقاعدہ كلاسز منعقد کی جا رہی ہیں۔
  • سائنسی طریقے سے یوگا کے عمل کو ضم کیا جا رہا ہے۔ یونیسکو نے ہندوستان کے یوگا کو انسانی ثقافت کے لافانی ورثے کے طور پر تسلیم کیا ہے۔ دنیا کے بہت سے ممالک ہماری زبان، ثقافت اور روایت سے ناواقف تھے لیکن یوگا کے ذریعے ساری دنیا ہندوستان کو ترجیح دے رہی ہے۔ یوگا جسم اور ذہن کو جوڑتا ہے۔ ملک میں یوگا کے بارے میں شعور دن بہ دن بڑھتاجا رہا ہے۔ کئی ریاستیں ایسی ہیں جنہوں نے یوگا کو تعلیمی نصاب میں شامل کرلیا ہے۔
  • مسٹر مودی نے کہا ’’فٹنس اور صحت مند ہونے سے زیادہ ضروری ویلنیس کی اہمیت ہوتی ہے۔ یوگا اس کا سب سے بڑا ذریعہ بن کر ابھرا ہے۔ یوگا کو لے کر وقت کے ساتھ تبدیلیاں ہوتی رہتی ہیں۔ یوگا میں آہستہ آہستہ ترقی ہوتی رہی ہے۔ آج کے دور میں یوگا لوگوں کی زندگی کا حصہ بن چکا ہے۔ آپ یوگا کے ماسٹر بھلے ہی نہ بنے مگر یوگا کے تئیں متلاشی ضرور بننا چاہیے۔ جسم کےجو اہم عضو سست پڑجاتے ہیں، يوگاآسن کرنے سے وہ اعضاء فعال ہونے لگتے ہیں ‘‘۔
  • وزیراعظم نے زندگی میں یوگا کا موازنہ نمک سے کرتے ہوئے کہا کہ نمک سب سے سستا ہوتا ہے مگر اگر کھانے میں نمک نہ ہو تو کھانا بد مزہ لگتا ہے اور جسم کا توازن بھی بگڑجاتا ہے۔ نمک کی ضرورت کی کوئی نفی نہیں کر سکتا۔زندگی میں یوگا کا مقام نمک کی طرح بنانا چاہیے۔ سارے دن کی بجائے صرف 50 سے 60 منٹ یوگا کرکے زندگی کو صحت مند اوربیماریوں سے پاک بنایا جا سکتا ہے۔
  • یوگا کیمپ میں حصہ لینے کے بعد مسٹر مودی صبح قریب 745 پر اموسی ہوائی اڈے کے لیے روانہ ہو گئے جہاں سے وہ فضائیہ کے خصوصی طیارے سے دہلی لوٹ گئے۔ وزیر اعظم اور معزز شخصیات کے جاتے ہی پروگرام کے پنڈال میں کچھ وقت کے لئے بھاگ دوڑ کا ماحول پیدا ہو گیا۔ بارش سے بچنے کے لئے لوگ میدان پر پڑی چٹائی کو لے کر باہر نکلتے نظر آئے۔ میدان سے ایک ساتھ نکلنے والے ہجوم کے سبب سڑکوں پر جام سا لگ گیا۔ حالانکہ صبح کا وقت ہونے کی وجہ سے گاڑیوں کی تعداد نہ کے برابر تھی۔
  • چنڈي گڑھ اور دہلی کے بعد لکھنؤ میں یہ تیسرا بین الاقوامی یوم یوگا کی تقریب تھی۔ سال 2015 میں دہلی کے راج پتھ پر پہلی بار یوگا کا بین الاقوامی دن منایا گیا تھا۔ اس پروگرام کے ذریعے آرگنائزر آيوش کی وزارت نے دو گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ قائم کئے تھے۔ دو ریکارڈوں میں سے ایک یوگا کیمپ میں 35 ہزار 985 لوگوں نے حصہ لیا تھا جو دنیا کے 84 ممالک میں منعقد یوم یوگا میں حصہ لینے والے شرکاء کے مقابلے میں سب سے زیادہ تعدا دتھی۔ چنڈي گڑھ میں منعقدہ دوسرے بین الاقوامی یوگا ڈے پر وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ 30 ہزار افراد نے ایک ساتھ بیٹھ کر يوگاآسن کئے تھے۔
  • وزیر اعظم کی سیکورٹی اور یوگا پروگرام خوش اسلوبی سے منعقد کرانے کیلئے سینٹر فورس کی 10 کمپنیاں اور پی اے سی کی 25 کمپنیوں کے علاوہ دہشت گرد مخالف اسکواڈ کے کمانڈو تعینات کئے گئے تھے۔ اس کے ساتھ ہی پولیس سپرنٹنڈنٹ سطح کے 26 افسران، 51 پولیس سب انسپکٹر، 137 علاقائی افسران ، 224 انسپکٹر، 992 سب انسپکٹر، 162 خاتون پولیس سب انسپکٹر، 3700 كانسٹبل، 480 خاتون كانسٹبل اور 300 ٹریفک پولیس اہلکار موجود تھے۔ رمابائی امبیڈکر میدان کے ارد گرد شر پسند عناصر پر نگاہ رکھنے اور بھیڑ کو کنٹرول کرنے کے لیے 400 سی سی ٹی وی لگائے گئے تھے۔

تازہ ترین تصاویر