کیا سچ میں مسلم مخالف ہیں یوپی کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ؟

Mar 21, 2017 01:42 PM IST
1 of 8
  • اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی شبیہ بھلے ہی ایک کٹر ہندو لیڈر کی ہے، لیکن ایسا بالکل نہیں ہے کہ وہ مسلمانوں کا کام نہیں کرواتے۔ ان کے کچھ کاموں کے قائل مسلم بھی ہیں۔ وہ وزیر اعلی بننے سے پہلے گورکھناتھ مندر کے پیٹھادھیشور ہیں۔ وہ ہندو یوا واہنی کے بانی بھی ہیں، جسے ہندو نوجوانوں کا گروپ بتایا جاتا ہے۔

    اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی شبیہ بھلے ہی ایک کٹر ہندو لیڈر کی ہے، لیکن ایسا بالکل نہیں ہے کہ وہ مسلمانوں کا کام نہیں کرواتے۔ ان کے کچھ کاموں کے قائل مسلم بھی ہیں۔ وہ وزیر اعلی بننے سے پہلے گورکھناتھ مندر کے پیٹھادھیشور ہیں۔ وہ ہندو یوا واہنی کے بانی بھی ہیں، جسے ہندو نوجوانوں کا گروپ بتایا جاتا ہے۔

  •  گورکھناتھ مندر سے ملحق مسلمانوں کی بڑی آبادی ہے۔ پاس میں ہی اسلام آباد محلہ ہے جس میں ایک بڑی مسجد ہے۔

    گورکھناتھ مندر سے ملحق مسلمانوں کی بڑی آبادی ہے۔ پاس میں ہی اسلام آباد محلہ ہے جس میں ایک بڑی مسجد ہے۔

  • یوگی کو نزدیک سے جاننے والے گورکھپور کے صحافی ٹی پی شاہی کہتے ہیں کہ یوگی کے مخالف ان کے خلاف پروپیگنڈہ کرکے ان کی شبیہ خراب کرنے کی کوشش کرتے ہیں، جبکہ وہ مسلمانوں کے پہنچنے پر ان کا کام بھی اتنی ہی شدت سے کرواتے ہیں، جتنا کہ ہندوؤں کا۔

    یوگی کو نزدیک سے جاننے والے گورکھپور کے صحافی ٹی پی شاہی کہتے ہیں کہ یوگی کے مخالف ان کے خلاف پروپیگنڈہ کرکے ان کی شبیہ خراب کرنے کی کوشش کرتے ہیں، جبکہ وہ مسلمانوں کے پہنچنے پر ان کا کام بھی اتنی ہی شدت سے کرواتے ہیں، جتنا کہ ہندوؤں کا۔

  • یہی وجہ ہے کہ گورکھپور کے کالی مندر میں 9 مارچ کو ایک مسلم نے یوگی کو سی ایم بننے کی منت مانگنے کے لئے دعا کی تھی۔ یہاں کے کئی مسلم انہیں سی ایم بنانے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔ شاہی بتاتے ہیں کہ کچھ سال پہلے شہر کے رسول پور محلے کے ایک مدرسے کی کچھ زمین دبنگوں نے اپنے قبضہ میں لے لی تھیں۔

    یہی وجہ ہے کہ گورکھپور کے کالی مندر میں 9 مارچ کو ایک مسلم نے یوگی کو سی ایم بننے کی منت مانگنے کے لئے دعا کی تھی۔ یہاں کے کئی مسلم انہیں سی ایم بنانے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔ شاہی بتاتے ہیں کہ کچھ سال پہلے شہر کے رسول پور محلے کے ایک مدرسے کی کچھ زمین دبنگوں نے اپنے قبضہ میں لے لی تھیں۔

  • مدرسے سے وابستہ لوگ جب قبضہ نہیں ہٹوا سکے تو پریشان ہو کر یوگی کے پاس مندر میں آئے۔ انہوں نے ایس ایس پی کو فون کر کے کہا کہ ایک گھنٹے کے اندر مدرسے کا قبضہ نہیں ہٹے گا تو تم جانو گے۔ اس کے بعد گورکھپور انتظامیہ نے آنا فانا میں قبضہ ہٹوا دیا۔

    مدرسے سے وابستہ لوگ جب قبضہ نہیں ہٹوا سکے تو پریشان ہو کر یوگی کے پاس مندر میں آئے۔ انہوں نے ایس ایس پی کو فون کر کے کہا کہ ایک گھنٹے کے اندر مدرسے کا قبضہ نہیں ہٹے گا تو تم جانو گے۔ اس کے بعد گورکھپور انتظامیہ نے آنا فانا میں قبضہ ہٹوا دیا۔

  • پرانا گورکھناتھ محلہ رہائشی جنید احمد یہاں اکثر مسلمانوں کا مسئلہ حل کروانے آتے ہیں۔ وہ پیر کو بھی مندر پہنچے تھے۔ جنید کے مطابق سال 2014 میں کچھ لوگوں نے یہاں کی بڑی جامع مسجد کے پاس راستہ روک دیا تھا۔

    پرانا گورکھناتھ محلہ رہائشی جنید احمد یہاں اکثر مسلمانوں کا مسئلہ حل کروانے آتے ہیں۔ وہ پیر کو بھی مندر پہنچے تھے۔ جنید کے مطابق سال 2014 میں کچھ لوگوں نے یہاں کی بڑی جامع مسجد کے پاس راستہ روک دیا تھا۔

  • جب یہاں کے پریشان انصاریوں نے مخالفت کرنا شروع کی تو ان پر پولیس نے طاقت کا استعمال کیا۔ حکومت خلاف تھی کیونکہ جس نے راستہ روکا تھا وہ پہنچ والا تھا۔ اس کے بعد متاثرین نے یوگی سے مدد مانگی۔ یوگی خود موقع پر پہنچے اور کھڑے ہو کر راستہ کھلوایا۔

    جب یہاں کے پریشان انصاریوں نے مخالفت کرنا شروع کی تو ان پر پولیس نے طاقت کا استعمال کیا۔ حکومت خلاف تھی کیونکہ جس نے راستہ روکا تھا وہ پہنچ والا تھا۔ اس کے بعد متاثرین نے یوگی سے مدد مانگی۔ یوگی خود موقع پر پہنچے اور کھڑے ہو کر راستہ کھلوایا۔

  • انہوں نے بتایا کہ مسلم خواتین کو تشدد کا نشانہ بنانے والے بہت سے لوگوں پر کارروائی کروا کر یوگی نے ان کی مدد کی ہے۔ تاہم، جب مسلمانوں کو لے کر کوئی ان کا بیان سنتا ہے تو اسے پھر یوگی سمجھ میں نہیں آتے۔  اوم پرکاش کی رپورٹ

    انہوں نے بتایا کہ مسلم خواتین کو تشدد کا نشانہ بنانے والے بہت سے لوگوں پر کارروائی کروا کر یوگی نے ان کی مدد کی ہے۔ تاہم، جب مسلمانوں کو لے کر کوئی ان کا بیان سنتا ہے تو اسے پھر یوگی سمجھ میں نہیں آتے۔ اوم پرکاش کی رپورٹ

  •  گورکھناتھ مندر سے ملحق مسلمانوں کی بڑی آبادی ہے۔ پاس میں ہی اسلام آباد محلہ ہے جس میں ایک بڑی مسجد ہے۔
  • یوگی کو نزدیک سے جاننے والے گورکھپور کے صحافی ٹی پی شاہی کہتے ہیں کہ یوگی کے مخالف ان کے خلاف پروپیگنڈہ کرکے ان کی شبیہ خراب کرنے کی کوشش کرتے ہیں، جبکہ وہ مسلمانوں کے پہنچنے پر ان کا کام بھی اتنی ہی شدت سے کرواتے ہیں، جتنا کہ ہندوؤں کا۔
  • یہی وجہ ہے کہ گورکھپور کے کالی مندر میں 9 مارچ کو ایک مسلم نے یوگی کو سی ایم بننے کی منت مانگنے کے لئے دعا کی تھی۔ یہاں کے کئی مسلم انہیں سی ایم بنانے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔ شاہی بتاتے ہیں کہ کچھ سال پہلے شہر کے رسول پور محلے کے ایک مدرسے کی کچھ زمین دبنگوں نے اپنے قبضہ میں لے لی تھیں۔
  • مدرسے سے وابستہ لوگ جب قبضہ نہیں ہٹوا سکے تو پریشان ہو کر یوگی کے پاس مندر میں آئے۔ انہوں نے ایس ایس پی کو فون کر کے کہا کہ ایک گھنٹے کے اندر مدرسے کا قبضہ نہیں ہٹے گا تو تم جانو گے۔ اس کے بعد گورکھپور انتظامیہ نے آنا فانا میں قبضہ ہٹوا دیا۔
  • پرانا گورکھناتھ محلہ رہائشی جنید احمد یہاں اکثر مسلمانوں کا مسئلہ حل کروانے آتے ہیں۔ وہ پیر کو بھی مندر پہنچے تھے۔ جنید کے مطابق سال 2014 میں کچھ لوگوں نے یہاں کی بڑی جامع مسجد کے پاس راستہ روک دیا تھا۔
  • جب یہاں کے پریشان انصاریوں نے مخالفت کرنا شروع کی تو ان پر پولیس نے طاقت کا استعمال کیا۔ حکومت خلاف تھی کیونکہ جس نے راستہ روکا تھا وہ پہنچ والا تھا۔ اس کے بعد متاثرین نے یوگی سے مدد مانگی۔ یوگی خود موقع پر پہنچے اور کھڑے ہو کر راستہ کھلوایا۔
  • انہوں نے بتایا کہ مسلم خواتین کو تشدد کا نشانہ بنانے والے بہت سے لوگوں پر کارروائی کروا کر یوگی نے ان کی مدد کی ہے۔ تاہم، جب مسلمانوں کو لے کر کوئی ان کا بیان سنتا ہے تو اسے پھر یوگی سمجھ میں نہیں آتے۔  اوم پرکاش کی رپورٹ

تازہ ترین تصاویر