Live Results Assembly Elections 2018

امریکی فیصلہ کے خلاف کشمیر میں یوم احتجاج ، تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی پر قدغن

Dec 08, 2017 04:11 PM IST
1 of 10
  •  کشمیر انتظامیہ نے جمعہ کے روز سری نگر کے پائین شہر کے بعض حصوں میں کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کرکے نوہٹہ میں واقع تاریخی و مرکزی جامع مسجد میں نماز جمعہ ادا کرنے کی اجازت نہیں دی۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ وادی کشمیر کی تمام مذہبی جماعتوں کے سربراہان نے جمعرات کو اپنے ایک مشترکہ بیان میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان پر شدید برہمی کا اظہار کیا تھا ۔

    کشمیر انتظامیہ نے جمعہ کے روز سری نگر کے پائین شہر کے بعض حصوں میں کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کرکے نوہٹہ میں واقع تاریخی و مرکزی جامع مسجد میں نماز جمعہ ادا کرنے کی اجازت نہیں دی۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ وادی کشمیر کی تمام مذہبی جماعتوں کے سربراہان نے جمعرات کو اپنے ایک مشترکہ بیان میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان پر شدید برہمی کا اظہار کیا تھا ۔

  • ساتھ ہی ساتھ علاحدگی پسندوں نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف 8دسمبر جمعہ کو پورے کشمیر میں یوم احتجاج کے طور پر منانے اور نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام مرکزی مساجد ، خانقاہوں ، امام بارگاہوں اور آستانوں میں ایک مذمتی قرارداد پیش کرنے کا اعلان کیا تھا تاکہ مجروح مسلم جذبات اور احساسات کی ترجمانی کے ساتھ ساتھ مسلم امہ کی ناراضگی کا برملا اظہار کیا جاسکے۔

    ساتھ ہی ساتھ علاحدگی پسندوں نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف 8دسمبر جمعہ کو پورے کشمیر میں یوم احتجاج کے طور پر منانے اور نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام مرکزی مساجد ، خانقاہوں ، امام بارگاہوں اور آستانوں میں ایک مذمتی قرارداد پیش کرنے کا اعلان کیا تھا تاکہ مجروح مسلم جذبات اور احساسات کی ترجمانی کے ساتھ ساتھ مسلم امہ کی ناراضگی کا برملا اظہار کیا جاسکے۔

  • اس کے علاوہ کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے بھی امریکی صدر کے اعلان پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہروں کی اپیل کی تھی۔

    اس کے علاوہ کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے بھی امریکی صدر کے اعلان پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہروں کی اپیل کی تھی۔

  • کشمیر انتظامیہ نے احتجاج کے دوران پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر پائین شہر کے تین پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں جمعہ کی صبح ہی سخت ترین پابندیاں نافذ کیں۔

    کشمیر انتظامیہ نے احتجاج کے دوران پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر پائین شہر کے تین پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں جمعہ کی صبح ہی سخت ترین پابندیاں نافذ کیں۔

  • حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ ، جو ہر جمعہ کو نماز کی ادائیگی سے قبل تاریخی جامع مسجد میں نمازیوں سے خطاب کرتے ہیں، کو جمعرات کی شام ہی اپنی رہائش گاہ پر نظربند کردیا گیا تھا۔ بڑے پیمانے کے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے متعدد دیگر علیحدگی پسند لیڈران اور کارکنوں کو تھانہ یا خانہ نظربند رکھا گیا۔

    حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ ، جو ہر جمعہ کو نماز کی ادائیگی سے قبل تاریخی جامع مسجد میں نمازیوں سے خطاب کرتے ہیں، کو جمعرات کی شام ہی اپنی رہائش گاہ پر نظربند کردیا گیا تھا۔ بڑے پیمانے کے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے متعدد دیگر علیحدگی پسند لیڈران اور کارکنوں کو تھانہ یا خانہ نظربند رکھا گیا۔

  • حریت کانفرنس (گ) چیئرمین مسٹر گیلانی گذشتہ متعدد برسوں سے خانہ نظربند ہیں۔ پابندیوں کے نفاذ کے طور پر پائین شہر کی بیشتر سڑکوں کو جمعہ کی صبح ہی سیل کردیا گیا تھا جبکہ ان پر لوگوں کی نقل وحرکت کو روکنے کے لئے بڑی تعداد میں سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں کی نفری تعینات کی گئی تھی۔

    حریت کانفرنس (گ) چیئرمین مسٹر گیلانی گذشتہ متعدد برسوں سے خانہ نظربند ہیں۔ پابندیوں کے نفاذ کے طور پر پائین شہر کی بیشتر سڑکوں کو جمعہ کی صبح ہی سیل کردیا گیا تھا جبکہ ان پر لوگوں کی نقل وحرکت کو روکنے کے لئے بڑی تعداد میں سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں کی نفری تعینات کی گئی تھی۔

  • نوہٹہ کے مقامی لوگوں نے بتایا کہ تاریخی جامع مسجد کے دروازوں کو جمعہ کی صبح ہی مقفل کردیا گیا تھا۔ مسجد انتظامیہ کمیٹی کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ہم نے فجر کی نماز جامع مسجد کے اندر ہی ادا کی۔ لیکن فجر نماز ادا کرنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جامع مسجد کو بند کردیا‘۔

    نوہٹہ کے مقامی لوگوں نے بتایا کہ تاریخی جامع مسجد کے دروازوں کو جمعہ کی صبح ہی مقفل کردیا گیا تھا۔ مسجد انتظامیہ کمیٹی کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ہم نے فجر کی نماز جامع مسجد کے اندر ہی ادا کی۔ لیکن فجر نماز ادا کرنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جامع مسجد کو بند کردیا‘۔

  • انجمن اوقاف جامع مسجد کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ’تاریخی جامع مسجد میں آج پیغمبر اسلام (ص) کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے ایک خصوصی مجلس رحمت العالمین (ص) منعقد ہونے والی تھی جس میں میرواعظ خصوصی طور خطاب کرنے والے تھے‘۔

    انجمن اوقاف جامع مسجد کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ’تاریخی جامع مسجد میں آج پیغمبر اسلام (ص) کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے ایک خصوصی مجلس رحمت العالمین (ص) منعقد ہونے والی تھی جس میں میرواعظ خصوصی طور خطاب کرنے والے تھے‘۔

  • انہوں نے بتایا کہ انتظامیہ نے پائین شہر میں کرفیو جیسی پابندیاں اور میرواعظ کو نظربند کرکے اس دینی تقریب کے انعقاد کو روک دیا‘۔ اس دوران میرواعظ نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ’آمرانہ حکومت نے ایک بار پھر شرمناک آپریٹنگ پروسیجر کا سہارا لیکر پابندیاں نافذ کیں اور جامع مسجد میں مسلمانوں کو جبری طور پر نماز جمعہ ادا کرنے سے روک دیا۔

    انہوں نے بتایا کہ انتظامیہ نے پائین شہر میں کرفیو جیسی پابندیاں اور میرواعظ کو نظربند کرکے اس دینی تقریب کے انعقاد کو روک دیا‘۔ اس دوران میرواعظ نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ’آمرانہ حکومت نے ایک بار پھر شرمناک آپریٹنگ پروسیجر کا سہارا لیکر پابندیاں نافذ کیں اور جامع مسجد میں مسلمانوں کو جبری طور پر نماز جمعہ ادا کرنے سے روک دیا۔

  • file photo

    file photo

  • ساتھ ہی ساتھ علاحدگی پسندوں نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف 8دسمبر جمعہ کو پورے کشمیر میں یوم احتجاج کے طور پر منانے اور نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام مرکزی مساجد ، خانقاہوں ، امام بارگاہوں اور آستانوں میں ایک مذمتی قرارداد پیش کرنے کا اعلان کیا تھا تاکہ مجروح مسلم جذبات اور احساسات کی ترجمانی کے ساتھ ساتھ مسلم امہ کی ناراضگی کا برملا اظہار کیا جاسکے۔
  • اس کے علاوہ کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے بھی امریکی صدر کے اعلان پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہروں کی اپیل کی تھی۔
  • کشمیر انتظامیہ نے احتجاج کے دوران پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر پائین شہر کے تین پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں جمعہ کی صبح ہی سخت ترین پابندیاں نافذ کیں۔
  • حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ ، جو ہر جمعہ کو نماز کی ادائیگی سے قبل تاریخی جامع مسجد میں نمازیوں سے خطاب کرتے ہیں، کو جمعرات کی شام ہی اپنی رہائش گاہ پر نظربند کردیا گیا تھا۔ بڑے پیمانے کے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے متعدد دیگر علیحدگی پسند لیڈران اور کارکنوں کو تھانہ یا خانہ نظربند رکھا گیا۔
  • حریت کانفرنس (گ) چیئرمین مسٹر گیلانی گذشتہ متعدد برسوں سے خانہ نظربند ہیں۔ پابندیوں کے نفاذ کے طور پر پائین شہر کی بیشتر سڑکوں کو جمعہ کی صبح ہی سیل کردیا گیا تھا جبکہ ان پر لوگوں کی نقل وحرکت کو روکنے کے لئے بڑی تعداد میں سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں کی نفری تعینات کی گئی تھی۔
  • نوہٹہ کے مقامی لوگوں نے بتایا کہ تاریخی جامع مسجد کے دروازوں کو جمعہ کی صبح ہی مقفل کردیا گیا تھا۔ مسجد انتظامیہ کمیٹی کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ہم نے فجر کی نماز جامع مسجد کے اندر ہی ادا کی۔ لیکن فجر نماز ادا کرنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جامع مسجد کو بند کردیا‘۔
  • انجمن اوقاف جامع مسجد کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ’تاریخی جامع مسجد میں آج پیغمبر اسلام (ص) کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے ایک خصوصی مجلس رحمت العالمین (ص) منعقد ہونے والی تھی جس میں میرواعظ خصوصی طور خطاب کرنے والے تھے‘۔
  • انہوں نے بتایا کہ انتظامیہ نے پائین شہر میں کرفیو جیسی پابندیاں اور میرواعظ کو نظربند کرکے اس دینی تقریب کے انعقاد کو روک دیا‘۔ اس دوران میرواعظ نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ’آمرانہ حکومت نے ایک بار پھر شرمناک آپریٹنگ پروسیجر کا سہارا لیکر پابندیاں نافذ کیں اور جامع مسجد میں مسلمانوں کو جبری طور پر نماز جمعہ ادا کرنے سے روک دیا۔
  • file photo

تازہ ترین تصاویر