ڈاکٹر سیمہ صادق : شہروں کی چکاچوند چھوڑ دیہاتوں میں طبی علاج اور سماجی خدمات انجام دے کر بنیں ایک مثال

Mar 06, 2017 07:30 PM IST
1 of 13
  • شہروں کی چکاچوند اور عیش وآرام کی زندگی میں رہنے والوں کے لئے ڈاکٹرسیمہ صادق ایک مثال ہیں ۔ ڈاکٹر سمیہ میٹرو سٹی میں رہ کر بھی گاؤں اور دیہاتوں میں ایسے ایسے سماجی کام انجام دے رہی ہیں، جس کی طرف شاید کبھی کسی نے سوچا بھی نہیں ہوگا۔ طبی خدمات ہوں ، یا تعلیم یا پھر روزگار ، ہر شعبہ میں ڈاکٹر سمیہ گاوں کے نوجوانوں اور خواتین کی خدمت کررہی ہیں۔

    شہروں کی چکاچوند اور عیش وآرام کی زندگی میں رہنے والوں کے لئے ڈاکٹرسیمہ صادق ایک مثال ہیں ۔ ڈاکٹر سمیہ میٹرو سٹی میں رہ کر بھی گاؤں اور دیہاتوں میں ایسے ایسے سماجی کام انجام دے رہی ہیں، جس کی طرف شاید کبھی کسی نے سوچا بھی نہیں ہوگا۔ طبی خدمات ہوں ، یا تعلیم یا پھر روزگار ، ہر شعبہ میں ڈاکٹر سمیہ گاوں کے نوجوانوں اور خواتین کی خدمت کررہی ہیں۔

  • سابق رکن پارلیمنٹ پریہ دت اور دیگر اہم شخصیات نے بھی ڈاکٹرسیمہ کی سماجی خدمات کی تعریف کی ہے۔

    سابق رکن پارلیمنٹ پریہ دت اور دیگر اہم شخصیات نے بھی ڈاکٹرسیمہ کی سماجی خدمات کی تعریف کی ہے۔

  • دیہی علاقوں میں کام کرنے کیلئے ڈاکٹر سمیہ کو کئی ایوارڈ سے بھی نوازاجاچکا ہے۔

    دیہی علاقوں میں کام کرنے کیلئے ڈاکٹر سمیہ کو کئی ایوارڈ سے بھی نوازاجاچکا ہے۔

  • ڈاکٹرسیمہ کا تعلق بنگلورو کےایک تعلیم یافتہ اورخوشحال گھرانے سے ہے۔

    ڈاکٹرسیمہ کا تعلق بنگلورو کےایک تعلیم یافتہ اورخوشحال گھرانے سے ہے۔

  • ایم بی بی ایس کی تعلیم کےبعد ڈاکٹر سیمہ نےآسٹریلیا اورانڈونیشیا میں فنکشنل میڈیسن میں اعلی تعلیم حاصل کی۔

    ایم بی بی ایس کی تعلیم کےبعد ڈاکٹر سیمہ نےآسٹریلیا اورانڈونیشیا میں فنکشنل میڈیسن میں اعلی تعلیم حاصل کی۔

  • بنگلورو لوٹنے کے بعد اِسکن سے وابستہ امراض کا کلینک قائم کیا ۔

    بنگلورو لوٹنے کے بعد اِسکن سے وابستہ امراض کا کلینک قائم کیا ۔

  •  ایک دن ڈاکٹر سیمہ کو دیہات سے آئے مریضوں نے مشورہ دیا کہ وہ دیہی علاقوں کیلئے کچھ کام کریں ۔

    ایک دن ڈاکٹر سیمہ کو دیہات سے آئے مریضوں نے مشورہ دیا کہ وہ دیہی علاقوں کیلئے کچھ کام کریں ۔

  • بس کیا تھا ، ڈاکٹر سمیہ دیہات کیلئے نکل پڑیں اور وہاں جاکر ہیلتھ کیمپ منعقد کرنےلگیں ۔

    بس کیا تھا ، ڈاکٹر سمیہ دیہات کیلئے نکل پڑیں اور وہاں جاکر ہیلتھ کیمپ منعقد کرنےلگیں ۔

  •  ایک دیہات میں جب خواتین نےکہا کہ انہیں ہیلتھ کیمپ کی نہیں ، بلکہ تعلیم اور روزگار کی ضرورت ہے ، توسیمہ نے سماجی خدمات کا سلسلہ شروع کیا۔

    ایک دیہات میں جب خواتین نےکہا کہ انہیں ہیلتھ کیمپ کی نہیں ، بلکہ تعلیم اور روزگار کی ضرورت ہے ، توسیمہ نے سماجی خدمات کا سلسلہ شروع کیا۔

  • دیہاتوں کی درد اور  مشکلات سے گھری زندگی کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹر سیمہ نے نما میترا یعنی ہمارا دوست نامی ایک سماجی ادارہ قائم کیا ۔

    دیہاتوں کی درد اور مشکلات سے گھری زندگی کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹر سیمہ نے نما میترا یعنی ہمارا دوست نامی ایک سماجی ادارہ قائم کیا ۔

  •  اس ادارے کے تحت بلگام اور دھارواڈ اضلاع میں بجلی سے محروم چار گاوں میں سولار گریڈ قائم کیے گئے ہیں ۔

    اس ادارے کے تحت بلگام اور دھارواڈ اضلاع میں بجلی سے محروم چار گاوں میں سولار گریڈ قائم کیے گئے ہیں ۔

  •  بے روزگار نوجوانوں کے لیےموبائیل ریپیئریونٹ، خواتین کے لیے ٹیلرنگ کلاسس، طلبہ کے لیےٹیوشن کلاسز وغیرہ کئی کام انجام دئےجارہے ہیں۔

    بے روزگار نوجوانوں کے لیےموبائیل ریپیئریونٹ، خواتین کے لیے ٹیلرنگ کلاسس، طلبہ کے لیےٹیوشن کلاسز وغیرہ کئی کام انجام دئےجارہے ہیں۔

  • ڈاکٹرسیمہ نے شہروں کی چکاچوند میں رہنے والےلوگوں سے اپنے گاؤں اور دیہات کونہ بھولنےکی اپیل بھی کی۔

    ڈاکٹرسیمہ نے شہروں کی چکاچوند میں رہنے والےلوگوں سے اپنے گاؤں اور دیہات کونہ بھولنےکی اپیل بھی کی۔

  • سابق رکن پارلیمنٹ پریہ دت اور دیگر اہم شخصیات نے بھی ڈاکٹرسیمہ کی سماجی خدمات کی تعریف کی ہے۔
  • دیہی علاقوں میں کام کرنے کیلئے ڈاکٹر سمیہ کو کئی ایوارڈ سے بھی نوازاجاچکا ہے۔
  • ڈاکٹرسیمہ کا تعلق بنگلورو کےایک تعلیم یافتہ اورخوشحال گھرانے سے ہے۔
  • ایم بی بی ایس کی تعلیم کےبعد ڈاکٹر سیمہ نےآسٹریلیا اورانڈونیشیا میں فنکشنل میڈیسن میں اعلی تعلیم حاصل کی۔
  • بنگلورو لوٹنے کے بعد اِسکن سے وابستہ امراض کا کلینک قائم کیا ۔
  •  ایک دن ڈاکٹر سیمہ کو دیہات سے آئے مریضوں نے مشورہ دیا کہ وہ دیہی علاقوں کیلئے کچھ کام کریں ۔
  • بس کیا تھا ، ڈاکٹر سمیہ دیہات کیلئے نکل پڑیں اور وہاں جاکر ہیلتھ کیمپ منعقد کرنےلگیں ۔
  •  ایک دیہات میں جب خواتین نےکہا کہ انہیں ہیلتھ کیمپ کی نہیں ، بلکہ تعلیم اور روزگار کی ضرورت ہے ، توسیمہ نے سماجی خدمات کا سلسلہ شروع کیا۔
  • دیہاتوں کی درد اور  مشکلات سے گھری زندگی کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹر سیمہ نے نما میترا یعنی ہمارا دوست نامی ایک سماجی ادارہ قائم کیا ۔
  •  اس ادارے کے تحت بلگام اور دھارواڈ اضلاع میں بجلی سے محروم چار گاوں میں سولار گریڈ قائم کیے گئے ہیں ۔
  •  بے روزگار نوجوانوں کے لیےموبائیل ریپیئریونٹ، خواتین کے لیے ٹیلرنگ کلاسس، طلبہ کے لیےٹیوشن کلاسز وغیرہ کئی کام انجام دئےجارہے ہیں۔
  • ڈاکٹرسیمہ نے شہروں کی چکاچوند میں رہنے والےلوگوں سے اپنے گاؤں اور دیہات کونہ بھولنےکی اپیل بھی کی۔

تازہ ترین تصاویر