ممبرا میں رمضان کے پیش نظر پھلوں کے دام آسمان پر، بازارمیں صارفین کا اژدہام لیکن کاروبار مندہ

Jun 12, 2017 11:06 PM IST
1 of 6
  • ملک میں برق رفتاری سے بڑھتی مہنگائی اوردوسری جانب کاروباری مندی نےعام، متوسط اورغریب طبقہ کے لوگوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے ۔ ایسے میں تہوار، اسکول اور دیگر ضروریات کو پورا کرنے کے لئے لوگوں کو انتہائی دشواریوں سے گزرنا پڑ رہا ہے ۔

    ملک میں برق رفتاری سے بڑھتی مہنگائی اوردوسری جانب کاروباری مندی نےعام، متوسط اورغریب طبقہ کے لوگوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے ۔ ایسے میں تہوار، اسکول اور دیگر ضروریات کو پورا کرنے کے لئے لوگوں کو انتہائی دشواریوں سے گزرنا پڑ رہا ہے ۔

  • اس کا صاف اثر رمضان میں بھی دیکھنے کو مل رہا ہے ۔ بازاروں میں صارفین کی بھیڑ تو کافی ہے لیکن کاروبار مندہ ہے ۔

    اس کا صاف اثر رمضان میں بھی دیکھنے کو مل رہا ہے ۔ بازاروں میں صارفین کی بھیڑ تو کافی ہے لیکن کاروبار مندہ ہے ۔

  • ایک طرف مہنگائی تو دوسری جانب رمضان ، کسانوں کی ہڑ تال ، نوٹ بندی ان سب نے پھلوں و دیگر اشیا کے داموں میں زبردست اضافہ کردیا ہے ۔

    ایک طرف مہنگائی تو دوسری جانب رمضان ، کسانوں کی ہڑ تال ، نوٹ بندی ان سب نے پھلوں و دیگر اشیا کے داموں میں زبردست اضافہ کردیا ہے ۔

  • مہاراشٹر میں15 جون سے اسکول بھی کھل رہے ہیں، جس کی وجہ سے لوگوں کی پریشانیاں اور بھی بڑھ گئی ہیں۔

    مہاراشٹر میں15 جون سے اسکول بھی کھل رہے ہیں، جس کی وجہ سے لوگوں کی پریشانیاں اور بھی بڑھ گئی ہیں۔

  • لوگوں کو بیک وقت اسکول، افطار اورعید کی تیاری کیلئے کئی کئی اخراجات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، جس کی وجہ سے افطار مارکیٹ میں لوگ پھل اتنا ہی خرید رہے ہیں ، جتنی کہ انہیں ضرورت ہے ۔

    لوگوں کو بیک وقت اسکول، افطار اورعید کی تیاری کیلئے کئی کئی اخراجات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، جس کی وجہ سے افطار مارکیٹ میں لوگ پھل اتنا ہی خرید رہے ہیں ، جتنی کہ انہیں ضرورت ہے ۔

  • لوگوں کا کہنا ہے کہ رمضان کے پیش نظر جب پھلوں کی مارکیٹ بے حد اضافہ ہوجاتا ہے ، تو اس کے دام میں کمی ہونی چاہئے ، لیکن ایسا نہیں ہے ، جس کی وجہ سے عام و متوسط طبقہ کے شہری کافی پریشان ہیں ۔

    لوگوں کا کہنا ہے کہ رمضان کے پیش نظر جب پھلوں کی مارکیٹ بے حد اضافہ ہوجاتا ہے ، تو اس کے دام میں کمی ہونی چاہئے ، لیکن ایسا نہیں ہے ، جس کی وجہ سے عام و متوسط طبقہ کے شہری کافی پریشان ہیں ۔

  • اس کا صاف اثر رمضان میں بھی دیکھنے کو مل رہا ہے ۔ بازاروں میں صارفین کی بھیڑ تو کافی ہے لیکن کاروبار مندہ ہے ۔
  • ایک طرف مہنگائی تو دوسری جانب رمضان ، کسانوں کی ہڑ تال ، نوٹ بندی ان سب نے پھلوں و دیگر اشیا کے داموں میں زبردست اضافہ کردیا ہے ۔
  • مہاراشٹر میں15 جون سے اسکول بھی کھل رہے ہیں، جس کی وجہ سے لوگوں کی پریشانیاں اور بھی بڑھ گئی ہیں۔
  • لوگوں کو بیک وقت اسکول، افطار اورعید کی تیاری کیلئے کئی کئی اخراجات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، جس کی وجہ سے افطار مارکیٹ میں لوگ پھل اتنا ہی خرید رہے ہیں ، جتنی کہ انہیں ضرورت ہے ۔
  • لوگوں کا کہنا ہے کہ رمضان کے پیش نظر جب پھلوں کی مارکیٹ بے حد اضافہ ہوجاتا ہے ، تو اس کے دام میں کمی ہونی چاہئے ، لیکن ایسا نہیں ہے ، جس کی وجہ سے عام و متوسط طبقہ کے شہری کافی پریشان ہیں ۔

تازہ ترین تصاویر