اے ایم یو طلبہ اور سماجی کارکنان کی طارق فتح کے پروگرام کی شدید مخالفت ، ضلع کلکٹریٹ کے باہر احتجاج

Jun 08, 2017 11:25 PM IST
1 of 8
  • سماجوادی پارٹی طلبہ سیل، کانگریس پارٹی، این ایس یو آئی اورشہر کی سماجی تنظیموں کی جانب سے آج ضلع کلکٹریٹ پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اور 11جون کو طارق فتح کے پروگرام کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہو ئے پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔ ساتھ ہی ساتھ ضلع انتظامیہ کو ایک عرضداشت بھی دی گئی ۔

    سماجوادی پارٹی طلبہ سیل، کانگریس پارٹی، این ایس یو آئی اورشہر کی سماجی تنظیموں کی جانب سے آج ضلع کلکٹریٹ پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اور 11جون کو طارق فتح کے پروگرام کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہو ئے پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔ ساتھ ہی ساتھ ضلع انتظامیہ کو ایک عرضداشت بھی دی گئی ۔

  • مظاہرین کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کے بابرکت مہینہ میں مسلمانانِ علی گڑھ کی دل آزادی کی سازش کے تحت بدنام زمانہ طارق فتح کو بلایا جارہا ہے ، جو بھارتیہ جنتا پارٹی اور آر ایس ایس کی ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔

    مظاہرین کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کے بابرکت مہینہ میں مسلمانانِ علی گڑھ کی دل آزادی کی سازش کے تحت بدنام زمانہ طارق فتح کو بلایا جارہا ہے ، جو بھارتیہ جنتا پارٹی اور آر ایس ایس کی ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔

  • احتجاج کررہے لوگوں کا کہنا تھا کہ تعلیمی ادارے میں ہر مذہب اور طبقہ کے طلبہ زیر تعلیم ہوتے ہیں ، ایسے میں کسی متنازع شخص کو بلانا طلبہ کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے مترادف ہے ۔

    احتجاج کررہے لوگوں کا کہنا تھا کہ تعلیمی ادارے میں ہر مذہب اور طبقہ کے طلبہ زیر تعلیم ہوتے ہیں ، ایسے میں کسی متنازع شخص کو بلانا طلبہ کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے مترادف ہے ۔

  • انھوں نے کہا کہ پاکستان ہندوستانی فوجیوں کے سر کاٹ رہا ہے اور ہم پاکستان کے باشندے کو علی گڑھ میں قطعی برداشت نہیں کریں گے کہ اس طرح کا شخص ہمارے ملک میں آئے اور ہمارے ہی بھائی بہن اس کی مہمان نوازی کریں ۔ یہ ہمارے شہیدوں کو بے عزت کرنے کے مترادف ہے ۔

    انھوں نے کہا کہ پاکستان ہندوستانی فوجیوں کے سر کاٹ رہا ہے اور ہم پاکستان کے باشندے کو علی گڑھ میں قطعی برداشت نہیں کریں گے کہ اس طرح کا شخص ہمارے ملک میں آئے اور ہمارے ہی بھائی بہن اس کی مہمان نوازی کریں ۔ یہ ہمارے شہیدوں کو بے عزت کرنے کے مترادف ہے ۔

  • سماجی کارکنان کا کہنا تھا کہا کہ شہرعرصہ دراز سے پر امن ہے ۔ ایسے میں شرپسند عناصر ہندو مسلم تفریق پیدا کرنا چاہتے ہیں ، جو کسی بھی طرح برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ شہر کے مسلمان طارق فتح کو علی گڑھ میں داخل نہیں ہونے دیں گے۔

    سماجی کارکنان کا کہنا تھا کہا کہ شہرعرصہ دراز سے پر امن ہے ۔ ایسے میں شرپسند عناصر ہندو مسلم تفریق پیدا کرنا چاہتے ہیں ، جو کسی بھی طرح برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ شہر کے مسلمان طارق فتح کو علی گڑھ میں داخل نہیں ہونے دیں گے۔

  • مظاہرین کا کہنا تھا کہ ماہ رمضان میں طارق فتح کا پروگرام رکھنا ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔ طارق فتح اسلام کے خلاف اپنے خیالات کا اظہار کرکے مسلمانوں کی دل آزاری کرتا رہا ہے ۔

    مظاہرین کا کہنا تھا کہ ماہ رمضان میں طارق فتح کا پروگرام رکھنا ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔ طارق فتح اسلام کے خلاف اپنے خیالات کا اظہار کرکے مسلمانوں کی دل آزاری کرتا رہا ہے ۔

  • اس پروگرام کے ذریعہ مزید اشتعال انگیزی کا خدشہ ہے۔ اس لئے ضلع انتظامیہ سے مطالبہ ہے کہ وہ شہر کے امن و امان کو برقرار رکھنے کے لئے اس طر ح کے کسی پروگرام کی اجازت نہ دے۔

    اس پروگرام کے ذریعہ مزید اشتعال انگیزی کا خدشہ ہے۔ اس لئے ضلع انتظامیہ سے مطالبہ ہے کہ وہ شہر کے امن و امان کو برقرار رکھنے کے لئے اس طر ح کے کسی پروگرام کی اجازت نہ دے۔

  • کانگریس پارٹی کے ضلع نائب صدر حاجی ارشاد خاں نے کہا کہ علی گڑھ امن پسند شہر ہے ۔ ایسے میں متنازع طارق فتح کا علی گڑھ آنا شہر کی فضاء کے لئے مناسب نہیں ہے وہ جس طرح کی بیان بازی کرتا ہے وہ اسلام مخالف ہے ۔

    کانگریس پارٹی کے ضلع نائب صدر حاجی ارشاد خاں نے کہا کہ علی گڑھ امن پسند شہر ہے ۔ ایسے میں متنازع طارق فتح کا علی گڑھ آنا شہر کی فضاء کے لئے مناسب نہیں ہے وہ جس طرح کی بیان بازی کرتا ہے وہ اسلام مخالف ہے ۔

  • مظاہرین کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کے بابرکت مہینہ میں مسلمانانِ علی گڑھ کی دل آزادی کی سازش کے تحت بدنام زمانہ طارق فتح کو بلایا جارہا ہے ، جو بھارتیہ جنتا پارٹی اور آر ایس ایس کی ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔
  • احتجاج کررہے لوگوں کا کہنا تھا کہ تعلیمی ادارے میں ہر مذہب اور طبقہ کے طلبہ زیر تعلیم ہوتے ہیں ، ایسے میں کسی متنازع شخص کو بلانا طلبہ کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے مترادف ہے ۔
  • انھوں نے کہا کہ پاکستان ہندوستانی فوجیوں کے سر کاٹ رہا ہے اور ہم پاکستان کے باشندے کو علی گڑھ میں قطعی برداشت نہیں کریں گے کہ اس طرح کا شخص ہمارے ملک میں آئے اور ہمارے ہی بھائی بہن اس کی مہمان نوازی کریں ۔ یہ ہمارے شہیدوں کو بے عزت کرنے کے مترادف ہے ۔
  • سماجی کارکنان کا کہنا تھا کہا کہ شہرعرصہ دراز سے پر امن ہے ۔ ایسے میں شرپسند عناصر ہندو مسلم تفریق پیدا کرنا چاہتے ہیں ، جو کسی بھی طرح برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ شہر کے مسلمان طارق فتح کو علی گڑھ میں داخل نہیں ہونے دیں گے۔
  • مظاہرین کا کہنا تھا کہ ماہ رمضان میں طارق فتح کا پروگرام رکھنا ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔ طارق فتح اسلام کے خلاف اپنے خیالات کا اظہار کرکے مسلمانوں کی دل آزاری کرتا رہا ہے ۔
  • اس پروگرام کے ذریعہ مزید اشتعال انگیزی کا خدشہ ہے۔ اس لئے ضلع انتظامیہ سے مطالبہ ہے کہ وہ شہر کے امن و امان کو برقرار رکھنے کے لئے اس طر ح کے کسی پروگرام کی اجازت نہ دے۔
  • کانگریس پارٹی کے ضلع نائب صدر حاجی ارشاد خاں نے کہا کہ علی گڑھ امن پسند شہر ہے ۔ ایسے میں متنازع طارق فتح کا علی گڑھ آنا شہر کی فضاء کے لئے مناسب نہیں ہے وہ جس طرح کی بیان بازی کرتا ہے وہ اسلام مخالف ہے ۔

تازہ ترین تصاویر