اب اس نئی وجہ سے موضوع بحث بنی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی

May 12, 2017 04:14 PM IST
1 of 12
  • سال 2020 میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے 100 سال پورے ہو جائیں گے۔ خاص بات یہ ہے کہ مسلمانوں کے درمیان مارڈن ایجوکیشن کے لئے قائم کی گئی یہ یونیورسٹی کئی طرح کے تنازعات کی خبروں کے درمیان ان دنوں نئی ​​وجہ سے موضوع بحث ہے۔

    سال 2020 میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے 100 سال پورے ہو جائیں گے۔ خاص بات یہ ہے کہ مسلمانوں کے درمیان مارڈن ایجوکیشن کے لئے قائم کی گئی یہ یونیورسٹی کئی طرح کے تنازعات کی خبروں کے درمیان ان دنوں نئی ​​وجہ سے موضوع بحث ہے۔

  • علی گڑھ میں واقع ملک کی واحد مسلم یونیورسٹی میں ان دنوں نینو ٹیکنالوجي اور شمسی توانائی جیسے میدان میں اہم اور ليڈنگ ریسرچ کے کام ہو رہے ہیں۔

    علی گڑھ میں واقع ملک کی واحد مسلم یونیورسٹی میں ان دنوں نینو ٹیکنالوجي اور شمسی توانائی جیسے میدان میں اہم اور ليڈنگ ریسرچ کے کام ہو رہے ہیں۔

  • اے ایم یو نینو سائنٹیفک ریسرچ پر توجہ مرکوز کی ہے۔ ان میں ماحول دوست اور کم پیسہ خرچ کر کے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے پانی کے بحران کا حل ڈھونڈنے اور استعمال ہو چکے پانی کو ریسائیكل کرنے کا طریقہ ڈھونڈا جانا بھی شامل ہے۔

    اے ایم یو نینو سائنٹیفک ریسرچ پر توجہ مرکوز کی ہے۔ ان میں ماحول دوست اور کم پیسہ خرچ کر کے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے پانی کے بحران کا حل ڈھونڈنے اور استعمال ہو چکے پانی کو ریسائیكل کرنے کا طریقہ ڈھونڈا جانا بھی شامل ہے۔

  • اے ایم یو کے وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ضميرالدين شاہ کہتے ہیں کہ ہمیں سماجی سائنس کے ساتھ ساتھ عملی سائنس (اپلائیڈ سائنس) میں اچھے ریسرچ کو فروغ دینے کی ضرورت ہے اور ہم ایسا کر رہے ہیں۔ انہیں امید ہے کہ سال 2020 تک یہ یونیورسٹی دنیا کی 200 ٹاپ یونیورسیٹیوں میں سے ایک ہوگی۔

    اے ایم یو کے وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ضميرالدين شاہ کہتے ہیں کہ ہمیں سماجی سائنس کے ساتھ ساتھ عملی سائنس (اپلائیڈ سائنس) میں اچھے ریسرچ کو فروغ دینے کی ضرورت ہے اور ہم ایسا کر رہے ہیں۔ انہیں امید ہے کہ سال 2020 تک یہ یونیورسٹی دنیا کی 200 ٹاپ یونیورسیٹیوں میں سے ایک ہوگی۔

  • شاہ بتاتے ہیں یونیورسٹی نے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے سمندر کے پانی کے نمکین پانی کو پینے کے قابل بنانے کے لئے پروجیکٹ کو ہاتھ میں لیا ہے۔

    شاہ بتاتے ہیں یونیورسٹی نے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے سمندر کے پانی کے نمکین پانی کو پینے کے قابل بنانے کے لئے پروجیکٹ کو ہاتھ میں لیا ہے۔

  • یہ ملک کے ساحلی شہروں کی تصویر بدلنے والی ثابت ہوگی اور انہیں کم قیمت پر پینے کا پانی فراہم کرائے گی۔ وہ کہتے ہیں کہ یہ منصوبہ یقینی بنائے گا کہ ہندوستان کے پاس پینے کے پانی کے کافی وسائل موجود ہیں۔

    یہ ملک کے ساحلی شہروں کی تصویر بدلنے والی ثابت ہوگی اور انہیں کم قیمت پر پینے کا پانی فراہم کرائے گی۔ وہ کہتے ہیں کہ یہ منصوبہ یقینی بنائے گا کہ ہندوستان کے پاس پینے کے پانی کے کافی وسائل موجود ہیں۔

  • شاہ کے مطابق اے ایم یو کے سائنٹسٹ نے پلانٹ ٹیکنالوجی کی مدد سے گندے پانی کی ری سائیکلنگ میں قابل ذکر کامیابی حاصل کی ہے۔ خیال رہے کہ انڈیا میں یوروپی یونین کی فائنانسنگ سے سیونگس نام کی ایک اسکیم جاری ہے۔ اس میں خراب پانی کی صفائی کے لئے سستا اور مستقل حل دینے والی ٹیکنالوجی پر زور دیا جا رہا ہے۔

    شاہ کے مطابق اے ایم یو کے سائنٹسٹ نے پلانٹ ٹیکنالوجی کی مدد سے گندے پانی کی ری سائیکلنگ میں قابل ذکر کامیابی حاصل کی ہے۔ خیال رہے کہ انڈیا میں یوروپی یونین کی فائنانسنگ سے سیونگس نام کی ایک اسکیم جاری ہے۔ اس میں خراب پانی کی صفائی کے لئے سستا اور مستقل حل دینے والی ٹیکنالوجی پر زور دیا جا رہا ہے۔

  • اے ایم یو نے اپنے کیمپس میں اس اسکیم کو کامیابی سے نافذ کیا ہے۔ اس کے تحت کیمپس میں نکلنے والے گندے پانی کے صاف کرنے کے لئے احاطے میں پلانٹ لگایا گیا ہے۔ شاہ بتاتے ہیں کہ اے ایم یو شمسی توانائی کے شعبے میں تحقیق میں مصروف ہے۔

    اے ایم یو نے اپنے کیمپس میں اس اسکیم کو کامیابی سے نافذ کیا ہے۔ اس کے تحت کیمپس میں نکلنے والے گندے پانی کے صاف کرنے کے لئے احاطے میں پلانٹ لگایا گیا ہے۔ شاہ بتاتے ہیں کہ اے ایم یو شمسی توانائی کے شعبے میں تحقیق میں مصروف ہے۔

  • ضمیر الدین شاہ بتاتے ہیں کہ وہ آٹوموبائل سیکٹر کے لئے شمسی توانائی پر تحقیق کر رہے ہیں۔ ایک مرتبہ جب یہ پروجیکٹ مکمل ہو جائے گا ، تو ہم آپ کی گاڑی کی بیٹري کو 20 منٹ میں چارج کر سکیں گے۔ اس میں فی الحال چھ گھنٹے کا وقت لگتا ہے۔

    ضمیر الدین شاہ بتاتے ہیں کہ وہ آٹوموبائل سیکٹر کے لئے شمسی توانائی پر تحقیق کر رہے ہیں۔ ایک مرتبہ جب یہ پروجیکٹ مکمل ہو جائے گا ، تو ہم آپ کی گاڑی کی بیٹري کو 20 منٹ میں چارج کر سکیں گے۔ اس میں فی الحال چھ گھنٹے کا وقت لگتا ہے۔

  • وائس چانسلر کہتے ہیں کہ بہترین سائنٹیفک ریسرچ پر زور کے ساتھ ساتھ مینجمنٹ کی توجہ اس مائنڈ سیٹ سے لڑنے پر بھی ہے کہ اے ایم یو میں شدت پسندی کو ہوا ملتی ہے۔

    وائس چانسلر کہتے ہیں کہ بہترین سائنٹیفک ریسرچ پر زور کے ساتھ ساتھ مینجمنٹ کی توجہ اس مائنڈ سیٹ سے لڑنے پر بھی ہے کہ اے ایم یو میں شدت پسندی کو ہوا ملتی ہے۔

  • وہ کہتے ہیں کہ بڑی حد تک اس تاثرمیں تبدیلی آئی ہے، لیکن ہمیں اپنے مسلم کردار پر فخر بھی ہے۔ يونورسٹي میں طالبات کے لئے اولمپک سطح کا سوئمنگ پول ہے۔ ساتھ ہی ان کے لئے الگ سے رائڈنگ کلب بھی ہے۔

    وہ کہتے ہیں کہ بڑی حد تک اس تاثرمیں تبدیلی آئی ہے، لیکن ہمیں اپنے مسلم کردار پر فخر بھی ہے۔ يونورسٹي میں طالبات کے لئے اولمپک سطح کا سوئمنگ پول ہے۔ ساتھ ہی ان کے لئے الگ سے رائڈنگ کلب بھی ہے۔

  • وہ کہتے ہیں کہ مدرسوں سے پڑھ کر آنے والے لڑکے لڑکیوں کو جدید تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے یونیورسٹی نے برج کورس شروع کیا ہے۔ شاہ 16 مئی کو ریٹائرڈ ہو رہے ہیں۔

    وہ کہتے ہیں کہ مدرسوں سے پڑھ کر آنے والے لڑکے لڑکیوں کو جدید تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے یونیورسٹی نے برج کورس شروع کیا ہے۔ شاہ 16 مئی کو ریٹائرڈ ہو رہے ہیں۔

  • علی گڑھ میں واقع ملک کی واحد مسلم یونیورسٹی میں ان دنوں نینو ٹیکنالوجي اور شمسی توانائی جیسے میدان میں اہم اور ليڈنگ ریسرچ کے کام ہو رہے ہیں۔
  • اے ایم یو نینو سائنٹیفک ریسرچ پر توجہ مرکوز کی ہے۔ ان میں ماحول دوست اور کم پیسہ خرچ کر کے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے پانی کے بحران کا حل ڈھونڈنے اور استعمال ہو چکے پانی کو ریسائیكل کرنے کا طریقہ ڈھونڈا جانا بھی شامل ہے۔
  • اے ایم یو کے وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ضميرالدين شاہ کہتے ہیں کہ ہمیں سماجی سائنس کے ساتھ ساتھ عملی سائنس (اپلائیڈ سائنس) میں اچھے ریسرچ کو فروغ دینے کی ضرورت ہے اور ہم ایسا کر رہے ہیں۔ انہیں امید ہے کہ سال 2020 تک یہ یونیورسٹی دنیا کی 200 ٹاپ یونیورسیٹیوں میں سے ایک ہوگی۔
  • شاہ بتاتے ہیں یونیورسٹی نے نینو ٹیکنالوجی کی مدد سے سمندر کے پانی کے نمکین پانی کو پینے کے قابل بنانے کے لئے پروجیکٹ کو ہاتھ میں لیا ہے۔
  • یہ ملک کے ساحلی شہروں کی تصویر بدلنے والی ثابت ہوگی اور انہیں کم قیمت پر پینے کا پانی فراہم کرائے گی۔ وہ کہتے ہیں کہ یہ منصوبہ یقینی بنائے گا کہ ہندوستان کے پاس پینے کے پانی کے کافی وسائل موجود ہیں۔
  • شاہ کے مطابق اے ایم یو کے سائنٹسٹ نے پلانٹ ٹیکنالوجی کی مدد سے گندے پانی کی ری سائیکلنگ میں قابل ذکر کامیابی حاصل کی ہے۔ خیال رہے کہ انڈیا میں یوروپی یونین کی فائنانسنگ سے سیونگس نام کی ایک اسکیم جاری ہے۔ اس میں خراب پانی کی صفائی کے لئے سستا اور مستقل حل دینے والی ٹیکنالوجی پر زور دیا جا رہا ہے۔
  • اے ایم یو نے اپنے کیمپس میں اس اسکیم کو کامیابی سے نافذ کیا ہے۔ اس کے تحت کیمپس میں نکلنے والے گندے پانی کے صاف کرنے کے لئے احاطے میں پلانٹ لگایا گیا ہے۔ شاہ بتاتے ہیں کہ اے ایم یو شمسی توانائی کے شعبے میں تحقیق میں مصروف ہے۔
  • ضمیر الدین شاہ بتاتے ہیں کہ وہ آٹوموبائل سیکٹر کے لئے شمسی توانائی پر تحقیق کر رہے ہیں۔ ایک مرتبہ جب یہ پروجیکٹ مکمل ہو جائے گا ، تو ہم آپ کی گاڑی کی بیٹري کو 20 منٹ میں چارج کر سکیں گے۔ اس میں فی الحال چھ گھنٹے کا وقت لگتا ہے۔
  • وائس چانسلر کہتے ہیں کہ بہترین سائنٹیفک ریسرچ پر زور کے ساتھ ساتھ مینجمنٹ کی توجہ اس مائنڈ سیٹ سے لڑنے پر بھی ہے کہ اے ایم یو میں شدت پسندی کو ہوا ملتی ہے۔
  • وہ کہتے ہیں کہ بڑی حد تک اس تاثرمیں تبدیلی آئی ہے، لیکن ہمیں اپنے مسلم کردار پر فخر بھی ہے۔ يونورسٹي میں طالبات کے لئے اولمپک سطح کا سوئمنگ پول ہے۔ ساتھ ہی ان کے لئے الگ سے رائڈنگ کلب بھی ہے۔
  • وہ کہتے ہیں کہ مدرسوں سے پڑھ کر آنے والے لڑکے لڑکیوں کو جدید تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے یونیورسٹی نے برج کورس شروع کیا ہے۔ شاہ 16 مئی کو ریٹائرڈ ہو رہے ہیں۔

تازہ ترین تصاویر