جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے خلاف ناندیڑ میں احتجاجی مورچہ کا اہتمام

Feb 28, 2017 07:57 PM IST
1 of 11
  • جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے معاملہ پر طلبہ تنظیم اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا کی جانب سے ملک گیر سطح پر احتجاج کیا جارہا ہے ۔اسی سلسلہ میں آج ناندیڑ میں ایک احتجاجی مورچہ کا اہتمام کیا گیا ۔ مورچہ میں ہزاروں کی تعداد میں طلبہ اور نوجوانوں نے شریک ہوکر نجیب کے حق میں انصاف کا مطالبہ کیا ۔

    جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے معاملہ پر طلبہ تنظیم اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا کی جانب سے ملک گیر سطح پر احتجاج کیا جارہا ہے ۔اسی سلسلہ میں آج ناندیڑ میں ایک احتجاجی مورچہ کا اہتمام کیا گیا ۔ مورچہ میں ہزاروں کی تعداد میں طلبہ اور نوجوانوں نے شریک ہوکر نجیب کے حق میں انصاف کا مطالبہ کیا ۔

  • جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے خلاف دہلی سے شروع ہونے والی تحریک اب ملک کے کونے کونے میں پہنچ گئی ہے ۔

    جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے خلاف دہلی سے شروع ہونے والی تحریک اب ملک کے کونے کونے میں پہنچ گئی ہے ۔

  • نجیب کی گمشدگی کے خلاف اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا نے ملک گیر سطح پر احتجاجی تحریک شروع کی ہے ۔

    نجیب کی گمشدگی کے خلاف اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا نے ملک گیر سطح پر احتجاجی تحریک شروع کی ہے ۔

  • اس کا ایک نظارہ آج ناندیڑ میں دیکھنے کو ملا ۔

    اس کا ایک نظارہ آج ناندیڑ میں دیکھنے کو ملا ۔

  •  ایس آئی او کی جانب سے منعقدہ احتجاجی مورچہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شریک ہوکر نجیب کے حق میں انصاف کا مطالبہ کیا ۔ نجیب کی گمشدگی کے مسئلہ پر ایس آئی او نے مرکزی حکومت سے جوڈیشیئل انکوائری کی مانگ کی ہے ۔

    ایس آئی او کی جانب سے منعقدہ احتجاجی مورچہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شریک ہوکر نجیب کے حق میں انصاف کا مطالبہ کیا ۔ نجیب کی گمشدگی کے مسئلہ پر ایس آئی او نے مرکزی حکومت سے جوڈیشیئل انکوائری کی مانگ کی ہے ۔

  • نجیب کو لاپتہ ہوئے چارماہ کا عرصہ ہوچکا ہے لیکن آج تک دہلی پولیس نجیب کا کوئی پتہ نہیں چلا سکی اور نہ نجیب پر حملہ کرنے والوں کے خلاف کوئی کارروائی ہوئی ۔

    نجیب کو لاپتہ ہوئے چارماہ کا عرصہ ہوچکا ہے لیکن آج تک دہلی پولیس نجیب کا کوئی پتہ نہیں چلا سکی اور نہ نجیب پر حملہ کرنے والوں کے خلاف کوئی کارروائی ہوئی ۔

  •  نجیب کے مسئلہ پر مرکزی حکومت نے بھی خاموشی اختیار کررکھی ہے جس کی وجہ سے ملک بھر کے مسلمانوں میں شدید غم و غصہ اور بے چینی پائی جارہی ہے ۔

    نجیب کے مسئلہ پر مرکزی حکومت نے بھی خاموشی اختیار کررکھی ہے جس کی وجہ سے ملک بھر کے مسلمانوں میں شدید غم و غصہ اور بے چینی پائی جارہی ہے ۔

  •  حکومت کے خلاف ناراضگی ظاہر کرنے کے لیے ایس آئی او نے فروری کے مہینہ کو مزاحمت کا مہینہ کے طورپر منانے کا فیصلہ کیا تھا۔

    حکومت کے خلاف ناراضگی ظاہر کرنے کے لیے ایس آئی او نے فروری کے مہینہ کو مزاحمت کا مہینہ کے طورپر منانے کا فیصلہ کیا تھا۔

  • مورچہ کے دوران نجیب کےعلاوہ روہت ویمولہ اوردیگرطلبہ جن کے ساتھ ظلم و بربریت کا مظاہرہ کیا جارہا ہے، ان تمام واقعات کی بھی مذمت کی گئی اور اس مسئلہ کے حل کے لیے مختلف طبقات کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوکر قومی و ملی اتحاد کا ثبوت دینے کو کہا گیا ہے۔

    مورچہ کے دوران نجیب کےعلاوہ روہت ویمولہ اوردیگرطلبہ جن کے ساتھ ظلم و بربریت کا مظاہرہ کیا جارہا ہے، ان تمام واقعات کی بھی مذمت کی گئی اور اس مسئلہ کے حل کے لیے مختلف طبقات کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوکر قومی و ملی اتحاد کا ثبوت دینے کو کہا گیا ہے۔

  • 10

    10

  • 11

    11

  • جے این یو طالب علم نجیب احمد کی گمشدگی کے خلاف دہلی سے شروع ہونے والی تحریک اب ملک کے کونے کونے میں پہنچ گئی ہے ۔
  • نجیب کی گمشدگی کے خلاف اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا نے ملک گیر سطح پر احتجاجی تحریک شروع کی ہے ۔
  • اس کا ایک نظارہ آج ناندیڑ میں دیکھنے کو ملا ۔
  •  ایس آئی او کی جانب سے منعقدہ احتجاجی مورچہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شریک ہوکر نجیب کے حق میں انصاف کا مطالبہ کیا ۔ نجیب کی گمشدگی کے مسئلہ پر ایس آئی او نے مرکزی حکومت سے جوڈیشیئل انکوائری کی مانگ کی ہے ۔
  • نجیب کو لاپتہ ہوئے چارماہ کا عرصہ ہوچکا ہے لیکن آج تک دہلی پولیس نجیب کا کوئی پتہ نہیں چلا سکی اور نہ نجیب پر حملہ کرنے والوں کے خلاف کوئی کارروائی ہوئی ۔
  •  نجیب کے مسئلہ پر مرکزی حکومت نے بھی خاموشی اختیار کررکھی ہے جس کی وجہ سے ملک بھر کے مسلمانوں میں شدید غم و غصہ اور بے چینی پائی جارہی ہے ۔
  •  حکومت کے خلاف ناراضگی ظاہر کرنے کے لیے ایس آئی او نے فروری کے مہینہ کو مزاحمت کا مہینہ کے طورپر منانے کا فیصلہ کیا تھا۔
  • مورچہ کے دوران نجیب کےعلاوہ روہت ویمولہ اوردیگرطلبہ جن کے ساتھ ظلم و بربریت کا مظاہرہ کیا جارہا ہے، ان تمام واقعات کی بھی مذمت کی گئی اور اس مسئلہ کے حل کے لیے مختلف طبقات کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوکر قومی و ملی اتحاد کا ثبوت دینے کو کہا گیا ہے۔
  • 10
  • 11

تازہ ترین تصاویر