یہاں رمضان کے مقدس ماہ میں لوگ قرآن کریم ، دعاؤں کی کتاب ، رحل ، ٹوپی ، جائے نماز اور تسبیح خوب کرتے ہیں ہدیہ

Jun 14, 2017 10:44 PM IST
1 of 9
  • ماہ رمضان محض بھوکھے پیاسے رہ کر سحر و افطار کا اہتمام کر لینا ہی نہیں ہے ، بلکہ ماہ صیام کی فضیلت اس ماہ میں جانے والی عبادتوں سے بھی ہے ۔ فرض نمازوں کے علاوہ مسلمان ماہ صیام میں خصوصی عبادتوں کا بھی اہتمام کرتے ہیں۔ اس دوران پنج وقتہ نمازیوں کی کثیر تعداد مساجد میں نظر آتی ہے ۔ قران پاک کی تلاوت کے لیے عبادت گزار گھروں اور مساجد میں بھی خاص انتظام کرتے ہیں ۔

    ماہ رمضان محض بھوکھے پیاسے رہ کر سحر و افطار کا اہتمام کر لینا ہی نہیں ہے ، بلکہ ماہ صیام کی فضیلت اس ماہ میں جانے والی عبادتوں سے بھی ہے ۔ فرض نمازوں کے علاوہ مسلمان ماہ صیام میں خصوصی عبادتوں کا بھی اہتمام کرتے ہیں۔ اس دوران پنج وقتہ نمازیوں کی کثیر تعداد مساجد میں نظر آتی ہے ۔ قران پاک کی تلاوت کے لیے عبادت گزار گھروں اور مساجد میں بھی خاص انتظام کرتے ہیں ۔

  •  ماہ صیام میں روزے کا اہتمام کرنے کے ساتھ روزے دار کا زیادہ تر وقت مخصوص عبادتوں میں گزرتا ہے ۔ تلاوت کلام پاک کے علاوہ دعا اور تسبیح کے لیے ضروری اشیا کی خریداری کی جاتی ہے ۔

    ماہ صیام میں روزے کا اہتمام کرنے کے ساتھ روزے دار کا زیادہ تر وقت مخصوص عبادتوں میں گزرتا ہے ۔ تلاوت کلام پاک کے علاوہ دعا اور تسبیح کے لیے ضروری اشیا کی خریداری کی جاتی ہے ۔

  •  رمضان کے اس پاک مہینے میں جہاں مسلمان خود عبادتوں کا اہتمام کرتے ہیں، وہیں بہت سے افراد کلام پاک کےعلاوہ دعا کی کتاب ، رحل ، ٹوپی ، جائے  نماز اور تسبیح جیسی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ہدیہ بھی خوب کرتے ہیں ۔

    رمضان کے اس پاک مہینے میں جہاں مسلمان خود عبادتوں کا اہتمام کرتے ہیں، وہیں بہت سے افراد کلام پاک کےعلاوہ دعا کی کتاب ، رحل ، ٹوپی ، جائے نماز اور تسبیح جیسی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ہدیہ بھی خوب کرتے ہیں ۔

  •  اس موقع پردکانداربھی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ضرورت کے مطابق خاص طور پر کلیکشن اپنے پاس رکھتے ہیں ۔

    اس موقع پردکانداربھی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ضرورت کے مطابق خاص طور پر کلیکشن اپنے پاس رکھتے ہیں ۔

  •  دکانداروں کے مطابق ماہ صیام میں کلام پاک کے بعد عقیدتمندوں کا سب سے زیادہ رجحان ماہ رمضان کے مخصوص اعمال کی کتابوں کی جانب ہوتا ہے ۔

    دکانداروں کے مطابق ماہ صیام میں کلام پاک کے بعد عقیدتمندوں کا سب سے زیادہ رجحان ماہ رمضان کے مخصوص اعمال کی کتابوں کی جانب ہوتا ہے ۔

  • ماہ رمضان کی خصوصی نماز اوردعا کی کتابیں بھی خریداروں کی توجہ کا خاص مرکز ہوتی ہیں ۔

    ماہ رمضان کی خصوصی نماز اوردعا کی کتابیں بھی خریداروں کی توجہ کا خاص مرکز ہوتی ہیں ۔

  • وہیں ان دنوں شہر کی مساجد میں دینی بیانات کا سلسلہ بھی جاری رہتا ہے ۔

    وہیں ان دنوں شہر کی مساجد میں دینی بیانات کا سلسلہ بھی جاری رہتا ہے ۔

  • ماہ رمضان کی فضیلت کے ساتھ علما ان دنوں میں زکوة  اور صدقہ فطر ادا کرنے کی ضرورت اور اہمیت بھی بیان کرتے ہیں۔

    ماہ رمضان کی فضیلت کے ساتھ علما ان دنوں میں زکوة اور صدقہ فطر ادا کرنے کی ضرورت اور اہمیت بھی بیان کرتے ہیں۔

  • ماہ رمضان کی اہمیت محض روزے کے اہتمام سے منسوب نہیں ہے ، بلکہ اس مہینے میں کی جانے والی عبادتوں کا اجر و ثواب بھی عام مہینوں کی عبادتوں سے زیادہ سمجھا جاتا ہے اور ان مخصوص عبادتوں کے لیے کیا جانے والا اہتمام اسی ضرورت کا ایک حصہ ہے ۔

    ماہ رمضان کی اہمیت محض روزے کے اہتمام سے منسوب نہیں ہے ، بلکہ اس مہینے میں کی جانے والی عبادتوں کا اجر و ثواب بھی عام مہینوں کی عبادتوں سے زیادہ سمجھا جاتا ہے اور ان مخصوص عبادتوں کے لیے کیا جانے والا اہتمام اسی ضرورت کا ایک حصہ ہے ۔

  •  ماہ صیام میں روزے کا اہتمام کرنے کے ساتھ روزے دار کا زیادہ تر وقت مخصوص عبادتوں میں گزرتا ہے ۔ تلاوت کلام پاک کے علاوہ دعا اور تسبیح کے لیے ضروری اشیا کی خریداری کی جاتی ہے ۔
  •  رمضان کے اس پاک مہینے میں جہاں مسلمان خود عبادتوں کا اہتمام کرتے ہیں، وہیں بہت سے افراد کلام پاک کےعلاوہ دعا کی کتاب ، رحل ، ٹوپی ، جائے  نماز اور تسبیح جیسی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ہدیہ بھی خوب کرتے ہیں ۔
  •  اس موقع پردکانداربھی عبادت میں استعمال ہونے والی اشیا کا ضرورت کے مطابق خاص طور پر کلیکشن اپنے پاس رکھتے ہیں ۔
  •  دکانداروں کے مطابق ماہ صیام میں کلام پاک کے بعد عقیدتمندوں کا سب سے زیادہ رجحان ماہ رمضان کے مخصوص اعمال کی کتابوں کی جانب ہوتا ہے ۔
  • ماہ رمضان کی خصوصی نماز اوردعا کی کتابیں بھی خریداروں کی توجہ کا خاص مرکز ہوتی ہیں ۔
  • وہیں ان دنوں شہر کی مساجد میں دینی بیانات کا سلسلہ بھی جاری رہتا ہے ۔
  • ماہ رمضان کی فضیلت کے ساتھ علما ان دنوں میں زکوة  اور صدقہ فطر ادا کرنے کی ضرورت اور اہمیت بھی بیان کرتے ہیں۔
  • ماہ رمضان کی اہمیت محض روزے کے اہتمام سے منسوب نہیں ہے ، بلکہ اس مہینے میں کی جانے والی عبادتوں کا اجر و ثواب بھی عام مہینوں کی عبادتوں سے زیادہ سمجھا جاتا ہے اور ان مخصوص عبادتوں کے لیے کیا جانے والا اہتمام اسی ضرورت کا ایک حصہ ہے ۔

تازہ ترین تصاویر