کشمیر میں دوسرے دن بھی برف باری، معمولات زندگی بدستور متاثر، امتحانات ایک بار پھر ملتوی

Jan 17, 2017 07:55 PM IST
1 of 9
  • وادی کشمیر میں منگل کو مسلسل دوسرے دن بھی برف باری کا سلسلہ جاری رہا جس کے سبب معمولات زندگی بری طرح سے متاثر رہے۔ محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا کہ ہلکی سی درمیانہ درجے کی برف باری کا سلسلہ اگلے چوبیس گھنٹوں تک جاری رہ سکتا ہے۔ قریب 18 گھنٹوں کے وقفے کے بعد وادی کے بیشتر میدانی علاقوں میں برف باری کا سلسلہ منگل کو دوپہر کے وقت دوبارہ شروع ہوا جبکہ بالائی علاقوں میں اس کا سلسلہ گذشتہ 48 گھنٹوں سے وقفے وقفے سے جاری ہے۔

    وادی کشمیر میں منگل کو مسلسل دوسرے دن بھی برف باری کا سلسلہ جاری رہا جس کے سبب معمولات زندگی بری طرح سے متاثر رہے۔ محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا کہ ہلکی سی درمیانہ درجے کی برف باری کا سلسلہ اگلے چوبیس گھنٹوں تک جاری رہ سکتا ہے۔ قریب 18 گھنٹوں کے وقفے کے بعد وادی کے بیشتر میدانی علاقوں میں برف باری کا سلسلہ منگل کو دوپہر کے وقت دوبارہ شروع ہوا جبکہ بالائی علاقوں میں اس کا سلسلہ گذشتہ 48 گھنٹوں سے وقفے وقفے سے جاری ہے۔

  • تازہ برف باری کے سبب وادی کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی سپلائی منقطع ہوگئی ہے جبکہ وادی کا بیرون دنیا سے فضائی و زمینی رابطہ دوسرے دن بھی متاثر رہا۔

    تازہ برف باری کے سبب وادی کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی سپلائی منقطع ہوگئی ہے جبکہ وادی کا بیرون دنیا سے فضائی و زمینی رابطہ دوسرے دن بھی متاثر رہا۔

  • وادی کے ساتھ ساتھ خطہ لداخ کے سرحدی قصبہ کرگل میں بھی تازہ برف باری کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ وادی کے مشہور سیاحتی مقامات گلمرگ اور پہل گام میں گذشتہ 48 گھنٹوں کے دوران درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ گلمرگ سے ایک ہوٹل مالک نے یو این آئی کو فون پر بتایا ’یہاں تازہ برف باری کا سلسلہ منگل کی صبح شروع ہوا‘۔

    وادی کے ساتھ ساتھ خطہ لداخ کے سرحدی قصبہ کرگل میں بھی تازہ برف باری کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ وادی کے مشہور سیاحتی مقامات گلمرگ اور پہل گام میں گذشتہ 48 گھنٹوں کے دوران درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ گلمرگ سے ایک ہوٹل مالک نے یو این آئی کو فون پر بتایا ’یہاں تازہ برف باری کا سلسلہ منگل کی صبح شروع ہوا‘۔

  • انہوں نے بتایا کہ گلمرگ کی برفیلی ڈھلانوں پر کئی فٹ برف جمع ہے۔ ہوٹل مالک نے مزید بتایا کہ برف باری سے لطف اندوز ہونے کے لئے سیاحوں کی ایک بڑی تعداد گلمرگ پہنچنا شروع ہو گئی ہے۔ گیٹ وے آف کشمیر کہلائے جانے والے قاضی گنڈ میں بھی درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ تازہ برف باری کے باعث سری نگر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر فضائی ٹریفک منگل کو مسلسل دوسرے دن بھی متاثر رہا۔

    انہوں نے بتایا کہ گلمرگ کی برفیلی ڈھلانوں پر کئی فٹ برف جمع ہے۔ ہوٹل مالک نے مزید بتایا کہ برف باری سے لطف اندوز ہونے کے لئے سیاحوں کی ایک بڑی تعداد گلمرگ پہنچنا شروع ہو گئی ہے۔ گیٹ وے آف کشمیر کہلائے جانے والے قاضی گنڈ میں بھی درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ تازہ برف باری کے باعث سری نگر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر فضائی ٹریفک منگل کو مسلسل دوسرے دن بھی متاثر رہا۔

  •  ائرپورٹ کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ائرپورٹ پر آج صرف ایک ہی پرواز آپریٹ کرسکی‘۔ انہوں نے بتایا کہ دوپہر کے وقت شروع ہونے والی تازہ برف باری کے باعث روشنی میں کمی آگئی جس کے بعد سبھی آنے اور جانے والی پروازیں منسوخ کی گئیں۔ وادی میں فضائی ٹریفک کے علاوہ سری نگر جموں قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت اور شمالی کشمیر کے بارہمولہ و جموں خطہ کے بانہال کے درمیان ریل سروس متاثر رہی۔

    ائرپورٹ کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ائرپورٹ پر آج صرف ایک ہی پرواز آپریٹ کرسکی‘۔ انہوں نے بتایا کہ دوپہر کے وقت شروع ہونے والی تازہ برف باری کے باعث روشنی میں کمی آگئی جس کے بعد سبھی آنے اور جانے والی پروازیں منسوخ کی گئیں۔ وادی میں فضائی ٹریفک کے علاوہ سری نگر جموں قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت اور شمالی کشمیر کے بارہمولہ و جموں خطہ کے بانہال کے درمیان ریل سروس متاثر رہی۔

  • دریں اثنا، کشمیر یونیورسٹی نے وادی میں گذشتہ 48 گھنٹوں سے جاری درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری کے پیش نظر بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کردیے ہیں۔ اس کے علاوہ یونیورسٹی نے 29 جنوری تک کلاسیں معطل رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

    دریں اثنا، کشمیر یونیورسٹی نے وادی میں گذشتہ 48 گھنٹوں سے جاری درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری کے پیش نظر بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کردیے ہیں۔ اس کے علاوہ یونیورسٹی نے 29 جنوری تک کلاسیں معطل رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

  • کشمیر یونیورسٹی کے ایک ترجمان نے بتایا کہ یونیورسٹی کو طلباء کی جانب سے برف باری کے پیش نظر امتحانات ملتوی کرنے سے متعلق نمائندگیاں موصول ہوئیں۔ انہوں نے بتایا ’ان نمائندگیوں کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے یونیورسٹی انتظامیہ نے بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کرنے کا فیصلہ لیا ہے‘۔

    کشمیر یونیورسٹی کے ایک ترجمان نے بتایا کہ یونیورسٹی کو طلباء کی جانب سے برف باری کے پیش نظر امتحانات ملتوی کرنے سے متعلق نمائندگیاں موصول ہوئیں۔ انہوں نے بتایا ’ان نمائندگیوں کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے یونیورسٹی انتظامیہ نے بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کرنے کا فیصلہ لیا ہے‘۔

  • ترجمان نے مزید بتایا کہ ملتوی شدہ پرچوں کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ اس سے قبل یونیورسٹی نے پیر اور منگل کو لئے جانے والے امتحانات ملتوی کردیے تھے۔

    ترجمان نے مزید بتایا کہ ملتوی شدہ پرچوں کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ اس سے قبل یونیورسٹی نے پیر اور منگل کو لئے جانے والے امتحانات ملتوی کردیے تھے۔

  • دریں اثنا جموں وکشمیر پبلک سروس کمیشن (پی ایس سی) نے کہا ہے کہ ایسے امیدوار جو برف باری کے باعث جموں میں لئے جانے والے انٹرویوز میں شریک نہیں ہو پائیں گے، ان کے لئے انٹرویو کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

    دریں اثنا جموں وکشمیر پبلک سروس کمیشن (پی ایس سی) نے کہا ہے کہ ایسے امیدوار جو برف باری کے باعث جموں میں لئے جانے والے انٹرویوز میں شریک نہیں ہو پائیں گے، ان کے لئے انٹرویو کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

  • تازہ برف باری کے سبب وادی کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی سپلائی منقطع ہوگئی ہے جبکہ وادی کا بیرون دنیا سے فضائی و زمینی رابطہ دوسرے دن بھی متاثر رہا۔
  • وادی کے ساتھ ساتھ خطہ لداخ کے سرحدی قصبہ کرگل میں بھی تازہ برف باری کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ وادی کے مشہور سیاحتی مقامات گلمرگ اور پہل گام میں گذشتہ 48 گھنٹوں کے دوران درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ گلمرگ سے ایک ہوٹل مالک نے یو این آئی کو فون پر بتایا ’یہاں تازہ برف باری کا سلسلہ منگل کی صبح شروع ہوا‘۔
  • انہوں نے بتایا کہ گلمرگ کی برفیلی ڈھلانوں پر کئی فٹ برف جمع ہے۔ ہوٹل مالک نے مزید بتایا کہ برف باری سے لطف اندوز ہونے کے لئے سیاحوں کی ایک بڑی تعداد گلمرگ پہنچنا شروع ہو گئی ہے۔ گیٹ وے آف کشمیر کہلائے جانے والے قاضی گنڈ میں بھی درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری ہوئی ہے۔ تازہ برف باری کے باعث سری نگر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر فضائی ٹریفک منگل کو مسلسل دوسرے دن بھی متاثر رہا۔
  •  ائرپورٹ کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ائرپورٹ پر آج صرف ایک ہی پرواز آپریٹ کرسکی‘۔ انہوں نے بتایا کہ دوپہر کے وقت شروع ہونے والی تازہ برف باری کے باعث روشنی میں کمی آگئی جس کے بعد سبھی آنے اور جانے والی پروازیں منسوخ کی گئیں۔ وادی میں فضائی ٹریفک کے علاوہ سری نگر جموں قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت اور شمالی کشمیر کے بارہمولہ و جموں خطہ کے بانہال کے درمیان ریل سروس متاثر رہی۔
  • دریں اثنا، کشمیر یونیورسٹی نے وادی میں گذشتہ 48 گھنٹوں سے جاری درمیانہ سے بھاری درجے کی برف باری کے پیش نظر بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کردیے ہیں۔ اس کے علاوہ یونیورسٹی نے 29 جنوری تک کلاسیں معطل رکھنے کا اعلان کیا ہے۔
  • کشمیر یونیورسٹی کے ایک ترجمان نے بتایا کہ یونیورسٹی کو طلباء کی جانب سے برف باری کے پیش نظر امتحانات ملتوی کرنے سے متعلق نمائندگیاں موصول ہوئیں۔ انہوں نے بتایا ’ان نمائندگیوں کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے یونیورسٹی انتظامیہ نے بدھ اور جمعرات کو لئے جانے والے تمام امتحانات ملتوی کرنے کا فیصلہ لیا ہے‘۔
  • ترجمان نے مزید بتایا کہ ملتوی شدہ پرچوں کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ اس سے قبل یونیورسٹی نے پیر اور منگل کو لئے جانے والے امتحانات ملتوی کردیے تھے۔
  • دریں اثنا جموں وکشمیر پبلک سروس کمیشن (پی ایس سی) نے کہا ہے کہ ایسے امیدوار جو برف باری کے باعث جموں میں لئے جانے والے انٹرویوز میں شریک نہیں ہو پائیں گے، ان کے لئے انٹرویو کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

تازہ ترین تصاویر