گجرات میں روزے دار رکشہ ڈرائیور کی پٹائی ، لوگوں کا پولیس کے خلاف پھوٹا غصہ ، سڑک جام اور پتھراو

Jun 15, 2017 10:38 PM IST
1 of 8
  • احمد آباد پولیس کے ذریعہ ایک روزے دار رکشہ ڈرائیور کی جم کر پٹائی کئے جانے کے خلاف لوگوں کا غصہ پھوٹ پڑا ہے ۔ معاملہ طول پکڑنے کے بعد پولیس کے ذریعہ اپنی غلطی تسلیم نہ کرنے پر لوگوں نے سڑک جام کردیا ، جس کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے لاٹھی چارج کیا تو عوام اور مشتعل ہوگئے اور معاملہ پتھراو تک پہنچ گیا ۔

    احمد آباد پولیس کے ذریعہ ایک روزے دار رکشہ ڈرائیور کی جم کر پٹائی کئے جانے کے خلاف لوگوں کا غصہ پھوٹ پڑا ہے ۔ معاملہ طول پکڑنے کے بعد پولیس کے ذریعہ اپنی غلطی تسلیم نہ کرنے پر لوگوں نے سڑک جام کردیا ، جس کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے لاٹھی چارج کیا تو عوام اور مشتعل ہوگئے اور معاملہ پتھراو تک پہنچ گیا ۔

  • احمد آباد کے سرخیزعلاقہ کا ماحول اس وقت خراب ہو گیا جب ایک پولیس اہلکار نے ایک رکشا ڈرائیور سے رکشہ ہٹانے کو لے کر مارپیٹ کی ۔

    احمد آباد کے سرخیزعلاقہ کا ماحول اس وقت خراب ہو گیا جب ایک پولیس اہلکار نے ایک رکشا ڈرائیور سے رکشہ ہٹانے کو لے کر مارپیٹ کی ۔

  •  دراصل رکشہ ڈرائیور روزے سے تھا، اس لئے پولیس کے ساتھ مارپیٹ کا واقعہ پورے علاقے میں آگ کی طرح پھیل گیا۔

    دراصل رکشہ ڈرائیور روزے سے تھا، اس لئے پولیس کے ساتھ مارپیٹ کا واقعہ پورے علاقے میں آگ کی طرح پھیل گیا۔

  • اس کے بعد تقریبا پانچ سو رکشہ ڈرائیوروں نے موقع پر پہنچ کر چکہ جام کر دیا۔

    اس کے بعد تقریبا پانچ سو رکشہ ڈرائیوروں نے موقع پر پہنچ کر چکہ جام کر دیا۔

  • مار پیٹ کرنے والے پولیس سے معافی مانگنے کے اپنے فیصلہ پر قائم رہے اور راستے پراتر گئے ۔

    مار پیٹ کرنے والے پولیس سے معافی مانگنے کے اپنے فیصلہ پر قائم رہے اور راستے پراتر گئے ۔

  •  اس دوران علاقے کے لوگوں کوکئی گھنٹے ٹریفک جام کے مسئلہ کا سامنا کرنا پڑا ۔

    اس دوران علاقے کے لوگوں کوکئی گھنٹے ٹریفک جام کے مسئلہ کا سامنا کرنا پڑا ۔

  • موقع پر پہنچی پولیس نے ٹریفک كنٹرول کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا ، جس کے بعد علاقے کے لوگ اور پولیس کے درمیان جم کر پتھر او ہوگیا  ۔

    موقع پر پہنچی پولیس نے ٹریفک كنٹرول کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا ، جس کے بعد علاقے کے لوگ اور پولیس کے درمیان جم کر پتھر او ہوگیا ۔

  • سرخیز پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر آئی پٹیل نے کہا جن لوگوں نے حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی ہے ، ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی ۔

    سرخیز پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر آئی پٹیل نے کہا جن لوگوں نے حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی ہے ، ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی ۔

  • احمد آباد کے سرخیزعلاقہ کا ماحول اس وقت خراب ہو گیا جب ایک پولیس اہلکار نے ایک رکشا ڈرائیور سے رکشہ ہٹانے کو لے کر مارپیٹ کی ۔
  •  دراصل رکشہ ڈرائیور روزے سے تھا، اس لئے پولیس کے ساتھ مارپیٹ کا واقعہ پورے علاقے میں آگ کی طرح پھیل گیا۔
  • اس کے بعد تقریبا پانچ سو رکشہ ڈرائیوروں نے موقع پر پہنچ کر چکہ جام کر دیا۔
  • مار پیٹ کرنے والے پولیس سے معافی مانگنے کے اپنے فیصلہ پر قائم رہے اور راستے پراتر گئے ۔
  •  اس دوران علاقے کے لوگوں کوکئی گھنٹے ٹریفک جام کے مسئلہ کا سامنا کرنا پڑا ۔
  • موقع پر پہنچی پولیس نے ٹریفک كنٹرول کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا ، جس کے بعد علاقے کے لوگ اور پولیس کے درمیان جم کر پتھر او ہوگیا  ۔
  • سرخیز پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر آئی پٹیل نے کہا جن لوگوں نے حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی ہے ، ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی ۔

تازہ ترین تصاویر