Live Results Assembly Elections 2018

اترپردیش کے بلند شہر میں تبلیغی اجتماع، دیکھیں تصویریں

Dec 03, 2018 04:54 PM IST
1 of 8
  • ملک کا شاید ہی کوئی صوبہ باقی بچا ہو جہاں سے کوئی مسلمان یوپی کے بلند شہر نہ آیا ہو۔ کیا بچے، بزرگ اور خواتین سبھی تین دن کے لئے بلند شہر کے دریاپورگاؤں کی طرف جاتے نظر آ رہے ہیں۔ وجہ ہے تبلیغی جماعت کا اجتماع۔ مقامی لوگوں کی مانیں تو ابھی تک دس لاکھ سے زائد مسلمان اجتماع میں پہنچ چکے ہیں۔ پیر کے روز اجتماع کے آخری دن دعا میں شامل ہونے کے لئے یہ تعداد مزید بڑھ سکتی ہے۔ اجتماع سے مولانا سعد سمیت ملک بھر سے آئے تمام علما خطاب کر رہے ہیں۔

    ملک کا شاید ہی کوئی صوبہ باقی بچا ہو جہاں سے کوئی مسلمان یوپی کے بلند شہر نہ آیا ہو۔ کیا بچے، بزرگ اور خواتین سبھی تین دن کے لئے بلند شہر کے دریاپورگاؤں کی طرف جاتے نظر آ رہے ہیں۔ وجہ ہے تبلیغی جماعت کا اجتماع۔ مقامی لوگوں کی مانیں تو ابھی تک دس لاکھ سے زائد مسلمان اجتماع میں پہنچ چکے ہیں۔ پیر کے روز اجتماع کے آخری دن دعا میں شامل ہونے کے لئے یہ تعداد مزید بڑھ سکتی ہے۔ اجتماع سے مولانا سعد سمیت ملک بھر سے آئے تمام علما خطاب کر رہے ہیں۔

  • جمعہ سے ہی بلند شہر کی سڑکوں پر دھول نظر آ رہا ہے۔ یکم دسمبر سے شروع ہوئے اجتماع میں شامل ہونے کے لئے ملک کے دور دراز کے علاقوں سے لوگوں کی آمد ورفت جاری ہے۔ شہر کی کوئی ایسی سڑک نہیں جہاں اجتماع میں جانے والوں کی بھیڑ دکھائی نہ دے رہی ہو۔

    جمعہ سے ہی بلند شہر کی سڑکوں پر دھول نظر آ رہا ہے۔ یکم دسمبر سے شروع ہوئے اجتماع میں شامل ہونے کے لئے ملک کے دور دراز کے علاقوں سے لوگوں کی آمد ورفت جاری ہے۔ شہر کی کوئی ایسی سڑک نہیں جہاں اجتماع میں جانے والوں کی بھیڑ دکھائی نہ دے رہی ہو۔

  • بھیڑ کا عالم یہ تھا کہ لوگ اپنی گاڑیوں کو کئی کلومیٹر پیچھے چھوڑ کر دریاپور کی طرف پیدل ہی چلے جا رہے تھے۔ سینکڑوں ایسی گاڑیاں بھی تھیں جو کئی کئی گھنٹوں سے اپنی جگہ سے ٹس سے مس نہیں ہوئی تھیں۔

    بھیڑ کا عالم یہ تھا کہ لوگ اپنی گاڑیوں کو کئی کلومیٹر پیچھے چھوڑ کر دریاپور کی طرف پیدل ہی چلے جا رہے تھے۔ سینکڑوں ایسی گاڑیاں بھی تھیں جو کئی کئی گھنٹوں سے اپنی جگہ سے ٹس سے مس نہیں ہوئی تھیں۔

  • ایسا نہیں ہے کہ اجتماع میں شامل ہونے کے لئے صرف دور دراز کے علاقوں سے ہی لوگ آ رہے ہوں بلکہ بلند شہر کے قریبی اضلاع سے بھی بڑی تعداد میں لوگ آ رہے تھے۔ ماہرین کے مطابق یہ سسلسلہ تین دن تک جاری رہے گا۔

    ایسا نہیں ہے کہ اجتماع میں شامل ہونے کے لئے صرف دور دراز کے علاقوں سے ہی لوگ آ رہے ہوں بلکہ بلند شہر کے قریبی اضلاع سے بھی بڑی تعداد میں لوگ آ رہے تھے۔ ماہرین کے مطابق یہ سسلسلہ تین دن تک جاری رہے گا۔

  • ماہرین کے مطابق، بلند شہر کے گاؤں درياپور میں اجتماع کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ 8 لاکھ اسکوائر فٹ زمین پر جاری اجتماع میں 10 لاکھ سے زیادہ لوگوں کے لئے پنڈال بنائے گئے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ پنڈال میں ہی لاکھوں لوگوں کے لئے کھانا بھی بنایا جا رہا ہے۔ ریلوے نے 12 ٹرینوں کے لئے مستقل اسٹاپیج بھی بنائے ہیں۔

    ماہرین کے مطابق، بلند شہر کے گاؤں درياپور میں اجتماع کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ 8 لاکھ اسکوائر فٹ زمین پر جاری اجتماع میں 10 لاکھ سے زیادہ لوگوں کے لئے پنڈال بنائے گئے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ پنڈال میں ہی لاکھوں لوگوں کے لئے کھانا بھی بنایا جا رہا ہے۔ ریلوے نے 12 ٹرینوں کے لئے مستقل اسٹاپیج بھی بنائے ہیں۔

  • اسی طرح سے لاکھوں لوگ پنڈال میں خاموشی سے بیٹھے ہوئے ہیں۔ علماء تقریر کر رہے ہیں۔ وہ لوگوں کو مذہب کے بتائے راستے پر چلنے، دوسروں کی مدد کرنے، پیار محبت سے رہنے، اپنے وطن سے محبت کرنے اور اس کی حفاظت کرنے کے بارے میں بتا رہے ہیں۔

    اسی طرح سے لاکھوں لوگ پنڈال میں خاموشی سے بیٹھے ہوئے ہیں۔ علماء تقریر کر رہے ہیں۔ وہ لوگوں کو مذہب کے بتائے راستے پر چلنے، دوسروں کی مدد کرنے، پیار محبت سے رہنے، اپنے وطن سے محبت کرنے اور اس کی حفاظت کرنے کے بارے میں بتا رہے ہیں۔

  • تبلیغی جماعت کے اس اجتماع میں حب الوطنی کا رنگ بھی نظر آ رہا ہے۔ اجتماع میں شامل ہونے آئے لوگ ہاتھوں میں ترنگا لئے ہوئے اجتماع گاہ کی طرف جاتے نظر آئے۔ فجر کی نماز پڑھنے کے ساتھ ہی اجتماع  شروع ہو جاتا ہے۔ الگ الگ سیشن میں علما کی تقریریں ہوتی ہیں۔ تقریر کا سلسلہ ظہر کی نماز تک جاری رہتا ہے۔ اس کے بعد کھانا شروع ہو جاتا ہے اور پھر تین بجے کے بعد اجتماع دوبارہ شروع ہوتا ہے۔

    تبلیغی جماعت کے اس اجتماع میں حب الوطنی کا رنگ بھی نظر آ رہا ہے۔ اجتماع میں شامل ہونے آئے لوگ ہاتھوں میں ترنگا لئے ہوئے اجتماع گاہ کی طرف جاتے نظر آئے۔ فجر کی نماز پڑھنے کے ساتھ ہی اجتماع شروع ہو جاتا ہے۔ الگ الگ سیشن میں علما کی تقریریں ہوتی ہیں۔ تقریر کا سلسلہ ظہر کی نماز تک جاری رہتا ہے۔ اس کے بعد کھانا شروع ہو جاتا ہے اور پھر تین بجے کے بعد اجتماع دوبارہ شروع ہوتا ہے۔

  • اجتماع میں کسی بھی طرح کی کوئی گڑبڑی نہ پھیلے اس کے لئے انتظامیہ کی طرف سے 17 محکموں کے ملازمین اور افسران کو لگایا گیا ہے۔ سیکورٹی کے لئے 3 ایڈیشنل ایس پی، 14 سی او، 242 انسپکٹر اور سب انسپکٹر، 590 کانسٹیبل، 220 ہیڈ کانسٹیبل اور تین کمپنی پی اے سی لگائی گئی ہے۔

    اجتماع میں کسی بھی طرح کی کوئی گڑبڑی نہ پھیلے اس کے لئے انتظامیہ کی طرف سے 17 محکموں کے ملازمین اور افسران کو لگایا گیا ہے۔ سیکورٹی کے لئے 3 ایڈیشنل ایس پی، 14 سی او، 242 انسپکٹر اور سب انسپکٹر، 590 کانسٹیبل، 220 ہیڈ کانسٹیبل اور تین کمپنی پی اے سی لگائی گئی ہے۔

  • جمعہ سے ہی بلند شہر کی سڑکوں پر دھول نظر آ رہا ہے۔ یکم دسمبر سے شروع ہوئے اجتماع میں شامل ہونے کے لئے ملک کے دور دراز کے علاقوں سے لوگوں کی آمد ورفت جاری ہے۔ شہر کی کوئی ایسی سڑک نہیں جہاں اجتماع میں جانے والوں کی بھیڑ دکھائی نہ دے رہی ہو۔
  • بھیڑ کا عالم یہ تھا کہ لوگ اپنی گاڑیوں کو کئی کلومیٹر پیچھے چھوڑ کر دریاپور کی طرف پیدل ہی چلے جا رہے تھے۔ سینکڑوں ایسی گاڑیاں بھی تھیں جو کئی کئی گھنٹوں سے اپنی جگہ سے ٹس سے مس نہیں ہوئی تھیں۔
  • ایسا نہیں ہے کہ اجتماع میں شامل ہونے کے لئے صرف دور دراز کے علاقوں سے ہی لوگ آ رہے ہوں بلکہ بلند شہر کے قریبی اضلاع سے بھی بڑی تعداد میں لوگ آ رہے تھے۔ ماہرین کے مطابق یہ سسلسلہ تین دن تک جاری رہے گا۔
  • ماہرین کے مطابق، بلند شہر کے گاؤں درياپور میں اجتماع کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ 8 لاکھ اسکوائر فٹ زمین پر جاری اجتماع میں 10 لاکھ سے زیادہ لوگوں کے لئے پنڈال بنائے گئے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ پنڈال میں ہی لاکھوں لوگوں کے لئے کھانا بھی بنایا جا رہا ہے۔ ریلوے نے 12 ٹرینوں کے لئے مستقل اسٹاپیج بھی بنائے ہیں۔
  • اسی طرح سے لاکھوں لوگ پنڈال میں خاموشی سے بیٹھے ہوئے ہیں۔ علماء تقریر کر رہے ہیں۔ وہ لوگوں کو مذہب کے بتائے راستے پر چلنے، دوسروں کی مدد کرنے، پیار محبت سے رہنے، اپنے وطن سے محبت کرنے اور اس کی حفاظت کرنے کے بارے میں بتا رہے ہیں۔
  • تبلیغی جماعت کے اس اجتماع میں حب الوطنی کا رنگ بھی نظر آ رہا ہے۔ اجتماع میں شامل ہونے آئے لوگ ہاتھوں میں ترنگا لئے ہوئے اجتماع گاہ کی طرف جاتے نظر آئے۔ فجر کی نماز پڑھنے کے ساتھ ہی اجتماع  شروع ہو جاتا ہے۔ الگ الگ سیشن میں علما کی تقریریں ہوتی ہیں۔ تقریر کا سلسلہ ظہر کی نماز تک جاری رہتا ہے۔ اس کے بعد کھانا شروع ہو جاتا ہے اور پھر تین بجے کے بعد اجتماع دوبارہ شروع ہوتا ہے۔
  • اجتماع میں کسی بھی طرح کی کوئی گڑبڑی نہ پھیلے اس کے لئے انتظامیہ کی طرف سے 17 محکموں کے ملازمین اور افسران کو لگایا گیا ہے۔ سیکورٹی کے لئے 3 ایڈیشنل ایس پی، 14 سی او، 242 انسپکٹر اور سب انسپکٹر، 590 کانسٹیبل، 220 ہیڈ کانسٹیبل اور تین کمپنی پی اے سی لگائی گئی ہے۔

تازہ ترین تصاویر