کشمیرمیں صورتحال پھر کشیدہ، سیکورٹی فورسز کی فائرنگ میں ایک عام نوجوان ہلاک، درجنوں زخمی

May 27, 2017 06:42 PM IST
1 of 11
  • وادی کشمیر میں ہفتہ کو حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے اعلیٰ کمانڈر سبزار احمد بٹ کی جنوبی ضلع پلوامہ کے سیموہ ترال میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ مسلح تصادم میں ہلاکت کے بعددرجنوں مقامات پر بھڑک اٹھنے والے پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے دوران ایک عام نوجوان ہلاک جبکہ درجنوں دیگر زخمی ہوگئے۔ احتجاجیوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں متعدد سیکورٹی فورس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔

    وادی کشمیر میں ہفتہ کو حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے اعلیٰ کمانڈر سبزار احمد بٹ کی جنوبی ضلع پلوامہ کے سیموہ ترال میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ مسلح تصادم میں ہلاکت کے بعددرجنوں مقامات پر بھڑک اٹھنے والے پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے دوران ایک عام نوجوان ہلاک جبکہ درجنوں دیگر زخمی ہوگئے۔ احتجاجیوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں متعدد سیکورٹی فورس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔

  • سبزار احمد کی ہلاکت کے خلاف مزید احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر انتظامیہ نے وادی کے کئی علاقوں میں اتوار کو کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ متعدد علاقوں میں صورتحال کشیدہ رخ اختیار کرگئی ہے۔

    سبزار احمد کی ہلاکت کے خلاف مزید احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر انتظامیہ نے وادی کے کئی علاقوں میں اتوار کو کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ متعدد علاقوں میں صورتحال کشیدہ رخ اختیار کرگئی ہے۔

  •  وادی میں ہفتہ کی صبح سبزار احمد کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی درجنوں علاقوں میں پرتشدد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوگیا اور وادی کے بیشتر علاقوں میں دکانیں اور تجارتی مراکز بند ہوگئے اور پبلک و نجی ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب ہوگئی۔ مختلف کاموں کے سلسلے میں اپنے گھروں سے باہرنکلنے والے لوگ عجلت میں واپس اپنے گھروں کو لوٹ گئے جبکہ تعلیمی اداروں میں تعطیل کا اعلان کرتے ہوئے طالب علموں کو دوپہر بارہ بجے سے قبل ہی تعلیمی اداروں سے رخصت کر دیا گیا۔

    وادی میں ہفتہ کی صبح سبزار احمد کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی درجنوں علاقوں میں پرتشدد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوگیا اور وادی کے بیشتر علاقوں میں دکانیں اور تجارتی مراکز بند ہوگئے اور پبلک و نجی ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب ہوگئی۔ مختلف کاموں کے سلسلے میں اپنے گھروں سے باہرنکلنے والے لوگ عجلت میں واپس اپنے گھروں کو لوٹ گئے جبکہ تعلیمی اداروں میں تعطیل کا اعلان کرتے ہوئے طالب علموں کو دوپہر بارہ بجے سے قبل ہی تعلیمی اداروں سے رخصت کر دیا گیا۔

  • پلوامہ میں تصادم آرائی کے مقام ’سیموہ ترال‘ میں ایک نوجوان اس وقت جاں بحق ہوگیا جب سیکورٹی فورسز نے آزادی حامی احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے اور مبینہ طور پر چھرے والی بندوقوں کا شدید استعمال کیا۔

    پلوامہ میں تصادم آرائی کے مقام ’سیموہ ترال‘ میں ایک نوجوان اس وقت جاں بحق ہوگیا جب سیکورٹی فورسز نے آزادی حامی احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے اور مبینہ طور پر چھرے والی بندوقوں کا شدید استعمال کیا۔

  •  مسلح تصادم آرائی کے مقام پر احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں کم از کم ایک درجن احتجاجیوں کے شدید طور پر زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

    مسلح تصادم آرائی کے مقام پر احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں کم از کم ایک درجن احتجاجیوں کے شدید طور پر زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

  • مہلوک نوجوان کی شناخت مولوی عاقب احمد ساکنہ خانقاہ ترال کے بطور کی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ عاقب پیشانی پر گولی لگنے سے جاں بحق ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اگرچہ عاقب کو سب ضلع اسپتال ترال پہنچایا گیا، تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گیا۔

    مہلوک نوجوان کی شناخت مولوی عاقب احمد ساکنہ خانقاہ ترال کے بطور کی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ عاقب پیشانی پر گولی لگنے سے جاں بحق ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اگرچہ عاقب کو سب ضلع اسپتال ترال پہنچایا گیا، تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گیا۔

  • تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ عاقب مسلح تصادم کے مقام پر جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین کراس فائرنگ کے دوران گولی لگنے سے جاں بحق ہوا ہے۔

    تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ عاقب مسلح تصادم کے مقام پر جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین کراس فائرنگ کے دوران گولی لگنے سے جاں بحق ہوا ہے۔

  • سبزار احمد سمیت دو جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف وادی کے درجنوں علاقوں میں احتجاجی مظاہروں کے دوران زخمی ہونے والے احتجاجیوں کی تعداد 70 سے زیادہ بتائی جارہی ہے۔ کم از کم ایک درجن افراد 2016 ء کی ایجی ٹیشن کے دوران انتہائی مہلک ثابت ہونے والی چھرے والی بندوقوں کے سبب زخمی ہوگئے ہیں۔

    سبزار احمد سمیت دو جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف وادی کے درجنوں علاقوں میں احتجاجی مظاہروں کے دوران زخمی ہونے والے احتجاجیوں کی تعداد 70 سے زیادہ بتائی جارہی ہے۔ کم از کم ایک درجن افراد 2016 ء کی ایجی ٹیشن کے دوران انتہائی مہلک ثابت ہونے والی چھرے والی بندوقوں کے سبب زخمی ہوگئے ہیں۔

  • جھڑپوں کے دوران متعدد سیکورٹی فورس اہلکار پتھر لگنے سے زخمی ہوئے ہیں۔ جنوبی ضلع اننت ناگ میں چیف ایجوکیشن افسر پتھر لگنے سے زخمی ہوا ہے۔

    جھڑپوں کے دوران متعدد سیکورٹی فورس اہلکار پتھر لگنے سے زخمی ہوئے ہیں۔ جنوبی ضلع اننت ناگ میں چیف ایجوکیشن افسر پتھر لگنے سے زخمی ہوا ہے۔

  • موصولہ اطلاعات کے مطابق حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے مہلوک کمانڈر برہان مظفر وانی کے دست راست و جانشین سبزار احمد بٹ کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی وادی کے درجنوں مقامات بالخصوص گرمائی دارالحکومت سری نگر میں لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے لگے۔ ادھر سیول لائنز کے مائسمہ میں درجنوں نوجوان آزادی کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے۔

    موصولہ اطلاعات کے مطابق حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے مہلوک کمانڈر برہان مظفر وانی کے دست راست و جانشین سبزار احمد بٹ کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی وادی کے درجنوں مقامات بالخصوص گرمائی دارالحکومت سری نگر میں لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے لگے۔ ادھر سیول لائنز کے مائسمہ میں درجنوں نوجوان آزادی کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے۔

  • تاہم جب احتجاجیوں نے تاریخی لال چوک کی جانب پیش قدمی کرنے کی کوشش کی تو وہاں پہلے سے تعینات سیکورٹی فورسز نے انہیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کا استعمال کیا۔ نوٹ: یہ سبھی تصویریں یو این آئی کی ہیں۔

    تاہم جب احتجاجیوں نے تاریخی لال چوک کی جانب پیش قدمی کرنے کی کوشش کی تو وہاں پہلے سے تعینات سیکورٹی فورسز نے انہیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کا استعمال کیا۔ نوٹ: یہ سبھی تصویریں یو این آئی کی ہیں۔

  • سبزار احمد کی ہلاکت کے خلاف مزید احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر انتظامیہ نے وادی کے کئی علاقوں میں اتوار کو کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ متعدد علاقوں میں صورتحال کشیدہ رخ اختیار کرگئی ہے۔
  •  وادی میں ہفتہ کی صبح سبزار احمد کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی درجنوں علاقوں میں پرتشدد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوگیا اور وادی کے بیشتر علاقوں میں دکانیں اور تجارتی مراکز بند ہوگئے اور پبلک و نجی ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب ہوگئی۔ مختلف کاموں کے سلسلے میں اپنے گھروں سے باہرنکلنے والے لوگ عجلت میں واپس اپنے گھروں کو لوٹ گئے جبکہ تعلیمی اداروں میں تعطیل کا اعلان کرتے ہوئے طالب علموں کو دوپہر بارہ بجے سے قبل ہی تعلیمی اداروں سے رخصت کر دیا گیا۔
  • پلوامہ میں تصادم آرائی کے مقام ’سیموہ ترال‘ میں ایک نوجوان اس وقت جاں بحق ہوگیا جب سیکورٹی فورسز نے آزادی حامی احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے اور مبینہ طور پر چھرے والی بندوقوں کا شدید استعمال کیا۔
  •  مسلح تصادم آرائی کے مقام پر احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں کم از کم ایک درجن احتجاجیوں کے شدید طور پر زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔
  • مہلوک نوجوان کی شناخت مولوی عاقب احمد ساکنہ خانقاہ ترال کے بطور کی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ عاقب پیشانی پر گولی لگنے سے جاں بحق ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اگرچہ عاقب کو سب ضلع اسپتال ترال پہنچایا گیا، تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گیا۔
  • تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ عاقب مسلح تصادم کے مقام پر جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین کراس فائرنگ کے دوران گولی لگنے سے جاں بحق ہوا ہے۔
  • سبزار احمد سمیت دو جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف وادی کے درجنوں علاقوں میں احتجاجی مظاہروں کے دوران زخمی ہونے والے احتجاجیوں کی تعداد 70 سے زیادہ بتائی جارہی ہے۔ کم از کم ایک درجن افراد 2016 ء کی ایجی ٹیشن کے دوران انتہائی مہلک ثابت ہونے والی چھرے والی بندوقوں کے سبب زخمی ہوگئے ہیں۔
  • جھڑپوں کے دوران متعدد سیکورٹی فورس اہلکار پتھر لگنے سے زخمی ہوئے ہیں۔ جنوبی ضلع اننت ناگ میں چیف ایجوکیشن افسر پتھر لگنے سے زخمی ہوا ہے۔
  • موصولہ اطلاعات کے مطابق حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے مہلوک کمانڈر برہان مظفر وانی کے دست راست و جانشین سبزار احمد بٹ کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی وادی کے درجنوں مقامات بالخصوص گرمائی دارالحکومت سری نگر میں لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے لگے۔ ادھر سیول لائنز کے مائسمہ میں درجنوں نوجوان آزادی کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے۔
  • تاہم جب احتجاجیوں نے تاریخی لال چوک کی جانب پیش قدمی کرنے کی کوشش کی تو وہاں پہلے سے تعینات سیکورٹی فورسز نے انہیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کا استعمال کیا۔ نوٹ: یہ سبھی تصویریں یو این آئی کی ہیں۔

تازہ ترین تصاویر