زیکا وائرس کی تاریخ: جانیں اس کے بارے میں بہت کچھ

Nov 08, 2018 02:10 PM IST
1 of 5
  • پہلی بار زیکا وائرس کا پتہ 1947 میں چلا۔ یہ تحقیق افریقہ  کے جنگل میں ریسس مکاک (ایک قسم کے لنگور) کو پنجرے میں رکھ کر کی جا رہی تھی۔ اس سے سائنسدانوں کو  زیکا وائرس کا پتہ چلا

    پہلی بار زیکا وائرس کا پتہ 1947 میں چلا۔ یہ تحقیق افریقہ  کے جنگل میں ریسس مکاک (ایک قسم کے لنگور) کو پنجرے میں رکھ کر کی جا رہی تھی۔ اس سے سائنسدانوں کو  زیکا وائرس کا پتہ چلا

  • سال 1952 میں اس پراسرار بیماری کو  زیکا وائرس کا نام دیا گیا۔ سال 2007 میں اس کا اثر پھر دیکھنے کو ملا۔ یہ وائرس افریقہ میں پھیلنا شروع ہو گیا۔

    سال 1952 میں اس پراسرار بیماری کو  زیکا وائرس کا نام دیا گیا۔ سال 2007 میں اس کا اثر پھر دیکھنے کو ملا۔ یہ وائرس افریقہ میں پھیلنا شروع ہو گیا۔

  • پہلے اس کی علامتوں کو دیکھ کرڈینگو یا چکن گنیا ہی سمجھا گیا۔ بعد میں جب بیمار لوگوں کے خون کی جانچ ہوئی تو  زیکا وائرس کا آر این اے پایا گیا۔

    پہلے اس کی علامتوں کو دیکھ کرڈینگو یا چکن گنیا ہی سمجھا گیا۔ بعد میں جب بیمار لوگوں کے خون کی جانچ ہوئی تو  زیکا وائرس کا آر این اے پایا گیا۔

  • اب تک اس کا کوئی کارگر ٹیکہ نہیں ہے لیکن پیراسیٹامول اس میں مددگار ثابت ہو سکتی ہےبرازیل سمیت کئی جنوبی امریکی ممالک میں زیکا وائرس پھیل چکا ہے۔

    اب تک اس کا کوئی کارگر ٹیکہ نہیں ہے لیکن پیراسیٹامول اس میں مددگار ثابت ہو سکتی ہےبرازیل سمیت کئی جنوبی امریکی ممالک میں زیکا وائرس پھیل چکا ہے۔

  • یہ افریقہ سے ایشیا تک پھیلا ہوا ہ۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ 80 سے زیادہ ممالک زیکا وائرس کی زد میں آچکے ہیں۔

    یہ افریقہ سے ایشیا تک پھیلا ہوا ہ۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ 80 سے زیادہ ممالک زیکا وائرس کی زد میں آچکے ہیں۔

  • سال 1952 میں اس پراسرار بیماری کو  زیکا وائرس کا نام دیا گیا۔ سال 2007 میں اس کا اثر پھر دیکھنے کو ملا۔ یہ وائرس افریقہ میں پھیلنا شروع ہو گیا۔
  • پہلے اس کی علامتوں کو دیکھ کرڈینگو یا چکن گنیا ہی سمجھا گیا۔ بعد میں جب بیمار لوگوں کے خون کی جانچ ہوئی تو  زیکا وائرس کا آر این اے پایا گیا۔
  • اب تک اس کا کوئی کارگر ٹیکہ نہیں ہے لیکن پیراسیٹامول اس میں مددگار ثابت ہو سکتی ہےبرازیل سمیت کئی جنوبی امریکی ممالک میں زیکا وائرس پھیل چکا ہے۔
  • یہ افریقہ سے ایشیا تک پھیلا ہوا ہ۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ 80 سے زیادہ ممالک زیکا وائرس کی زد میں آچکے ہیں۔

تازہ ترین تصاویر